Qaumi Akhbar
Loading site
قومی اخبار
منگل 23 جولائی 2019
LZ_SITE_TITLE
 
New World of Online News

مریم نواز کا عدلیہ پر ایک اور بڑے حملے کا منصوبہ

ویب ڈیسک بدھ 10 جولائی 2019
مریم نواز کا عدلیہ پر ایک اور بڑے حملے کا منصوبہ

لاہور …احتساب عدالت کے جج کی مبینہ ویڈیوکے بعد مریم نواز نے عدلیہ پر ایک اور بڑے حملے کی پلاننگ کرلی ،نیب کی اپیل پر مریم نواز کا عدالت میں پیش ہونے کی صورت میں بھرپور عوامی طاقت کے ساتھ وہاں پر جانے پر غور ، بھرپور طریقہ سے وہاں جانے کی صورت میں انتظامیہ کے ساتھ ٹکرائو اور عدلیہ پرحملے کا خدشہ ، مریم نواز نے اپنے ٹویٹ میں بھی اداروں کو دھمکیاں دینے کے بعد عدالت میں جانے کے حوالے سے کس طرح بھرپور طریقہ سے جایا جاتا ہے اپنے قریبی ساتھیوں سے مشاورت شروع کر دی۔

با وثوق ذرائع کا کہنا ہے کہ مریم نواز اور اس کے قریبی ساتھی ہر صورت میں بھرپور محاذ آ رائی کر کے ایسا ماحول پیدا کرنا چاہتے ہیں کہ ملک کے اندر انارکی کی فضا پیدا ہو۔

با وثوق ذرائع کا کہنا ہے کہ ن لیگ کے رہنمائوں کے علاوہ اس ضمن میں مریم نواز کے قریبی ساتھیوں نے پیپلز پارٹی سمیت دیگر سیا سی جماعتوں کے رہنمائوں سے بھی رابطے شروع کر دیئے ہیں اور ان کو بھی قائل کرنے کی کوشش کی جا رہی ہے کہ اس وقت میں بھرپور محاذ آ رائی پیدا کر کے ماحول کو اس قدر خراب کیا جائے کہ احتساب کا عمل بھی رک جائے اور حکومت بھی چلی جائے۔

ذرائع کے مطابق ن لیگ کے اندر ہی ایک بڑا گروپ نہ صرف اسکی مخالفت کر رہا ہے بلکہ اس گروپ کے کئی اہم رہنما مریم نواز کے منڈی بہائولدین جلسہ کے موقع پر بھی نہ تو ساتھ گئے اورنہ ہی استقبالیہ کیمپوں میں نظر آ ئے۔

ذرائع کا کہنا ہے کہ ان سینئر ن لیگی رہنمائوں کا یہ خیال ہے کہ تصادم کی سیاست سے ایک توہمارے اراکین اسمبلی ہمارا ساتھ چھوڑ جائیں گے اور دوسرا اس سے پارٹی کا نقصان اور جمہوریت سبوتاژ ہو سکتی ہے۔

یہ بھی پڑھیں : بھارتی شکست پرسوالات کا سلسلہ جاری

جبکہ مریم نواز کے قریبی افراد ہر صورت میں مریم نواز کو بھرپور مزاحمتی سیاست کا مشورہ دے رہے ہیں۔ذرائع کا کہنا ہے کہ پیپلزپا رٹی کے اندر بھی بلاول بھٹو سمیت کئی رہنما ئوں نے بھی واضح طور پر یہ پیغام دیا ہے کہ مزاحمتی سیاست کے ہم حق میں نہیں ہیں۔

ذرائع کے مطابق مریم نواز کو انکے قانونی مشیر بھی یہی کہہ رہے ہیں کہ کوئی قانونی راستہ رکھیں، مزاحمتی سیاست میں نقصان ہو گا۔ مریم نواز نے ن لیگ کے اہم رہنمائوں جو مزاحمتی سیاست کیخلاف ہیں کو واضح طورپر جواب دیدیا ہے۔

مریم نواز عدالت میں پیش ہونے یا نہ ہونے کے حوالے سے اپنے والد نوازشریف سے مشاورت کے بعد حتمی فیصلہ کرینگی۔مریم نواز نواز شریف سے ملاقات میں ساری صورتحال سامنے رکھیں گی جبکہ پارٹی میں کو ن ان کیساتھ چل رہا اور کون مخالفت کر رہا ہے ، اس حوالے سے بھی نوازشریف کو بتائیں گی۔

ذرائع کا کہنا ہے کہ مریم نواز کے قریبی حلقے ان کو مشورہ دے رہے ہیں کہ اگر عدالت میں جانا ہے تو بھرپور طریقہ سے جایا جائے ، ارکان اسمبلی، ورکرز اور وکلا بھی ساتھ ہوں۔ دوسری رائے یہ بھی دی جا رہی ہے کہ اگر نہیں جانا تو اس صورت میں بھی اور جانے کی صورت میں بھی ایک مرتبہ پھر جج کی مبینہ ویڈیو کے کچھ اور حصوں کو چلا کر عدلیہ اور اداروں کیخلاف مزید نفرت پیدا کی جائے۔

(264 بار دیکھا گیا)

تبصرے