Qaumi Akhbar
Loading site
قومی اخبار
منگل 22 اکتوبر 2019
LZ_SITE_TITLE
 
New World of Online News

فیس بک، انسٹاگرام اور واٹس ایپ بحال ہونا شروع

قومی نیوز جمعرات 04 جولائی 2019
فیس بک، انسٹاگرام اور واٹس ایپ بحال ہونا شروع

کراچی (قومی اخبارنیوز) دنیا بھر سمیت پاکستان میں سوشل میڈیا یا ویب سائٹس انسٹا گرام فیس بک اور واٹس ایپ کئی گھنٹے بند رہنے کے بعد پاکستان بھر میں بحال ہونا شروع ہو گئے ہیں پاکستان میں انٹرنیٹ سروس فراہم کرنے والی کمپنیوں نے اس سلسلے میں اپنے صارفین کو آ گاہ کر دیا ہے کمپنیوں کے ذرائع نے بتایا ہے کہ سوشل میڈیا یا کمپنیوں کی طرف سے اس حوالے سے کوئی باقاعدہ وجہ نہیں بتائی گئی ہے لیکن بعض ذمہ دار ذرائع بتا رہے ہیں کہ ایک چائنیز ہیکر کمپنی نے ان سروسز کو جزوی طور پر نقصان پہنچایا ہے سماجی رابطے کی ویب سائٹ فیس بک، واٹس ایپ اور انسٹا گرام کے صارفین کو مختلف فیچرز استعمال کرنے میں مشکلات کا سامنا ہے۔

صارفین کو فیس بک ایپ اور ویب سائٹ مکمل طور پر ڈاؤن ہونے کی بجائے مخصوص فیچرز کے استعمال میں مشکلات کا سامنا کرنا پڑرہا ہے۔ ویب سائٹس کی ٹریکنگ کرنے والی سائٹ ڈاؤن ڈیٹیکٹر کے مطابق دنیا بھر میں صارفین کو مخصوص پوسٹس کرنے میں مشکلات کا سامنا ہے جبکہ پوسٹس میں تصاویر نظر ہی نہیں آ رہیں، تاہم پیج ضرور لوڈ ہورہا ہے۔ واٹس ایپ اور انسٹا گرام میں بھی صارفین تصاویر لوڈ نہیں کر پا رہے۔

پٹائی ہوئی ہے، دودھ نہیں پہنچا سکوں گا

دنیا بھر میں یعنی یورپ، امریکا، پاکستان، جنوبی امریکا اور ایشیا سمیت دیگر ممالک میں صارفین کو ان سروسز کے استعمال میں مشکلات کا سامنا ہے۔ واٹس ایپ میں صارفین تصاویر، ویڈیوز اور وائس پیغامات بھیجنے سے قاصررہے ، تاہم ٹیکسٹ پیغامات بھیجے جا سکتے ہیں۔ انسٹاگرام صارفین کو بھی اسی طرح کے مسائل کا سامنا ے جس میں صارفین تصاویر پوسٹ کرنے سے قاصر ہیں بلکہ اکثر کے پاس وہ ایپ یا سائٹ ہی لوڈ نہیں ہو رہی۔

ابھی یہ واضح نہیں کہ آ خر فیس بک اور اس کی ایپس کو اس مسئلے کا سامنا کس وجہ سے ہے تاہم یہ رواں سال کے دوران تیسری بار ہے جب فیس بک کو بڑے پیمانے پر سائٹ کی بندش کا سامنا ہوا ہے۔ اس سے پہلے مارچ میں ایسا سروس کنفگریشن چینج کی بدولت ہوا جس کے ایک ماہ بعد فیس بک، انسٹاگرام اور واٹس ایپ کو ایک بار پھر اس تجربے کا سامنا ہوا اور اب ایک سال میں تیسری بار ایسا ہو رہا ہے۔ فیس بک نے اس حوالے سے کہا ہے کہ وہ صارفین کو پیش آ نے والے مسائل سے آ گاہ ہے اور ان کو جلد از جلد دور کرنے کے لیے کام کیا جارہا ہے۔

(427 بار دیکھا گیا)

تبصرے