قومی پرچم!قواعدوضوابط جاری

لاہور(مانیٹرنگ ڈیسک) ہائی کورٹ نے قومی پرچم کی حرمت کے حوالے سے قواعد و ضوابط پر مبنی فیصلہ جاری کر دیا۔جسٹس علی باقر نجفی نے فیصلے میں قرار دیا کہ ہمارا پرچم محض کپڑے کا ٹکڑا نہیں، سبز رنگ خوش حالی، سفید رنگ اقلیتوں کے لئے امن، ہلال ترقی، پانچ کونوں کا ستارہ روشنی کی عکاسی کرتا ہے۔عدالت نے فیصلے میں لکھا کہ پرچم چھاپنے کے دوران اس امر کو یقینی بنایا جائے کہ قومی پرچم میں گہرا سبز حصہ تین چوتھائی، جب کہ سفید حصہ ایک چوتھائی ہو۔قومی پرچم کو دیگر رنگوں، بد نما پورٹریٹ یا کارٹون کی شکل میں ہرگز نہ چھاپا جائے، اور پرچم کے اوپر بھی کچھ نہ لکھا جائے۔قومی پرچم لہراتے اور اتارتے وقت سب کھڑے ہو کر پرچم کو سلامی دیں، قومی پرچم اندھیرے میں لہرایا نہ جائے، قومی پرچم زمین پر نہ گرنے دیا جائے، یہ پاؤں کے نیچے ہرگز نہ آئے۔پرچم ایسی جگہ نہ لہرایا جائے جہاں گندہ ہونے کا خدشہ ہو، قومی پرچم کو نذر آتش نہ کیا جائے اور اسے قبر میں دفن نہ کیا جائے، قومی پرچم کی بے حرمتی پر آئین میں 3 سال قیدکی سزا مقرر ہے۔