وفاقی کابینہ نے سعودی عرب سے 3ارب ڈالر قرض کی منظوری دے دی

اسلام آباد : وفاقی کابینہ نے سعودی عرب سے3ارب ڈالر قرض کی منظوری دے دی، قرض ملنے کے بعد زرمبادلہ ذخائر 17ارب ڈالر سے بڑھ کر 20ارب ڈالر ہو جائیں گے۔

تفصیلات کے مطابق وفاقی کابینہ نے سعودی عرب سعودی عرب سے3ارب ڈالر قرض ذخائراسٹیٹ بینک رکھنے اور ادھار پر تیل خریداری کے معاہدے کی منظوری دے دی۔

حکومتی ذرائع کا کہنا ہے کہ سعودی عرب سے3ارب ڈالرز حصول کے لیے قانونی معاملات کوطے کیا گیا، قانونی معاملات طےہونےکےبعدوفاقی کابینہ نے منظوری دی۔

ذرائع نے بتایا کہ وفاقی کابینہ کو اکنامک ڈویژن کی جانب سے سرکولیشن سمری بھجوائی گئی ، سمری کی منظوری کے بعد رواں ہفتے اسٹیٹ بینک کو 3 ارب ڈالرز مل جائیں گے۔

سعودی ریلیف پیکج سےزرمبادلہ کے ذخائر 17 ارب سے بڑھ کر 20ارب ڈالر ہو جائیں گے ، سعودی عرب ریفائنڈ پیٹرولیم مصنوعات کی مدمیں 1.2 ارب ڈالرکی فنانسنگ بھی فراہم کرے گا۔

یاد رہے معاہدہ گزشتہ ماہ وزیراعظم عمران خان کےدورہ سعودی عرب کے دوران ہوا ، جس میں سعودی ولی عہد نے پاکستان کےلیے3 ارب ڈالرز کے سپورٹ فنڈ کی منظوری دی تھی ، رقم سعودی فنڈ برائے ترقی اسٹیٹ بینک آف پاکستان میں جمع کرائے گا

بعد ازاں وزیراعظم عمران خان نے پاکستان کی مدد کرنے پر سعودی ولی عہد محمد بن سلمان کا شکریہ ادا کیا، ان کا کہنا تھا کہ سعودی عرب نے ہمیشہ مشکل وقت میں پاکستان کی مدد کی۔