Qaumi Akhbar
Loading site
قومی اخبار
پیر 01 جون 2020
LZ_SITE_TITLE
 
New World of Online News

جوئے کی کمپنی سے معاہدہ، پی سی بی نے کیا فیصلہ کر لیا؟

ویب ڈیسک هفته 09 مئی 2020
جوئے کی کمپنی سے معاہدہ، پی سی بی نے کیا فیصلہ کر لیا؟

پاکستان کرکٹ بورڈ (پی سی بی) نے جوئے کی کمپنی کو لائیو سٹریمنگ حقوق بیچنے کے معاملے پر سخت ایکشن لینے کا فیصلہ کر لیا ہے، پی سی بی کا کہنا ہے کہ یہ ڈیل پی سی بی کی اجازت کے بغیر لی گئی جبکہ ٹینڈر دستاویزات میں بھی ویب سائٹ کیساتھ اس طرح کے معاہدے کا کوئی ارادہ ظاہر نہیں کیا گیا تھا۔

تفصیلات کے مطابق پاکستان سپر لیگ (پی ایس ایل) 5 کے میچز ایک غیرملکی بیٹنگ ویب سائٹ پر براہ راست نشر ہونے کا انکشاف ہوا تھا جس حوالے سے پی ایس ایل پراجیکٹ ایگزیکٹو شعیب نوید نے نجی خبر رساں ادارے سے گفتگو کرتے ہوئے مزید معلومات فراہم کی ہیں۔ ان کا کہنا ہے کہ میڈیا پارٹنر نے لائیو سٹریمنگ کے حقوق بیٹ365 کو فروخت کردئیے جس کی قطعی طور پر اجازت نہیں تھی اور انہیں ایسی ڈیل کرنے سے قبل پہلے پی سی بی سے منظوری لینا چاہیے تھی جو کسی صورت نہ ملتی، اشتہارات صرف ان ممالک میں دکھائے جاتے ہیں جہاں اجازت ہے۔

جب ان سے یہ سوال کیا گیا ہے کہ کیا ٹینڈر دستاویز کے ساتھ جمع کرانے والے پلان میں میڈیا پارٹنر نے بیٹنگ ویب سائٹ سے معاہدے کاارادہ ظاہر کیا تھا؟ تو انہوں نے نفی میں جواب دیتے ہوئے کہا کہ ایسا کوئی ذکر نہیں کیا گیا تھا،ٹورنامنٹ شروع ہوتے ہی جیسے ہی ہمیں بیٹنگ ویب سائٹ پر میچز لائیو سٹریم ہونے کا علم ہوا ہم نے فوراً میڈیا پارٹنر ٹیک فرنٹ اور مذکورہ ویب سائٹ بیٹ 365 دونوں کواسے روکنے کیلئے نوٹس بھیجے، اب بھی اس معاملے پر بات چیت جاری ہے، ہمارے میڈیا پارٹنر نے غلطی تسلیم کر لی مگر ایسے معاملات میں پی سی بی کا سخت موقف ہے، آئندہ ماہ تک سینئر مینجمنٹ کی جانب سے کوئی فیصلہ آ جانا چاہیے، بغیر پوچھے معاہدے پر میڈیا پارٹنر کیخلاف سخت ایکشن لیا جا سکتا ہے۔

ریزرو رائٹس میں بیٹنگ شامل نہ ہونے کے سوال پر انہوں نے کہا کہ اس کی ضرورت نہیں ہوتی، بیٹنگ ویب سائٹ سے معاہدے کی اجازت نہ دینے اور اشتہارات چلانے دینے سے کنفیوژن کے سوال پر شعیب نوید نے کہا کہ ایسی کوئی بات نہیں ہے، معاہدے میں شامل ہے کہ جہاں بھی میچز دکھائیں اس سے پی سی بی کو آگاہ کریں، بیٹنگ ویب سائٹ سے معاہدے کا ہمیں نہیں بتایا گیا، جیسے ہی پتا چلا تو بغیر تاخیر سے نوٹس بھیج دیا تھا،اس قسم کے معاملات میں ہماری عدم برداشت کی پالیسی ہے۔

واضح رہے کہ ایک ملین ڈالر کے معاہدے کادورانیہ تین سال ہے،اگر کسی قسط کی ادائیگی میں تاخیر نہیں ہوئی تو پی سی بی کو اب تک آدھی رقم مل چکی ہوگی۔ پی ایس ایل 5 کو پلے آف میچزسے قبل کورونا وائرس کے سبب ادھورا چھوڑنا پڑا تھا،بورڈ رواں سال کے اختتام پر بقیہ میچز کاانعقاد کرنا چاہتا ہے۔

(1218 بار دیکھا گیا)

تبصرے