Qaumi Akhbar
Loading site
قومی اخبار
هفته 29 فروری 2020
LZ_SITE_TITLE
 
New World of Online News

سندھ حکومت قبلہ درست کرلے

صابر علی جمعه 15 فروری 2019
سندھ حکومت قبلہ درست کرلے

کراچی … ایم کیو ایم پاکستان کے سینئر ڈپٹی کنوینر عامر خان نے حکومت سندھ کو پیغام دیا ہے کہ وہ اپنا قبلہ درست کرلے۔
انہوں نے کہا کہ حکومت سندھ کے ذمہ داران صرف لوٹنے اور کرپشن میں مصروف ہیں‘ کوئی بڑا شخص اگر قتل ہوجائے اس کے قاتلوں کو قبر کھود کر بھی نکال لیاجاتا ہے‘ ایم کیو ایم کے کارکنوں کو شہید کرنے والا کوئی دہشت گرد گرفتار نہیں ہوتا۔
یہ بات انہوں نے جمعرات کے روز کراچی پریس کلب کے باہر ایم کیو ایم (پاکستان) کے زیر اہتمام منعقدہ احتجاجی مظاہرے سے خطاب کرتے ہوئے کہی۔
عامر خان نے کہا کہ علی رضا عابدی کے قاتلوں کا آج تک پتہ نہیں چل سکا‘ کراچی کے معصوم شہری شہید ہورہے ہیں‘ کسی کو کوئی فکر نہیں ہے۔
انہوں نے کہا کہ حکومت سندھ دیہاتوں سے لانے کے بجائے مقامی نوجونواں کو پولیس میں بھرتی کرے۔
انہوں نے کہا کہ سندھ حکومت میئر کراچی کو اختیارات دینے کو تیار نہیں ہے‘ جب تک مقامی لوگوں کو اختیارات نہیں ملیں گے امن قائم نہیں ہوگا۔
مشرقی پاکستان بنانے میں سب سے بڑا کردار سندھ حکومت کے ذمہ داروں کا تھا‘ ذوالفقار مرزا کا بیان ریکارڈ پر ہے‘ انہوں نے کئی لاکھ اسلحہ لائسنس بانٹے‘ انصاف فراہم کئے بغیر ریاستیں نہیں چلتیں‘ ہم نے 20 لاکھ جانیں دے کر پاکستان بنایا تھا۔
عامر خان نے کہا کہ اٹھارہویں ترمیم میں اگر بلدیاتی اداروں کو اختیارات نہیں ملتے تو ہم اٹھارہویں ترمیم نہیں مانتے‘ کراچی کے لوگوں کے مسائل حل نہیں کئے گئے تو وفاق سے صوبے کا مطالبہ کریں گے‘ اس پاک سرزمین کی خاطر صبر و امن کے دامن کو تھاما ہوا ہے۔
انہوں نے کہا کہ ایم کیو ایم (پاکستان) پر تواتر سے دہشت گرد حملے ہوہے ہیں اور اب تک کوئی گرفتاری عمل میں نہیں آئی ہے اگر ہمیں تحفظ فراہم نہیں کیا گیا تو ہم راست اقدام اُٹھائیں گے۔
انہوں نے کہا کہ ہمیں صوبہ لینا آتا ہے ہم صوبہ لے کر دکھائیں گے‘ زمینوں پر قبضے اس حکومت کا وطیرہ ہے۔
انہوں نے کہا کہ علی رضا عابدی کو اُن کے گھر کی دہلیز پر اور شکیل انصاری کو یوسی 6 کے دفتر میں گھس کر شہید کیا گیا لیکن حکومتی سطح پر کوئی پوچھنے والا نہیں ہے۔
عامر خان نے کہا کہ سندھ کے مختلف علاقوں سے آنے والے پولیس اہلکار رشوت دے کر تعیناتی لیتے ہیں‘ اوپر سے لے کر نیچے تک آئی جی ہو یا ڈپٹی کمشنر یا دیگر پولیس کے عہدیدار‘ کوئی مقامی نہیں ہے‘ حکومت سندھ شہری علاقوں کے ساتھ زیادتی کررہی ہے۔
رکن رابطہ کمیٹی فیصل سبزواری نے کہا کہ آج ہم بہت دکھ کے ساتھ احتجاج کررہے ہیں۔
انہوں نے کہا کہ ہم نے نعرہ لگایا تھا کہ مہاجر قاتل‘ مہاجر مقتول کی سیاست نہیں ہوگی‘ ہم آج بھی اس پر کاربند ہیں۔
انہوں نے کہا کہ ہمارے آج کے مظاہرے کو غیرسنجیدہ نہ لیاجائے‘ یہ مظاہرہ نوشتہ دیوار ہے ہمیں انصاف دیاجائے‘ ہمارے دفاتر اور کارکنوں کو مکمل تحفظ فراہم کیا جائے۔
فیصل سبزواری نے کہا کہ پبلک سروس کمیشن نے اپنے 3 رشتہ داروں کو کامیاب کروایا‘ عدالت اس کا نوٹس لے‘ 2 افراد کو دیہی اور ایک کو شہری کوٹہ پر ملازمت دی گئی ہے‘ تعصب کا یہ عمل کسی صورت مناسب نہیں‘ مظاہرے سے کنور نوید جمیل‘ میئر کراچی وسیم اختر‘ خواجہ اظہار الحسن‘ ارشد حسن‘ رانا انصار‘ محفوظ یار خان اور دیگر نے بھی خطاب کیا۔

(350 بار دیکھا گیا)

تبصرے