Qaumi Akhbar
Loading site
قومی اخبار
هفته 24  اگست 2019
LZ_SITE_TITLE
 
New World of Online News

امپائرز بااختیار، تبصرہ نہیں کیا جاسکتا، آئی سی سی

ویب ڈیسک بدھ 17 جولائی 2019
امپائرز بااختیار، تبصرہ نہیں کیا جاسکتا، آئی سی سی

لندن … ورلڈکپ فائنل میں متنازع فیصلوں نے انگلینڈ کی پہلی بار فتح کو دھندلا دیا ہے۔ بائونڈریز گننے کا عجیب و غریب قانون اتوار کی شب سے کرکٹ ماہرین، مبصرین اور شائقین کی تنقید کا ہدف بناہوا ہے۔ اس پر انٹرنیشنل کرکٹ کونسل نے اب تک خاموشی اختیار کررکھی تھی۔ منگل کے روز غیرملکی میڈیا میں آ ئی سی سی کی وضاحت شائع کی ہے۔

آ ئی سی سی ترجمان کے مطابق میدان میں تمام فیصلوں کا اختیار فیلڈ امپائر کا اختیار ہوتا ہے، وہ قوانین کی رو فیصلے کرتے ہیں، آ ئی سی سی کی پالیسی ہے کہ امپائرنگ پر کوئی تبصرہ نہیں کیا جاتا۔ ورلڈکپ فائنل میں سب سے زیادہ نکتہ چینی بین اسٹوکس کے بیٹ سے ٹکرا کر کیوی فیلڈر کے تھرو پر گیند بائونڈری عبور کرنے پر چھ رنز دینے پر کی جارہی ہے۔

یہ بھی پڑھیں : افغانستان میں کھیل ختم ہونے پر بھارت پریشان

اسے سابق آ سٹریلین امپائر سائمن ٹوفل بھی فاش غلطی قرار دے چکے ہیں۔ ادھر انگلش کرکٹ بورڈ کے ڈائریکٹر ایشلے جائلز نے امپائرنگ غلطیوں کو ہنسی میں اڑاتے ہوئے کہا ہے کہ انگلینڈ نے ورلڈکپ جیت لیا ہے، میں نہیں سمجھتا کہ اب پلیئرز کے ہاتھوں سے ٹرافی واپس لینا ممکن ہوگا۔

جائلز کا کہنا تھا کہ اگر اوور تھرو پر پانچ رنز دیے جاتے تو انگلینڈ کو آ خری دو گیندوں پر جیتنے کیلئے چار رنز کی ضرورت ہوتی۔ آ پ نہیں دیکھا کہ بین اسٹوکس نے اوور کی آ خری گیند جو فل ٹاس تھی اسے قصداً دو رنز کیلئے آ ہستہ کھیلا، وہ تو اسے گرائونڈ کے باہر بھی پھینک سکتے تھے۔

(2831 بار دیکھا گیا)

تبصرے