لاک ڈاؤن ختم

کراچی(مانیٹرنگ ڈیسک)نیشنل کمانڈ اینڈ کنٹرول آپریشن سینٹر (این سی او سی) نے سندھ میں لاک ڈاؤن 9 اگست کو ختم کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔ این سی او سی کا کورونا وائرس کی صورتحال پر مشترکہ اجلاس ہوا۔اعلامیے کے مطابق اجلاس میں این سی او سی اور سندھ حکومت کے حکام نے شرکت کی۔اجلاس میں سندھ بالخصوص کراچی میں کورونا صورتحال کا تفصیلی جائزہ لیا گیا۔ این سی او سی کے اجلاس میں کراچی، حیدر آباد سمیت 13 شہروں میں کورونا وائرس کی ایس او پیز پر سخت عمل درآمد کا فیصلہ کیا گیا ہے۔ کراچی اور حیدرآباد میں کورونا کی نئی پابندیوں کا نفاذ ہوگا۔ این سی او سی کے مشترکہ اجلاس کا اعلامیہ جاری کردیا گیا، جس میں کہا گیا ہے کہ این سی او سی کا مشترکہ اجلاس کراچی میں ہوا، سربراہ این سی او سی اسدعمر،وزیر اعلیٰ سندھ مراد علی شاہ اور نیشنل کوآرڈینیٹر این سی او سی لیفٹیننٹ جنرل حمود الزمان نے اجلاس میں شرکت کی۔این سی اوسی کا کہنا ہے کہ سندھ میں لاک ڈاؤن 9اگست کوختم کرنیکافیصلہ کیا گیا ہے، کراچی اور حیدرآباد میں کورونا کی نئی پابندیوں کا نفاذ ہوگا۔این سی او سی نے سندھ میں کورونا ایس او پیز پر عملدرآمد میں بہتری پر زور دیتے ہوئے ہدایت کی ہے کہ لاک ڈاؤن خاتمے اور محرم الحرام آغاز کے پیش نظرایس او پیز پر عملدرآمد بہتر کیا جائے۔اجلاس میں کراچی سمیت سندھ بھر میں بازار رات 8 بجے تک کھولنے کی تجویز دی گئی ہے جبکہ ریسٹورینٹس میں آؤٹ ڈور ڈائننگ کھولنے کا بھی فیصلہ کیا گیا ہے۔ذرائع کے مطابق شادی کی تقاریب کھلی جگہ پر کرنیکی اجازت دینے کا فیصلہ کیا گیا ہے، اوپن ایئر تقاریب میں 200 مہمانوں کو شرکت کی اجازت ہوگی۔ این سی او سی کے اجلاس میں کراچی، حیدر آباد سمیت 13 شہروں میں کورونا وائرس کی ایس او پیز پر سخت عمل درآمد کا فیصلہ کیا گیا ہے۔سندھ میں اسکول دوبارہ کھولنے کا فیصلہ بین الصوبائی وزراء تعلیم اجلاس میں ہوگا، جبکہ سندھ میں امتحانات سے متعلق فیصلہ بھی آئندہ بین الصوبائی وزراء تعلیم اجلاس میں کیا جائے گا۔