Qaumi Akhbar
Loading site
قومی اخبار
پیر 26  اگست 2019
LZ_SITE_TITLE
 
New World of Online News

مہوش حیات نے بلند ی پائی آئٹم سونگ کے بعد

ویب ڈیسک هفته 02 مارچ 2019
مہوش حیات نے بلند ی پائی آئٹم سونگ کے بعد

مہوش حیات کا نام پاکستان فیشن اور ڈرامہ انڈسٹری کے لیے کسی تعارف کا مہتاج نہیں ہے وہ باصلاحیت ہے، خوبصورت ہے اور سب سے بڑھ کر یہ کہ اپنی صلاحیتوں سے واقف ہے۔ مہوش اچھی اداکارہ تو ہیں لیکن ماڈلنگ بھی بہت اچھی کرتی ہیں اور گا بھی اچھا لیتی ہیں۔

مہوش نے کیرئیر کی ابتدا بطور ماڈل کی جس کے بعد وہ ٹی وی ڈراموں میں کیا آئی، ٹی وی کی ضرورت بن گئی۔ مہوش نے اب فلم انڈسٹری میں بھی اپنی پہچان بنالی ہے۔ مہوش حیات کچھ سالوں سے کامیابی کی لہروں پر سفر کر رہی ہیں‘ وہ ملک کی مطلوبہ اداکارائوں میں سے ایک ہیں‘ ان کے متاثر کن ذخیرے میں اضافہ کرتے ہوئے،وہ اب گلوکاری میں بھی کامیاب ہیں۔

قدرتی طور پر جب کوئی اداکار یہ مقام حاصل کر لے،تو اپنے گرد پراسرارائیت کی ایک چمک پیدا کر لیتا ہے۔ اپنے انٹرویو میں مہوش حیات نے کہا کہ سب کی توجہ پانا بہت اچھا لگتا ہے‘ انہوں نے کہا کہ مجھے پر اسرار رہنا پسند ہے کیوں کہ مجھے لوگوں کو سرپرائز دینا پسند ہے‘ایک اداکار کا سنگر بن جانا یقین دلاتا ہے کہ کوئی بھی مکمل طور پر اس جیسی زندگی گزار سکتا ہے۔

مہوش نے مزید کہا کہ مجھے گانے کا بہت شوق تھااور میں بہت خوش قسمت ہوں کہ مجھے اسٹرنگ اور شیراز جیسے قابل لوگوں کے ساتھ کوک اسٹوڈیو میں گانے کا موقع ملا‘ میں اپنی کارکردگی سے خوش ہوں۔ اداکارہ نے کہاکہ اگر صبا جیسا کوئی کردار کوئین ، ہیروئین ، جب وی میٹ یا ہندی میڈیم جیسی فلم میں ملا تو میں ضرور کروں گی۔

انہوں نے بتایا کہ انہیں فلم ’ڈیڑھ عشقیہ‘ میں کام کرنے کی آفر ہوئی جسے انہوں نے بولڈ سین کی وجہ سے رد کر دیاتھا‘ اگر میں نے کبھی ہندی فلم کی تو میں اپنی ٹرمز اور کنڈیشنز پر کروں گی نہ کہ ان کی‘ کیونکہ میں نے بہت ایمان داری اور خلوص سے پاکستان میں اپنی جگہ بنائی ہے اور میں شو پیس کے طور پر کام نہیں کروں گی‘ میں باعزت طریقے سے کام کروں گی۔

مہوش حیات نے مزید کہا کہ بہت جلد پاکستانی فلمیں اور ڈرامے بہتر ہو جائیں گے‘ کچھ سال قبل یہاں اسٹار پلس اور ترکی کے ڈرامے سب سے زیادہ مقبول تھے لیکن اب بہتری کی وجہ سے پاکستانی ڈرامے سب سے زیادہ دیکھے جاتے ہیں۔

انہوں نے بتایاکہ مجھے بہت سی فلموں کی پیش کش ہوئی ہے لیکن میں خواتین کے مسائل سے تعلق رکھنے والی فلموں میں کام کی خواہش رکھتی ہوں‘ کیونکہ خواتین کے گرد گھومنے والی فلم میں بہت کم ایکٹرز کو کام کرنے کا موقع ملتا ہے۔

اقوام متحدہ کی جانب سے ان کو خصوصی اعزاز سے نوازنے پر پوچھے گئے سوال کے جواب میں مہوش کا کہنا تھا کہ یہ ان کی بہت بڑی کامیابی ہے۔ اداکارہ نے مزید کہا کہ وہ جہاں بھی جائیں گی ، پاکستان اور پاکستانیوں کا سر فخر سے بلند کرنے کی کوشش کرتی رہیں گی۔

مہوش حیات نے کہا کہ مشکل وقت میں سینما مالکان اپنی فلموں کو بھرپور سپورٹ کریں ‘ ہمیں معیار کو بہتر بنا کر مقابلے کی دوڑ میں شامل ہونا چاہئے۔ اداکارہ کہا کہ پاکستانی سرمایہ کاروں کی جانب سے فلموں پر بڑی سرمایہ کاری کی جاتی ہے ۔

پاکستانی شائقین کو چاہئے کہ وہ اپنی فلموں کی پذیرائی کریں تاکہ ہماری انڈسٹری کو مضبوط بنیادیں میسر آ سکیں ۔ ایک سوال کے جواب میں انہوں نے کہا کہ ہمیں تسلسل کے ساتھ معیاری فلمیں بنا کر مقابلے کی دوڑ میں شامل ہو نا چاہئے تاکہ ہم ہندوستانی بالی وڈ انڈسٹری کو پیچھے چھوڑنے میں کامیاب ہو سکیں۔

(245 بار دیکھا گیا)

تبصرے