Qaumi Akhbar
Loading site
قومی اخبار
بدھ 20 فروری 2019
LZ_SITE_TITLE
 
New World of Online News | Best Urdu Website in World

مسیحیوں اور مسلمانوں کو قریب لانے کی کوشش

ویب ڈیسک پیر 04 فروری 2019
مسیحیوں اور مسلمانوں کو قریب لانے کی کوشش

پاپائے روم متحدہ عرب امارات پہنچ گئے،وہ جزیرہ نما عرب کا دورہ کرنے والے پہلے پوپ بن گئے ہیں،

روانگی سے قبل ایک بیان میں پوپ فرانسس نے یمن میں جاری جنگ کو بند کرنے کی اپیل کرتے ہوئے کہاہے کہ فریقین یمن جنگ بندی معاہدے کا احترام کریں ، عالمی برادری متاثرہ علاقوں میں خوراک کی فراہمی کو یقینی بنائے ،طویل جنگ سے بچے بھو ک کا شکار ہیں اور ان تک مناسب خوراک نہیں پہنچ رہی ،

پوری دنیا یمن میں امن کیلئے دعا کرے،پاپائے روم مسیحیوں اور مسلمانوں کے درمیان تعلقات کا ایک نیا باب کھولنے کے مقصد سے متحدہ عرب امارات پہنچ گئے،پوپ کی آمد پر ابو ظہبی کے ولی عہد الشیخ محمد بن زاید ال نہیان اور جامعہ الازہر کے سربراہ ڈاکٹر احمد الطیب نے ان کا پْرتپاک خیرمقدم کیا ہے۔رومن کیتھولک کے کسی روحانی پیشوا کا جزیرہ نما عرب کا یہ پہلا دورہ ہے۔

پوپ فرانسس ویٹی کن کا سربراہ بننے کے بعد سے دنیا کے دو بڑے مذاہب عیسائیت اور اسلام کو قریب تر لانے کے لیے کوشاں ہیں۔وہ آج یواے ای کے ولی عہد سے ملاقات کریں گے۔اورکل ایک بڑے مذہبی اجتماع سے خطاب کریں گے جس میں قریباً ایک لاکھ35 ہزار عبادت گزاروں کی شرکت متوقع ہے۔

پوپ فرانسس جامع الازہر کے سربراہ سے بھی ملاقات کرینگے جبکہ وہ مسلم کونسل کے زیر اہتمام ہونے والی بین المذاہب کانفرنس میں بھی شرکت کریں گے۔ اس موقع پر ابوظہبی کے ولی عہد کا کہنا تھا کہ پوپ فرانسس کے دورے سے اخوت ، امن اور برامن بقائے باہمی کے اقدار کے فروغ میں مدد ملے گی۔

یہ خبر بھی پڑھیں‎ : حج اخراجات، فی کس 2 لاکھ کا اضافہ

ان کا کہنا تھا کہ یہ دورہ اس لئے بھی اہم ہے کیوں کہ اس سے متحدہ عرب امارات اور ویٹی کن کے درمیان دوستانہ تعلقات کو فروغ ملے گا۔

متحدہ عرب امارات میں تقریباً دس لاکھ کے قریب رومن کیتھلک رہتے ہیں جن میں سے بیشتر کاتعلق انڈیا اور فلپائیں سے ہے،پوپ کو ابوظبی کے ولی عہد شہزادہ شیخ محمد بن زید النہیان نے بین الامذاہب کانفرنس میں شمولیت کی دعوت دی ہوئی ہے،

منگل کو منعقد ہونے والی ایک اجتمائی دعا کی تقریب بھی اس تاریخ ساز دورے کا حصہ ہے،توقع کی جارہی ہے اس عبادت میں ایک لاکھ 20 ہزار سیزیادہ لوگ شرکت کریں گے۔

(47 بار دیکھا گیا)

تبصرے