Qaumi Akhbar
Loading site
قومی اخبار
هفته 19 اکتوبر 2019
LZ_SITE_TITLE
 
New World of Online News

منیر اکرم بھارت کیلئے ”زہریلا میزائل “ہیں

قومی نیوز بدھ 02 اکتوبر 2019
منیر اکرم بھارت کیلئے ”زہریلا میزائل “ہیں

اسلام آباد(مانیٹرنگ ڈیسک) منیر اکرم کو دوبارہ اقوام متحدہ بھیجے جانے پر انڈیا خوف کا شکار ہو گیا۔منیر اکرم 2002ءسے 2008ءکے درمیان اسی عہدے پر کام کر چکے ہیں۔

2008ءمیں اس وقت کے صدر آصف علی زرداری نے انہیں سیاسی وجوہات کی بنا پر عہدے سے ہٹا دیا تھا۔

بتایا جاتا ہے کہ سابق صدر آصف زرداری نے انہیں اقوام متحدہ میں بے نظیر کے قتل کا کیس پیش کرنے پر اختلافات کے باعث عہدے سے ہٹایا تھا۔

منیر اکرم انتہائی سفارتکاری کے حوالے سے جانے جاتے ہیں۔بالخصوص بھارت کے حوالے سے ان کا رویہ انتہائی جارحانہ رہا ہے۔

یہ بھی پڑھیں : عمران خان کا خطاب عالمی میڈیاپر بھی چھاگیا

جب وہ اقوام متحدہ میں پاکستان کے مستقل مندوب تھے تو انہی دنوں میں پاکستان سلامتی کونس کا غیر مستقل رکن منتخب ہوا تھا اس پلیٹ فارم کا استعمال کرتے ہوئے منیر اکرم نے نہ صرف کشمیر بلکہ دنیا بھر کے مسلمانوں کے لئے اپنی آواز بلند کی تھی۔

ٹرمپ پہلے، عمران دوسرے نمبر پر

2003ءمیں بھارتی میگزین ”آئوٹ لک انڈیا“میں شائع ایک مضمون کے مطابق بھارت کے سفارتی حلقوں میں منیر اکرم کو اچھی نظر سے نہیں دیکھا جاتا جس وجہ ان کا انڈیا کے خلاف جارحانہ رویہ تھا۔

منیر اکرم کے بھائی ضمیر اکرم بھی سفارتکار ہیں جو انڈیا سمیت مختلف اہم سفارتی محاذوں پر پاکستان کا مقدمہ لڑتے رہے ہیں۔انڈیا کے سفارتی حلقوں میں دونوں بھائیوں کو ”زہریلے میزائیلوں“ کی وجہ سے جانا جاتا ہے جو وہ انڈیا پر داغتے رہتے ہیں۔

جن دنوں منیر اکرم پاکستان کے دفتر خارجہ کے ترجمان تھے اس وقت انہوں نے ایک میڈیا کے دوران اس وقت کے بھارتی وزیر خارجہ سلمان خورشید کو کرائے کا مسلمان قرار دے دیا تھا۔

ٹرمپ ،عمران خان کی شخصیت سے متاثر

(239 بار دیکھا گیا)

تبصرے