Qaumi Akhbar
Loading site
قومی اخبار
هفته 24  اگست 2019
LZ_SITE_TITLE
 
New World of Online News

فضل الرحمن لانگ مارچ سے قبل گرفتار ہوسکتے ہیں

ویب ڈیسک بدھ 31 جولائی 2019
فضل الرحمن لانگ مارچ سے قبل گرفتار ہوسکتے ہیں

اسلام آباد… جمعیت علماء اسلام (ف) کے سربراہ اور قومی اسمبلی کی کشمیر کمیٹی کے سابق چیئرمین مولانا فضل الرحمن نے حکومت کو اگست میں مستعفی ہونے کا الٹی میٹم دیا ہے۔ دوسری جانب مولانا فضل الرحمن کے خلاف آمدنی سے زیادہ اثاثے بنانے کی تحقیقات میں تیزی آگئی ہے۔

باخبر ذرائع کے مطابق اگست میں مولانا فضل الرحمن کو پوچھ گچھ کے لئے نوٹس بھیج کر طلب کیا جاسکتا ہے‘ جبکہ آئندہ ماہ یعنی ستمبر میں فضل الرحمن کی گرفتاری بھی عمل میں آسکتی ہے‘ اس صورت میں اپنے اعلان کردہ اسلام آباد تک لانگ مارچ سے قبل ہی جے یو آئی سربراہ پابند سلاسل ہوسکتے ہیں۔

یہ بھی پڑھیں : ڈاکٹرز بھی ٹیکس حکام کے راڈار پر آگئے

ذرائع کے بقول مولانا فضل الرحمن کے بھائی مولانا ضیاء الرحمن اور مولانا کے قریبی ساتھی سابق وزیراعلیٰ خیبر پختونخوااکرم درانی کی گرفتاری بھی ہوجائے گی۔ واضح رہے کہ چیئرمین نیب جسٹس (ر) جاوید اقبال نے آمدنی سے زائد اثاثے بنانے کے حوالے سے مولانا فضل الرحمن کے خلاف انکوائری کی اجازت دی ہے۔

ذرائع کے مطابق نیب حکام آمدنی سے زائد اثاثوں کے حوالے سے مولانا فضل الرحمن کے خلاف انکوائری شروع کرچکے ہیں‘ اب اگلا مرحلہ انہیں نوٹس بھیج کر طلب کرنے کا ہے جبکہ مولانا فضل الرحمن اس حوالے سے ایک صحافی کے سوال پر جارحانہ انداز میں واضح کرچکے ہیں کہ وہ ایسے کسی بھی نوٹس کو پھاڑ کر پھینک دیں گے۔

ذرائع کے مطابق مولانا فضل الرحمن کے خلاف فوجی شہداء کی زمینوں پر قبضے کے الزام کی تحقیقات بھی دوبارہ شروع کرنے کا فیصلہ کیا گیا ہے۔

(116 بار دیکھا گیا)

تبصرے