Qaumi Akhbar
Loading site
قومی اخبار
پیر 25 مارچ 2019
LZ_SITE_TITLE
 
New World of Online News

پاک بھارت تجارتی لین دین شروع‘ تنائو برقرار

ویب ڈیسک بدھ 06 مارچ 2019
پاک بھارت تجارتی لین دین شروع‘ تنائو برقرار

سری نگر/ اسلام آباد … کشمیر کی سرحد پر پاکستان اور بھارت کے درمیان اشیاء کے لین دین کی تجارت شروع ہوگئی۔بھارتی حکام نے مزید بتایا ہے کہ لین دین کی بحالی کے باوجود مقبوضہ وادی میں ہڑتال اور جھڑپوں کی وجہ سے تنائو کی فضاء برقرار ہے۔

غیر ملکی خبر رساں ادارے کی رپورٹ کے مطابق لائن آف کنٹرول پر فائرنگ کا سلسلہ تھمنے کے بعد پاکستان میں چکوٹھی سے 35 ٹرکس سامان لے کر بھارت آئے جبکہ اس کے جواب میں مساوی تعداد میں گاڑیاں سامان لے کر پاکستان میں داخل ہوئیں۔ مقبوضہ کشمیر کی مقامی تجارتی ایسوسی ایشن کے صدر پاون آنند کے مطابق یہ بارٹر تجارت دونوں جانب کے تاجروں کے باہمی اعتماد پر کی جاتی ہے۔

یہ بھی پڑھیں : امریکا نے بھی بھارت کو بڑا جھٹکا دیدیا

تنائو کی وجہ سے دونوں جانب کے تاجر ایک دوسرے سے مل نہیں سکتے‘ ایک دوسرے کا سامان چیک نہیں کرسکتے تا وقتیکہ لین دین کا مرحلہ مکمل ہوجائے اور سامان ایک دوسرے کے پاس نہ پہنچ جائے‘ اس کے لئے دونوں جانب سے واٹس ایپ کا سہارا لیا جارہا ہے۔

بھارت کے تاجر پاکستان کو مصالحہ جات بھیجتے ہیں جبکہ پاکستانی تاجر انہیں قالین اور کپڑے روانہ کرتے ہیں۔ دریں اثناء پاکستانی برآمدی سیکٹر نے دونوں ممالک کے درمیان سرحدی چھیڑ چھاڑ اور بھارتی مہم جوئی کی وجہ سے برقرار تنائو کی فضاء پر تشویش کا اظہار کیا ہے۔

ایکسپورٹرز کا کہنا ہے کہ تنائو کی وجہ سے ان کے یورپ اور امریکہ میں موجود کسٹمرز ان سے سوالات کررہے ہیں‘ کیونکہ جنگ کی فضاء کی وجہ سے انہیں اپنے آرڈر وقت پر پورے نہ ہونے کا اندیشہ ہوتا ہے۔

پاکستان ریڈی میڈ گارمنٹس مینو فیکچررز اینڈ ایکسپورٹرز ایسوسی ایشن (پریگما) کے مطابق بھارت کی فضائی جارہیت کے بعد سے پاکستانی ایکسپورٹرز کو روزانہ امریکہ اور یورپ سے ان کے خریداروں کے فون آرہے ہیں جنہیں اپنی شپمنٹس کی بروقت تکمیل کے بارے میں تشویش ہے۔

ایکسپورٹرز کا حکومت سے مطالبہ ہے کہ تنائو کی فضاء ختم کرنے کے لئے ہرممکن کوشش کی جائے‘ بصورت دیگر برآمدی سیکٹر مغربی ممالک میں خزاں اور سرما کے سیزن کے مزید آرڈرز کھودے گا۔

(119 بار دیکھا گیا)

تبصرے