Qaumi Akhbar
Loading site
قومی اخبار
هفته 07 دسمبر 2019
LZ_SITE_TITLE
 
New World of Online News

مریم نوازکی پیشی،درجنوں گرفتار

قومی نیوز جمعه 19 جولائی 2019
مریم نوازکی پیشی،درجنوں گرفتار

اسلام آباد،لاہور،کراچی(قومی اخبارنیوز) مسلم لیگ (ن) کی نائب صدر مریم نواز ایون فیلڈ ریفرنس کی سماعت کے لیے احتساب عدالت پہنچ گئیں۔

مریم نواز ایون فیلڈ ریفرنس کی سماعت کے لیے کیپٹن صفدر کے ساتھ احتساب عدالت اسلام آباد پہنچی ہیں جہاں ن لیگی کارکنوں کی بڑی تعداد موجود ہے۔

احتساب عدالت کے باہر لیگی کارکنوں اور پولیس اہلکاروں کے درمیان دھکم پیل بھی دیکھی گئی۔

مریم نواز نے میڈیا سے گفتگو میں کہا ہے کہ مسلم لیگ ن کے 150کارکن گرفتار کرلئے گئے ہیں انہوں نے کارکنوں کے باہر نہ نکلنے کے سوال پر کہا کہ میں خود بڑی مشکل سے یہاں پہنچی ہوں ۔

وہ جب لاہور سے اسلام آباد روانہ ہوئیں تو انہوں نے سیاہ رنگ کا قمیض شلوار زیب تن کیا تھا جو توجہ نگاہ بن گیا۔

یہ بھی پڑھیں : نیب نے شاہد خاقان عباسی کو گرفتار کرلیا

مریم نواز شریف کی سیاہ قمیض کے دامن پر ان کے والد میاں نواز شریف کی تصویر چھپی ہوئی ہے، ساتھ ہی مطالبہ درج ہے کہ بے گناہ نواز شریف کو رہا کرو۔اس کے نیچے یہی مطالبہ NAWAZ SHARIF FREE انگریزی میں تحریر ہے۔

آج احتساب عدالت میں مریم نواز کی پیشی کے موقع پر فیڈرل جوڈیشل کمپلیکس کے باہر سیکیورٹی کے غیر معمولی انتظامات کیے گئے ہیں، غیر متعلقہ افراد کا احاطہ عدالت میں داخلہ بند ہے۔

مفتاح اسماعیل آج صبح سندھ ہائیکورٹ پہنچے جہاں انہوں نے حفاظتی ضمانت کی درخواست دائرکردی

مفتاح اسماعیل کی جانب سے سندھ ہائیکورٹ دائر درخواست میں موقف اختیار کیا گیا ہے کہ نیب کی جانب سے وارنٹ گرفتاری جاری کیے گئے ہیں لہذا حفاظتی ضمانت منظور کی جائے۔

سابق مشیر خزانہ نے درخواست میں موقف اختیار کیا کہ نیب کے وارنٹ گرفتاری غیر قانونی ہیں اور نیب حکام ہراساں کر رہے ہیں۔

رہنما ن لیگ کی جانب سے درخواست میں کہا گیا ہے کہ عدالت ضمانت دے، نیب کے سامنے پیش ہونے کو تیار ہوں۔

یہ بھی پڑھیں : حافظ سعید پر ٹرمپ کا ٹویٹ بھی مذاق بن گیا

سندھ ہائیکورٹ میں میڈیا سے غیر رسمی گفتگو کرتے ہوئے مفتاح اسماعیل کا کہنا تھا کہ چھاپے مارنے کی کوئی ضرورت نہیں تھی کیونکہ مجھے گزشتہ روز تین بجے کے بعد نوٹس ملا تھا، نیب نے جب بھی بلایا پیش ہوا ہوں۔

وزیر اعظم کی معاون خصوصی فردوس عاشق اعوان نے کہا ہے کہ شاہد خاقان کوان کی خواہش پر گرفتار کیاگیا،شہباز شریف کے چہرے کا اڑتا رنگ بتارہا تھاکہ قانون اپنا رنگ دکھا رہاہے۔

وزیرداخلہ اعجاز شاہ کاکہناہے کہ وزیراعظم وہ کام ضرور کرینگے جو ملکی مفاد میں ہو، پاکستان کی پالیسی میں واضح تبدیلی آئی ہے، جس نے جو کیاوہ ضرور بھگتے گا۔

یہ بھی پڑھیں : لیاقت علی خان کو امریکا نے قتل کرایا

وزیرریلوے شیخ رشید نے کہاہے کہ جو زیادہ چیخ رہا ہے اسی کی اگلی باری، ایل این جی کیس میں ابھی بہت گرفتاریاں ہونگی،90روز میں بڑے فیصلے ہونگے۔

فیاض الحسن چوہان نے کہاہے کہ گرفتاری پر شہباز شریف کا واویلا قوم کو گمراہ نہیں کر سکتا۔

مسلم لیگ (ن) کے صدر شہباز شریف نے شاہد خاقان عباسی کی گرفتاری کی مذمت کرتے ہوئے اسے سیاسی انتقام قرار دیا اور کہا کہ شاہد خاقان کا قصور یہ ہے کہ وہ نواز شریف کا ساتھی ہے،گرفتاری کا طریقہ بھونڈا،عمران خان کو یہ سودامہنگا پڑیگا

یہ بھی پڑھیں : بھارتی سرکار اور میڈیا کی قلابازیاں

مریم نواز نے کہاکہ عوام کے ووٹ سے منتخب ہونیوالا ایک اوروزیراعظم گرفتارکرلیاگیا، بلاول بھٹو زرداری نے کہاکہ غیر قانونی ہتھکنڈوں سے احتساب ناقابل قبول ہے

فضل الرحمن ، مریم اورنگزیب ، محمد زبیر، خورشید شاہ، خواجہ آصف، احسن اقبال، مرتضیٰ وہاب و دیگر اپوزیشن رہنماﺅں نے بھی شاہد خاقان عباسی کی گرفتاری پر مذمت کی ہے۔

(588 بار دیکھا گیا)

تبصرے