کرونا وائرس کے علاج کیلئے گولی تیار کرلی گئی

امریکا کی ملٹی نیشنل دوا ساز کمپنی میرک نے کرونا وائرس کے علاج کے ليے ايک گولی تیار کر لی ہے جس کی آزمائش کے نتائج بہترین بتائے گئے ہیں۔

طبی ماہرین نے تیار کی جانے والی نئی دوا کو حیران کن اور اہم پیش رفت قرار دیا ہے۔ یہ گولی امریکی دوا ساز کمپنی میرک کی لیبارٹری میں تیار کی گئی ہے۔

ماہرین کا یہ کہنا ہے کہ اس دوا کو حقیقت میں اس بیماری کا علاج قرار دیا جا سکتا ہے۔ یہ دوا گولیوں کی صورت میں دستیاب ہو گی اور اس کا استعمال جان بچا سکتا ہے۔

میرک کمپنی کی اس دوائی کا نام ’’مولن اپیراویر‘‘ رکھا گيا ہے۔ یہ ایک انتہائی اہم پیشرفت ہے کیونکہ کرونا وائرس کو کنٹرول کرنے کی یہ پہلی دوا ہے، جو منہ کے ذریعے مریض نگل سکے گا۔

دوائی کی تیاری میں میرک فارماسوٹیکل کو ایک اور بائیلوجیکل کمپنی رجبیک بائیو تھریپیوٹکس کا تعاون بھی حاصل ہے۔

میرک نے اب اس دوا کی منظوری امریکا کے فوڈ اینڈ ڈرگ ایڈمنسٹریشن (ایف ڈی اے) سے حاصل کرنے کی ابتدائی کارروائی شروع کر دی ہے۔ امریکی ادارے کی منظوری کے بعد دوسرے ممالک بھی اس دوا کی منظوری جب دے دیں گے تو پھر یہ دوا ساری دنیا میں دستیاب ہو سکے گی