Qaumi Akhbar
Loading site
قومی اخبار
جمعه 26 اپریل 2019
LZ_SITE_TITLE
 
New World of Online News

پاکستان کےلئے ریکارڈ سعودی سرمایہ کاری

ویب ڈیسک پیر 11 فروری 2019
پاکستان کےلئے ریکارڈ سعودی سرمایہ کاری

دبئی ۔۔۔۔ سعودی عرب کی جانب سے پاکستان کیلئے ریکارڈ سرمایہ کاری پیکیج تیار کرلیا گیا ہے جو کہ ممکنہ طور پر مالی بحران کے شکار برادر اسلامی ملک کیلئے ریلیف کا باعث ہوگا
سعودی ولی عہد شہزادہ محمد بن سلمان کے دورہ اسلام آباد کے موقع پر اربوں ڈالر کے معاہدوں پر دستخط کئے جائیں گے
اس سے علاقائی جیوپولیٹیکل چیلنجز سے نمٹنے میں بھی مدد ملے گی۔
سعودی عرب کی جانب سے پاکستان میں کی جانے والی سرمایہ کاری میں سب سے اہم گوادر پورٹ پر تیل کی ریفائنری اور آئل کمپلیکس میں 10 ارب ڈالر کی سرمایہ کاری ہے۔
یہ خبر بھی پڑھیں : سعودی حکومت نے آن لائن ویزا سروس متعارف کرادی
سعودی عرب کے 2 ذرائع نے فرانسیسی خبررساں ایجنسی اے ایف پی کو تصدیق کی ہے کہ سعودی ولی عہد شہزادہ محمد بن سلمان جلد ہی اسلام آباد کا دورہ کریں گے تاہم انہوں نے حتمی تاریخ نہیں بتائی۔
دونوں ممالک کے حکام نے اے ایف پی کو بتایا کہ اس دورے کے موقع پر دونوں ممالک کے درمیان سرمایہ کاری کے کئی معاہدوں پر دستخط کئے جائیں گے۔
دہائیوں پرانے اتحادی ریاض اور اسلام آباد سعودی ولی عہد کے دورے سے قبل ان معاہدوں کی تفصیلات پر کئی ماہ سے مذاکرات میں مشغول رہے ہیں۔
پاکستانی وزارت خزانہ کے ایک سینئر عہدیدار نے اے ایف پی کو بتایا کہ یہ مذاکرات انتہائی مثبت رہے اور یہ سعودی عرب کی جانب سے پاکستان میں اب تک کی سب سے بڑی سرمایہ کاری ہوگی۔
اپنا نام ظاہر نہ کرنے کی شرط پر عہدیدار نے بتایا کہ ہمیں سعودی ولی عہد کے آنے والے دورے سے اسی طرح کے معاہدے کی توقع ہے۔
وال اسٹریٹ جنرل نے گزشتہ ماہ رپورٹ کیا تھا کہ سعودی عرب اور متحدہ عرب امارات جو کہ مشرقی وسطیٰ میں پاکستان کے بڑے تجارتی شراکت دار ہیں نے پاکستانی وزیراعظم عمران خان کو 30 ارب ڈالر کی سرمایہ کاری اور قرضوں کی پیشکش کی تھی۔
سعودی ماہر معیشت فہد البونین کا کہنا ہے کہ سعودی عرب کی جانب سے پاکستان میں سرمایہ کاری پاکستان کی زبوں حالی کا شکار معیشت کے لئے ایک لائف لائن کا باعث بن سکتی ہے۔
فروری کے اول میں ریٹنگ ایجنسی ایس اینڈ پی نے پاکستانی معیشت کی ریٹنگ اے بی سے بی مائنس کردی تھی۔
البونین نے اے ایف پی کو بتایا کہ سعودی عرب کی جانب سے سرمایہ کاری پاکستانی معیشت کے لئے ایک امدادی پیکیج ہوگا
یہ خبر بھی پڑھیں : حکومت کا حج اخراجات میں کمی کرنے سےصاف انکار
جس کا مقصد پاکستانی پر بیرونی قرضوں کے دبائو اور بیرون ملک ذر مبادلہ کے ذخائر میں کمی کو پورا کرنا ہے جبکہ اس کے ساتھ ساتھ یہ معیشت کی بحالی میں بھی کردار ادا کرے گا۔
جبکہ غیرملکی خبر رساں ادارے کی رپورٹ میں تجزیہ کاروں کے حوالے سے کہا گیا ہے کہ اس سے نہ صرف پاکستان کی معاشی مشکلات کم ہوں گی بلکہ خطے کے جغرافیائی چیلنجز سے نمٹنے میں بھی مدد ملے گی۔
سی پیک منصوبے کے اہم ترین مرکز‘ گوادر پورٹ پر 10 ارب ڈالر کی لاگت سے ریفائنری اور آئل کمپلیکس تعمیر کیا جائے گا۔
رپورٹ کے مطابق 2 سعودی ذرائع نے ولی عہد کے عنقریب دورۂ پاکستان کی تصدیق کی ہے جبکہ دونوں ممالک کے حکام کے مطابق متعدد وسیع سرمایہ کاری کے معاہدوں پر دستخط متوقع ہیں۔
پاکستانی حکام کے مطابق سعودی عرب کے ساتھ اب تک ہونے والے مذاکرات نہایت مثبت سمت میں جارہے ہیں۔
رپورٹ میں یاد دلایاگیا ہے کہ گزشتہ ماہ امریکی اخبار وال اسٹریٹ نے لکھا تھا کہ سعودی عرب اور متحدہ عرب امارات نے پاکستان کو مجموعی طور پر 30 ارب ڈالر کی سرمایہ کاری اور قرض دینے کا وعدہ کرلیا ہے۔

(130 بار دیکھا گیا)

تبصرے