Qaumi Akhbar
Loading site
قومی اخبار
اتوار 18  اگست 2019
LZ_SITE_TITLE
 
New World of Online News

تجارت ختم ہونے سے بھارت کا نقصان زیادہ ہوگا

قومی نیوز جمعرات 08  اگست 2019
تجارت ختم ہونے سے بھارت کا نقصان زیادہ ہوگا

اسلام آ باد(قومی اخبارنیوز)پاکستان اور بھارت کے درمیان دوطرفہ تجارت ختم کرنے سے 2 ارب ڈالر سے زائد کی تجارت متاثر ہوگی جس کا نقصان بھارت کو زیادہ ہوگا۔

ذرائع کا کہنا ہے کہ اس وقت دو طرفہ تجارت بھارت کے حق میں ہے اور پاکستان کی بھارت کیلئے برآ مدات کا حجم صرف 32کروڑ 40لاکھ ڈالر ہے جب کہ پاکستان کی درآ مدات کاحجم 1ارب 80کروڑ ڈالر ہے۔

پاکستان ، بھارت کی سالانہ دو طرفہ تجارت کا حجم 2ارب 12کروڑ 40لاکھ ڈالرز ہے۔ ذرائع کا کہنا ہے کہ دوطرفہ تجارتی تعلقات ختم کرنے کی سمری وفاقی کابینہ میں پیش کرنے کا فیصلہ کیا گیا ہے۔

یہ بھی پڑھیں : خطاب کا انگلش اسکرپٹ وائٹ ہاؤس پہنچ گیا

وزارت تجارت آ ئندہ کابینہ اجلاس میں سمری منظوری کیلئے پیش کرے گی جبکہ کابینہ کی منظوری کے بعددرآ مدوبرآ مد آ رڈرزمیں ترا میم کا ایس آ رو جاری کیا جا ئیگا۔

ادھروزیراعظم آ فس نے وزارت تجارت کو سمری کابینہ میں پیش کرنے کی ہدایت بھی کردی ہے۔واضح رہے کہ قومی سلامتی کمیٹی نے بھارت کے ساتھ دوطرفہ تجارت معطل کرنے کا فیصلہ کیا تھا۔

بھار ت کی پاکستان کو 80فیصدبرآ مدا ت جبکہ پاکستان سے صرف 20فیصد برآ مدات ہیں۔ باہمی تجارتی تعلقات بھارت کی ہٹ دھرمی اور غلط رویہ کی وجہ سے فروغِ نہیں پا سکے اور دونوں ممالک کے درمیان باہمی تجارت 5فیصد سے زیادہ نہیں۔

بھارت کے متعصبانہ رویے کی وجہ سے پلوامہ واقعہ کے بعد بھارت نے 1995 ءمیں پاکستان کو دیا جانے والا پسندیدہ ملک کا درجہ ختم کرکے پاکستان کی اشیا پر 200فیصد درآ مد ی ڈیوٹی لگا دی۔جس کی وجہ سے پاکستان کی بھارت کو برآ مدات میں کمی واقع ہوئی جبکہ بھارت کی پاکستان کو برآ مدات میں اضافہ ہوااور پاکستان کا بھارت سے تجارتی خسارہ سوا ارب ڈالر سے تجاوز کرگیا۔

اعدادوشمار کے مطابق 2017-18ءکے درمیان پاک بھارت تجارت ایک ارب 84کروڑ ڈالر تھی جس میں 80فیصد بھارت کی پاکستان کو برآ مدات تھیں۔

یہ بھی پڑھیں : پاک فوج کشمیریوں کے ساتھ ہے، آرمی چیف

گزشتہ مالی سال پاک بھارت باہمی تجارت میں10 فیصد سے زائد اضافہ ہوا۔اس طرح پاکستان کا بھارت سے تجارتی خسارہ سوا ارب ڈالر سے تجاوز کر گیا۔

وزارت تجارت کے مطابق گزشتہ مالی سال 2018-19ءکے دوران پاک بھارت باہمی تجارت 2 ارب 12 کروڑ رہی۔

بھارت نے ایک ارب 80کروڑ ڈالر کا سامان پاکستان کو برآ مد کیاجبکہ پاکستان نے صرف 32کروڑ ڈالر کا سامان بھارت برآ مد کیا۔جس میں سیمنٹ،نمک،تازہ پھل،خشک میوہ جات،پٹرولیم مصنوعات،چمڑا،سوڈا،المونیم اور دیگر اشیا شامل ہیں۔

بھارت سے پاکستان ٹیکسٹائل کی مصنوعات،مشینری،کاٹن،سبزیاں،پھل،سویابین اور دیگر اشیا درآ مد ہوئیں۔تجارتی تعلقات کے خاتمے سے بھارت کو شدید دھچکا پہنچے گا۔

(1499 بار دیکھا گیا)

تبصرے