Qaumi Akhbar
Loading site
قومی اخبار
هفته 11 جولائی 2020
LZ_SITE_TITLE
 
New World of Online News

آئندہ ہفتے نئے بھارتی حملے کا خطرہ فورسز ہائی الرٹ

قومی نیوز پیر 08 اپریل 2019
آئندہ ہفتے نئے بھارتی حملے کا خطرہ فورسز ہائی الرٹ

ملتان‘اسلام آباد….وزیرخارجہ شاہ محمود قریشی نے کہا ہے کہ ہمارے پاس مصدقہ انٹیلی جنس اطلاعات ہیں کہ بھارت پاکستان پر حملے کا نیا منصوبہ بنارہا ہے‘اگلے ہفتے کارروائی کا خطرہ ہے ‘یہ جارحیت 16سے 20 اپریل تک ہوسکتی ہے

پلوامہ جیساایک اور واقعہ رونما کیا جاسکتاہے‘انڈیاکے خطرناک عزائم کو عالمی برادری کے سامنے بے نقاب کردیاہے ‘کچھ نادیدہ قوتیں پاک تہران تعلقات میں رخنہ اندازی کی کوششیں کررہی ہیں‘ان کو ناکام کریں گے‘وزیراعظم عمران خان جلد ایران جائیں گے۔

ان خیالات کا اظہارانہوں نے اتوار کو ملتان میں پریس کانفرنس کرتے ہوئے کیا۔ بھارت کی جانب سے نئے حملے کے خطرے کے باعث ملک بھر میں فورسز کو الرٹ کردیا گیا ہے جبکہ سرحدوں پر حفاظتی اقدامات میں اضافہ کیا جارہا ہے۔

دریں اثناء دفتر خارجہ نے بھارتی ڈپٹی ہائی کمشنر کو طلب کرکے پاکستان کے خلاف کسی جارحیت کی صورت میں جوابی کارروائی سے خبردار کیا۔ اتوار کو دفتر خارجہ کے ترجمان ڈاکٹر محمد فیصل نے ایک بیان میں کہا کہ وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی کے بیان کے تناظر میں بھارتی ڈپٹی کمشنر کے حوالے ایک احتجاجی مراسلہ بھی کیا گیا۔

پریس کانفرنس میں شاہ محمود قریشی نے کہاکہ جارحیت کا جواز تلاش کرنے کے لیے مقبوضہ کشمیر میں پلوامہ جیسا ایک اور واقعہ بھی رونما کیا جاسکتا ہے تاکہ اس کی آڑ میں فوجی کارروائی کی جاسکے۔

شاہ محمود کا کہناتھاکہ ان اطلاعات کے بعداسلام آباد میں فوری طورپر جی فائیو ممالک کے سفارت کاروں کو وزارت خارجہ میںمدعو کرکے اس صورت حال سے آگاہ کیاگیاہے‘ہم چاہتے ہیں کہ عالمی برادری اس غیرذمہ دارانہ رویے کا نوٹس لے اور بھارت کو تنبیہ کرے کہ وہ اس راستے پر نہ چلے۔

انہوں نے مزید کہاکہ بھارتی میڈیا کی رپورٹ کے مطابق حال ہی میں بھارت میں سیکورٹی سے متعلق کابینہ کمیٹی کے ایک اجلاس کے دوران بھارتی مسلح افواج کے سربراہوں نے جب یہ کہا کہ ہم پاکستان کے خلاف کارروائی کے لیے بھارتی حکومت کی اجازت کے منتظر ہیں تو اس پروزیراعظم مودی نے کہاکہ آپ کو میں نے فری ہینڈ دے رکھا ہے۔

قبل ازیں پیپلزپارٹی کی رکن قومی اسمبلی نفیسہ شاہ اورڈپٹی سیکریٹری اطلاعات پلوشہ خان نے کہا ہے کہ شاہ محمودقریشی جنگ کاشوشہ چھوڑ کر حکومتی نااہلیوں سے توجہ ہٹانا چاہتے ہیں‘مہنگائی کے مارے عوام کو جنگ سے ڈرانے کی کوشش نہ کی جائے‘عمران خان مودی کو داداگیری کیوں نہیں دکھاتے ‘ 350 بھارتی قیدیوں کی رہائی کا اعلان مودی کے پائوں پکڑنے کے مترادف ہے۔

نفیسہ شاہ نے شاہ محمود قریشی کی پریس کانفرنس پرردعمل دیتے ہوئے کہا ہے کہ عمران خان سیاسی قیادت کوانتقام کا نشانہ بنا رہے ہیں‘پاک فوج کے بہادرجوان بھارتی جار حیت کاجواب دینے کی صلاحیت رکھتے ہیں، جارحیت ہوئی توقوم کا ہر فرد فوج کے ساتھ کھڑاہوگا۔

علاوہ ازیں بھارت نے پاکستانی وزیر خارجہ کے بیان کو غیر ذمہ دارانہ اور مضحکہ خیز قرار دے کر مسترد کردیا۔ بھارت نے کہا کہ دونوں ملکوں کے درمیان سفارتی اور ڈی جی ملٹری آپریشن کا میکنزم موجود ہے جہاں کوئی بھی انٹیلی جنس معلومات کا تبادلہ کیا جاسکتا ہے‘

بیان میں کہا گیا ہے کہ پاکستانی وزیر خارجہ کے بیان میں بھارت میں دہشت گردی کیلئے پاکستان کے حمایت یافتہ دہشت گرد گروپوں کو پیغام دیا گیا ہے اور بھارت دہشت گردی کے کسی بھی حملہ کا بھر پور جواب دینے کا حق محفوظ رکھتا ہے۔ بھارتی وزارت خارجہ کے ترجمان راویش کمار پاکستان کے وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی کے بیان پر کیے گئے سوال پر ردعمل دے رہے تھے۔

(500 بار دیکھا گیا)

تبصرے