Qaumi Akhbar
Loading site
قومی اخبار
بدھ 20 نومبر 2019
LZ_SITE_TITLE
 
New World of Online News

بھارت میں مسلمانوں پر حملے

قومی نیوز هفته 16 فروری 2019
بھارت میں مسلمانوں پر حملے

سری نگر، نئی دہلی … پلوامہ میں خودکش حملے میں بھارتی فوجیوں کی ہلاکت کے بعد انتہا پسند مودی سرکار قابو سے باہر ہوگئی ہے ۔
بغیر کسی ثبوت کے واقعے کا الزام پاکستان پر دھر دیا گیا ۔
بھارتی قومی سلامتی کمیٹی کا اجلاس ہوا جو صرف 35 منٹ جاری رہا ۔
بھارتی میڈیا کے مطابق پاکستان کے خلاف فوجی جواب پر غور کیا گیا ، ادھر مودی سرکار کی جانب سے کھلی چھوٹ ملنے کے بعد جموں میں بھارتی فوج نے 8 کشمیریوں کو زندہ جلادیا، املاک پر حملے کئے گئے جبکہ100 سے زیادہ مسلمانوں کی گاڑیاں جلادی گئیں ۔
جھانسی میں تقریب سے خطاب کرتے ہوئے بھارتی وزیراعظم مودی نے گیدڑ بھپکی دی کہ بھارتی فوج کو پلوامہ دھماکے کا منصوبہ بنانے والوں پرکسی بھی لمحے اور کسی بھی جگہ حملے کا حکم دے دیا گیا ہے ۔
انھوں نے کہا کہ پاکستان جان لے کہ بھارت ایک ارب30 کروڑ لوگوں کا ملک ہے اور سارے ہندوستانی پاکستان کو مل کر جواب دیں گے ۔
یہ خبر بھی پڑھیں : بھارتی فوجیوں کی ہلاکتوں کی تعداد 44 ہوگئی
پاکستان میں تعینات بھارتی ہائی کمشنر اجے بساریہ کو واپس دہلی بلوالیا گیا ہے
دریں اثناء پلوامہ میں بھارتی فوج پر حملے کے حوالے سے کئی انکشافات سامنے آئے ہیں جن کے مطابق حملے میں بھارتی حکومت کے ملوث ہونے کے امکانات ہیں ۔
ذرائع کے مطابق مقبوضہ کشمیر کے دورے میں مودی کو باقاعدہ بریفنگ دی گئی کہ آئندہ الیکشن میں کس طرح دلت برادری کی حمایت حاصل کی جائیگی اور کس طرح پاکستان کے خلاف عالمی سطح پر نفرت پھیلائی جائیگی ۔
ذرائع کے مطابق حملے میں جو بارودی مواد استعمال ہوا ہے وہ سارے کا سارا نہ صرف بھارتی ساختہ ہے بلکہ پاکستان کے اندر دہشت گردی کے اکثر حملوں میں استعمال ہوتا رہا ہے ۔
ادھر پاکستان نے بھارتی الزامات کو مسترد کرتے ہوئے بھارتی ڈپٹی ہائی کمشنر کو دفتر خارجہ طلب کرکے بے سروپا الزامات لگانے پر شدید احتجاج کیا گیا ۔
علاوہ ازیں بھارتی سوشل میڈیا پر بھی پاکستان کے خلاف زہر اگلا جارہا ہے ۔ادھر پاکستان کے خلاف بیان دینے سے انکار پر بھارتی سابق کرکٹر سدھو کے خلاف ہندوا نتہا پسندوں نے محاذ آرائی شروع کردی ہے۔

(383 بار دیکھا گیا)

تبصرے