Qaumi Akhbar
Loading site
قومی اخبار
پیر 18 نومبر 2019
LZ_SITE_TITLE
 
New World of Online News

مسلمانوں کو بچانے کیلئے بھارتی سکھ سامنے آگئے

قومی نیوز بدھ 20 فروری 2019
مسلمانوں کو بچانے کیلئے بھارتی سکھ سامنے آگئے

جموں۔۔۔پلوامہ حملے کے بعد مقبوضہ جموں اور بھارت کے مختلف علاقوں میں کشمیری مسلمانوں کیخلاف فسادات شروع ہونے کے بعد ہزاروں کشمیری جموں میں محصور ہوگئے ہیں جبکہ بھارت کی مختلف ریاستوں میں بھی کشمیری مسلمان پھنسے ہوئے ہیں۔ایسے میں بھارت کے سکھ کشمیری مسلمانوں کے تحفظ کیلئے سامنے آئے ہیں۔

جموں میں محصور کشمیریوں کی تعداد منگل تک 6 ہزار سے زائد بتائی جاتی ہے۔ ان میں بیشتر افراد وہ ہیں جو علاج یا کسی ضروری کام سے جموں، چندی گڑھ اور دیگر شہروں میں آئے تھے لیکن اب ان کی واپسی کا راستہ بند ہے۔

پلوامہ میں بھارتی سیکورٹی کانوائے پر خودکش حملہ جموں سرینگر ہائی وے پر ہوا تھا۔ حملے کے بعد سے یہ ہائی وے اب بیشتر وقت بند رہتی ہے اور اسے مخصوص اوقات میں یکطرفہ ٹریفک کے لیے کھولا جاتا ہے۔

یعنی لوگ یا تو سرینگر سے جموں جا پاتے ہیں یا جموں سے سرینگر۔جموں میں انتہاپسندوں کے حملوں کے سبب کشمیریوں کا ہوٹل میں ٹھہرنا ممکن نہیں رہا۔ شہر میں مسلمانوں کی دکانوں پر حملے کیے گئے۔

یہ خبر بھی پڑھیں پاکستان میں دہشت گردی کا نیا بھارتی منصوبہ

بھارتی سکھوں نے مسلمانوں پر حملے کرنے والے انتہا پسندوں کو بھی وارننگ دی ہے اور گردواروں میں مسلمانوں کے ٹھہرنے کا انتظام کیا ہے۔سکھ تنظیم خالصہ ایڈ دہرادون سمیت بھارت کے مختلف علاقوں میں حملوں کا نشانہ بننے والے کشمیری طلبہ کو بحفاظت نکال کر چندی گڑھ اور دیگر مقامات پر پہنچا رہی ہے تاکہ وہ واپس کشمیر جا سکیں۔

ادھربھارت میں پاکستانی ہائی کمیشن کے باہر مظاہرین نے گیٹ سے زبردستی اندر گھسنے کی کوشش کی جس پر پاکستان نے شدید احتجاج کیا ہے۔

دفترخارجہ کی جانب سے جاری ہونے والے بیان میں کہا گیا ہے کہ بھارت میں موجود پاکستانی سفارتکاروں اور ان کے خاندان کو ڈرانے دھمکانے کا سلسلہ جاری ہے

پاکستان ہائی کمیشن کے اہلکاروں کو بھارتی انتہا پسندوں کی جانب سے دھمکی آمیز فون کالز بھی آرہی ہیں جب کہ پاکستان ہائی کمیشن کے باہر مظاہرین نے گیٹ سے زبردستی اندر گھسنے کی کوشش بھی کی اور پاکستانی سفارتی عملے سے متعلق نامناسب زبان کا استعمال کیا گیا۔

ترجمان دفترخارجہ ڈاکٹر محمد فیصل کے مطابق پاکستان نے بھارتی ڈپٹی ہائی کمشنر جے پی سنگھ کو دفتر خارجہ طلب کرکے بھارت میں سفارتکاروں کو ہراساں کرنے پر شدید احتجاج کیا اور بھارت میں اپنے ہائی کمیشن کی ناقص سیکیورٹی پرتشویش کا اظہار کیا۔

(351 بار دیکھا گیا)

تبصرے