Qaumi Akhbar
Loading site
قومی اخبار
پیر 25 مارچ 2019
LZ_SITE_TITLE
 
New World of Online News

صدر مملکت نے متحدہ کو تحفظات دور کرانے کی یقین دہانی کرادی

صابر علی منگل 12 فروری 2019
صدر مملکت نے متحدہ کو تحفظات دور کرانے کی یقین دہانی کرادی

کراچی۔۔۔۔ ایم کیوایم (پاکستان) کی حکومت سے ناراضگی پر صدر مملکت ڈاکٹر عارف علوی نے وزیر اعظم عمران خان کی ہدایت پر ایم کیوایم (پاکستان) کے وفد کو ملاقات کے لیے بلالیا
ڈاکٹر عارف علوی نے ایم کیوایم (پاکستان) کے وفد سے ملاقات کرکے ایم کیوایم (پاکستان) کے تحفظات دور کرانے کی یقین دہانی کرادی
ایم کیوایم (پاکستان) پنجاب حکومت میں مسلم لیگ(ق) کو ایک مزید وزارت دینے اور وفاقی کابینہ میں (ق) لیگ کے ایک اور وزیر کو شامل کرنے کی یقین دہانی پر پی ٹی آئی حکومت سے ناراض ہوگئی تھی
ایم کیوایم (پاکستان) وفاقی کابینہ میں ایم کیوایم (پاکستان) کے رکن امین الحق کو وعدہ کرنے کے باوجود اب تک شامل نہ کرنے پر پہلے بھی ناراض تھی
یہ خبر بھی پڑھیں : متحدہ پی ٹی آئی میں دوریاں مزید بڑھ گئیں
تاہم وعدہ کرنے کے باوجود امین الحق کو اب تک کابینہ میں شامل نہیں کیاگیا
جبکہ مسلم لیگ (ق) نے پنجاب میں سیاسی دبائو بڑھایا تو پنجاب کا بینہ میں (ق) لیگ کے ایک مزید وزارت دے دی گئی اور جلد ہی وفاقی کابینہ میں بھی (ق) لیگ کو ایک اور وزارت دی جانے والی ہے
جس کے بعد ایم کیوایم (پاکستان) نے بھی وفاقی کابینہ میں ایک وزیر یا مشیر دینے سمیت قومی اسمبلی میں اپنی مرضی کے محکموں پر مشتمل 2 قائمہ کمیٹیوں کی چیئرمین شپ کا مطالبہ بھی کیاہے
ایم کیوایم (پاکستان) نے اپنے یہ مطالبات صدر مملکت ڈاکٹر عارف علوی سے ملاقات میں رکھے جس کے جواب میں صدر مملکت نے وزیر اعظم عمران خان سے بات کرنے اور ایم کیوایم (پاکستان) کے مطالبات ماننے کی یقین دہانی کرائی ہے‘
جس کے بعد وفاقی کابینہ میں امین الحق کو بطور وزیر یا دوسری صورت میں فیصل سبز واری کو بطور مشیر شامل کیا جاسکتا ہے‘ جبکہ قائمہ کمیٹیوں میں مرضی کی چیئرمین شپ بھی دی جاسکتی ہے
پی ٹی آئی کی حکومت ایک جانب مسلم لیگ(ن) کو ٹف ٹائم دینے کے لیے شہباز شریف کو پی اے سی کی چیئرمین شپ سے ہٹانا چاہتی ہے
یہ خبر بھی پڑھیں : متحدہ کے دفاتر کھل جائینگے، وزیر اعظم کی یقین دہانی
دوسری جانب اپنی اتحادی جماعتوں مسلم لیگ(ق) اور ایم کیوایم (پاکستان) سے معاملات بہتر بنانے کے ساتھ ساتھ سندھ حکومت سے بھی ورکنگ ریلیشن شپ بنانے کے لیے کوشا ں ہے
صدر مملکت ڈاکٹر عارف علوی کی وزیر اعلیٰ سندھ مراد علی شاہ سے ملاقات بھی اسی سلسلے کی کڑی ہے
واضح رہے کہ اس سے قبل وفاقی وزراء خصوصاً وفاقی وزیر اطلاعات فواد چوہدری مراد علی شاہ کو منصب سے ہٹانے کا بارہا مطالبہ کرتے رہے ہیں
تاہم اب ایسا معلوم ہوتا ہے کہ پی ٹی آئی نے اپنی سیاسی حکمت عملی تبدیل کی ہے اور اتحادی جماعتوں کے ساتھ ساتھ اپوزیشن کی دوسری بڑی جماعت پیپلزپارٹی اور حکومت سندھ کے خلاف سخت ردعمل کے بجائے مفاہمانہ رویہ اختیار کرنے کا فیصلہ کیاہے ۔

(124 بار دیکھا گیا)

تبصرے