Qaumi Akhbar
Loading site
قومی اخبار
هفته 24  اگست 2019
LZ_SITE_TITLE
 
New World of Online News

مادھوری نے خاموشی توڑ دی

ویب ڈیسک هفته 16 فروری 2019
مادھوری نے خاموشی توڑ دی

نامور اداکارہ مادھوری ڈکشٹ نے بالی ووڈ کے ’’سنسکاری بابوجی‘‘ آلوک ناتھ پر لگنے والے جنسی ہراسانی کے الزامات پراپنا ردعمل دیتے ہوئے کہا ہے کہ وہ یہ تمام خبریں سن کر صدمے سے دنگ رہ گئی تھیں۔ مادھوری ڈکشٹ نے حال ہی میں ’’می ٹو‘‘ مہم پر بات کرتے ہوئے کہا ہے کہ آلوک ناتھ پرجنسی ہراسانی کے الزامات سن کروہ صدمے سے دنگ ہوگئی تھیں۔ مادھوری ڈکشٹ نے آلوک ناتھ کے منافقت بھرے روپ اور دہرے معیار پر کھل کر اپنی رائے کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ جب اس طرح کی چیزیں سامنے آتی ہیں تو آپ صدمے کا شکار ہوجاتے ہیں کیونکہ آپ ان لوگوں کواتنے برسوں سے ذاتی طور پر جانتے ہیں اور اچانک آپ ان کے بارے میں اس طرح کی خبریں پڑھیں۔ اداکارہ نے کہا کہ ان الزامات کے بعد ایسا لگا جیسے آپ ان لوگوں سے اتنے برسوں سے واقف ہی نہیں تھے‘ یہ بالکل ایسا ہی ہے جیسے ایک انسان کے دوروپ ہوں اور اس چیز نے مجھے صدمے سے دنگ کردیا۔ واضح رہے کہ گزشتہ برس اگست میں بالی ووڈ میں ’’می ٹو‘‘ مہم کا آغازہوا تھا جس کے تحت بالی ووڈ میں کام کرنے والی کئی خواتین نے اپنے ساتھ ہونے والی جنسی زیادتی اوربدسلوکی پر آواز اٹھائی تھی۔ یاد رہے کہ اداکارہ مادھوری ڈکشٹ اورآلوک ناتھ نے ماضی کی سپر ہٹ فلم ’’ہم آپ کے ہیں کون‘‘ میں ایک ساتھ کام کیا تھا فلم میں مادھوری نے آلوک ناتھ کی بہو کا کردار نبھایا تھا۔ واضح رہے کہ بالی ووڈ میں ’’سنسکاری بابوجی‘‘ کے نام سے مشہور اداکار آلوک ناتھ پر پروڈیوسر اور مصنفہ ونتا نندا نے الزام لگایا تھا کہ آلوک ناتھ نے انہیں زیادتی کا نشانہ بنایا تھا۔ اداکارہ تنوشری دتہ کے بعد بالی ووڈ میں ’’می ٹو‘‘مہم کے تحت خواتین زیادتی اور ہراسانی کے واقعات پر آواز اٹھارہی ہیں۔ حال ہی میں 1990ء کے مقبول ترین شو ’’تارا‘‘ کی مصنفہ اور پروڈیوسر ونتا نندا نے بھارتی فلموں میں ’’بابوجی‘‘ کے کردارادا کرنے والے اداکار آلوک ناتھ پر زیادتی کاالزام عائد کیاہے، آلوک ناتھ نے ڈرامہ سیریل’’تارا‘‘میں مرکزی کردار اداکیا تھا۔ ونتا نے فیس بک پر اپنے ساتھ ہونے والی زیادتی پر آواز اٹھاتے ہوئے کہا کہ آج سے 19 سال قبل آلوک ناتھ نے انہیں ان ہی کے گھر پر زیادتی کانشانہ بنایا‘ اس کے علاوہ 1990ء میں آن ایئر ہونے والے شو ’’تارا‘‘ کی مرکزی اداکارہ نونیت نشان کو بھی جنسی ہراسانی کا نشانہ بنایااور ان پر منشیات لینے کا الزام بھی لگایا۔ ونتا نندا نے اپنی پوسٹ میں لکھا کہ اس واقعے کے بعد وہ ٹوٹ پھوٹ کا شکار ہوگئی تھیں‘ انہوں نے کام کرنا بند کردیاتھا اوراس واقعے نے انہیں نشے کا عادی بنادیا تھا۔ ونتا نندا نے اتنے سال خاموش رہنے کے بعد اس واقعے کو اب منظر عام پر لانے کے حوالے سے کہا کہ میں نہیں چاہتی کہ کوئی بھی لڑکی اپنے ساتھ ہونے والی زیادتی کے خلاف آواز اٹھانے سے ڈرے۔ میں ڈر گئی تھی اس لیے اپنے ساتھ ہوئے واقعے پر آواز نہیں اٹھائی، میں اس وقت کے انتظار میں تھی جو اب 19 سال بعد آیاہے۔ ونتا نندا نے اس طرح کی صورتحال کا سامنا کرنے والی خواتین کو مخاطب کرتے ہوئے کہا کہ خود کو دباکر نہ رکھیں بلکہ سامنے آئیں اوراپنے ساتھ ہونیو الی زیادتی پر آواز اٹھائیں۔

(216 بار دیکھا گیا)

تبصرے