Qaumi Akhbar
Loading site
قومی اخبار
هفته 11 جولائی 2020
LZ_SITE_TITLE
 
New World of Online News

کشمیر بھارت کے ہاتھ سے نکل گیا،خدا کی قسم الگ ہوجائیں گے

قومی نیوز منگل 09 اپریل 2019
کشمیر بھارت کے ہاتھ سے نکل گیا،خدا کی قسم الگ ہوجائیں گے

کراچی … مقبوضہ کشمیر میں نیشنل کانفرنس کے صدر اور سابق کٹھ پتلی وزیراعلیٰ فاروق عبداللہ نے بی جے پی کے منشور پر تنقید کرتے ہوئے کہا ہے کہ آ رٹیکل 370 کی منسوخی کشمیریوں کیلئے آ زادی کی راہ ہموار کرے گی،یہ سیکولرازم اور جمہوریت کیخلاف بھارت دشمنی ہے، فاروق عبداللہ کا کہنا تھا کہ اگر آ رٹیکل 370ختم کیا گیا تو یہ کشمیر کا بھارت سے الحاق ختم کرنے کے مترادف ہوگا ، میں خدا کی قسم کھا کر کہتا ہوں ہم ان سے آ زادی لے کر رہیں گے، بھارتی میڈیا کے مطابق ریلی سے خطاب کرتے ہوئے ان کا کہنا تھا کہ نئی دہلی سمجھتا ہے کہ وہ آ رٹیکل 370 ختم کردے گا اور ہم خاموش رہیں گے؟ یہ لوگ غلط سوچتے ہیں۔ ہم اس کیخلاف لڑیں گے۔

مقبوضہ کشمیر کی سابق کتھ پتلی وزیراعلیٰ محبوبہ مفتی نے بی جے پی کے انتخابی منشور پر اپنے رد عمل میں کہا ہے کہ آ رٹیکل 370کے خاتمے کے بعد کشمیر پر بھارتی آ ئین کا اطلاق نہیں ہوگا۔ ٹوئٹر پر ان کا کہنا تھا کہ نہ سمجھو گے تو مٹ جائو گے اے ہندوستان والوں۔ تمہاری داستان تک بھی نہ ہوگی داستانوں میں۔

یہ بھی پڑھیں : پاکستانی ایف 16بھارت کے گلے کی ہڈی بن گیا

ان کا کہنا تھا کہ آ گ سے کھیلنا بندکرو، یہ نہ صرف کشمیر بلکہ پورے خطے کو جلا کر رکھ دے گا ،ہم انہیں ایسا کرنے نہیں دیں گے، ہم بھی دیکھیں گے کہ پھر کون کشمیر میں بھارت کا جھنڈا لہرائے گا۔ ان کا کہنا تھا کہ آ رٹیکل 370ریاست کشمیر کو بھارت سے جوڑتی ہے اور اگر یہ نہیں ہوگا تو کشمیر پر بھارت کی قانونی حیثیت ختم ہوجائے گی۔ اپنی جماعت پی ڈی پی پر پابندی کیلئے دائر درخواست پر ان کا کہنا تھا کہ عدالتوں میں وقت کیوں ضائع کیوں کیا جارہا ہے۔

بی جے پی کی جانب سے آ رٹیکل 370 کے خاتمے کا انتظار کرنا چاہئے، ایسی صورت میں ہمیں الیکشن لڑنے سے خود بخود دور کردیا جائے گا۔ ادھر کانگریس کے ترجمان رندیپ سرجے والا اور پارٹی رہنما پٹیل نے پریس کانفرنس کے دوران اپنے رد عمل میں کہا کہ بی جے پی منشور کے بجائے قوم کے سامنے معافی نامہ پیش کرے۔ انہوں نے منشور کو جھانسہ پتر قرار دیتے ہوئے کہا کہ اس پر 175سوالات اٹھ گئے ہیں۔ بی جے پی نے 2014 کے منشور کو کاپی پیسٹ کردیا ہے۔

ادھربھارت میں حکمراں جماعت نے آ ئندہ عام انتخابات کیلئے اپنا منشور جاری کردیا۔ بھارتی جنتا پارٹی کے وزیر داخلہ راج ناتھ سنگھ کی جانب سے پیش کئے گئے منشور میںمقبوضہ کشمیر میں آ رٹیکل 370کے خاتمے (کشمیر کی خصوصی حیثیت کا خاتمہ) رام مندر کی تعمیر، یکساں سول قوانین، ایودھیا میں بابری مسجد کی جگہ رام مندر کی تعمیر، قوم پرستی، نیشنل سیکورٹی، سرحدوں کی حفاظت، اقتصادی ترقی، دہشت گردی کے خاتمے اور کسانوں کی فلاح و بہبود سمیت عوام سے 75 وعدے کیے گئے ہیں جسے الیکشن جیتنے کیلئے مودی کا آ خری حربہ قرار دیا جارہا ہے۔

یہ بھی پڑھیں : تجارتی مراکز میں رینجرز سیکورٹی بڑھانے کا فیصلہ

بی جے پی نے اپنے منشور کو سنکلپ پتر کا نام دیا ہے۔ بی جے پی نے طلاق ثلاثہ کے خلاف قانون سازی، ہر گھر میں بیت الخلا اور پانی کی فراہمی، کسانوں کے لیے 60 سال کی عمر سے پینشن، بدعنوانی سے پاک انتظامیہ اور خواتین کی فلاحی اسکیموں کا بھی وعدہ کیا ہے۔بی جے پی نے وعدہ کیا ہے کہ دوبارہ اقتدار ملنے پر وہ 15 سال سے کم عمر کی بچیوں کے ساتھ جنسی زیادتی کے مجرموں کو موت کی سزا دینے کا قانون بنائے گی۔

اس موقع پر وزیر اعظم نریندر مودی نے تقریر کرتے ہوئے کہا کہ ہمارا مقصد ون مشن ون ڈائریکشن ہے۔بی جے پی صدر امیت شاہ نے وعدہ کیا کہ دہشت گردی ختم کا خاتمہ کیا جائے گا۔بی جے پی نے ایودھیا میں رام مندر کی تعمیر کے وعدے کا اعادہ کیا اور کہا کہ آ ئین کے دائرے میں رہتے ہوئے اس کی تعمیر کا راستہ ہموار کیا جائے گا۔

(475 بار دیکھا گیا)

تبصرے