Qaumi Akhbar
Loading site
قومی اخبار
بدھ 20 نومبر 2019
LZ_SITE_TITLE
 
New World of Online News

منی بجٹ ٹیکسوں کے بجائے نوازشات کی بارش

قومی نیوز جمعرات 24 جنوری 2019
منی بجٹ ٹیکسوں کے بجائے نوازشات کی بارش

اسلام آباد….. وفاقی وزیر خزانہ اسد عمر نے قومی اسمبلی کے اجلاس میں ’’جھوٹے‘‘ اور ’’گو نیازی گو‘‘ کے نعروں میں اپنی 5 ماہ کی حکومت کے میں دوسرے منی بجٹ کا اعلان کیا

جس میں انہوں نے صنعت، زراعت اور سرمایہ کاری کیلئے مراعات دینے، بڑی گاڑیوں،سگریٹ اور لگژری آٹیمزمہنگے ہونے کی نوید سنائی۔

بجٹ تقریر میں فائلر کیلئے بینک لین دین پر ودہولڈنگ ٹیکس ختم کرنے، چھوٹے شادی ہالز پر ٹیکس 20 سے کم کرے 5 ہزار کرنیکی تجویز دی ہے، حکومت نے ٹیکس میں اضافہ کیلئے نان فائلرز کو 1300سی سی تک کی چھوٹی گاڑی خریدنے کی اجازت دی،

بجٹ میں چھوٹے موبائل مزید سستے جبکہ بڑے موبائلز پر ٹیکس میں اضافہ کر دیا گیا ہے، حکومت نے کم لاگت گھروں کیلئے قرض حسنہ اسکیم شروع کرنے کا اعلان کیا ہے جس کیلئے، 5 ارب روپے مختص کیے ہیں، زرعی اور چھوٹی صنعتوں کے قرض پر بینکوں کا ٹیکس آدھا کرنے کی تجویز ہے،

وزیر خزانہ نے اسٹاک مارکیٹ ٹریڈنگ پر ودہولڈنگ ٹیکس ختم کر نے کا اعلان کیا گیا ہے، اس ٹیکس کے خاتمے سے اسٹاک ایکسچینج میں ٹرانزکشن کی لاگت بھی کم ہوگی اور نقصان تین سال تک کیری اوور ہوسکے گا وزیر خزانہ کی بجٹ تقریر کے دوران اپوزیشن جماعتوں کے ممبران اسمبلی نے احتجاج اور ہنگامہ آرائی کی۔جھوٹا ، چندہ چور ، گو نیازی گو کے نعرے لگائے اور ڈیسک بجا ئے۔

مزید پڑھئیے‎ : منی بجٹ

یہ شور شرابہ وزیر خزانہ اسد عمر کی تقریر ختم ہونے تک جاری رہا۔ وزیراعظم پرسکون اور تسبیح پڑھتے رہے۔ اسپیکر اسد قیصر نے اجلاس کی صدارت کی۔احتجاج میں مسلم لیگ (ن) ، پیپلز پارٹی اور ایم ایم اے نے حصہ لیا مگر سب سے زیادہ پرجوش مسلم لیگ (ن) کے ممبران نظر آئے۔

منی بجٹ میںخصوصی اقتصادی زونز میں صنعتوں کے قیام پر پانچ سال ٹیکس سے استثنیٰ دینے کی تجویز دی گئی ہے جبکہ متبادل توانائی میں سرمایہ کاری اور مینوفیکچرنگ یونٹ کے قیام پر 5سال کیلئے ٹیکس سے چھوٹ دینے کی تجویز ہے،

وزیر خزانہ نے کہا کہ کارپوریٹ ٹیکس میں سالانہ ایک فیصد کمی کی پالیسی جاری رہے گی، نان بینکنگ کمپنیز کا سپرٹیکس ختم ہوجائیگا، کاروباری اکائونٹس پر کم از کم چھ فیصد ودہولڈنگ ٹیکس حتمی کردیا گیا۔ بجٹ میں سیونگ اسکیموں پر ٹیکس ختم کر نے کی تجویز ہے،

گروپ آف کمپنیز کیلئے ٹیکس ریلیف بحال، ودہولڈنگ ٹیکس کے گوشوارے ہر ماہ کے بجائے سال میں دو بار دینا ہونگے، بجٹ میں مقامی صنعتوں کیلئے خام مالی کی ڈیوٹیز میں کمی کرنے کی تجویز دی ہے۔ بجٹ میں 150اشیاء کی درآمدی ڈیوٹی میں کمی کی تجویز ہے۔

موبائل فون، ڈبہ پیک دودھ، شیمپو، کریم، پنیر پر ڈیوٹی میں اضافہ جبکہ سولر پینل سستے، کاشتکاروں کیلئے ڈیزل انجن پر سیلز ٹیکس میں کمی کی تجویز دی ہے، کاروباری اکائونٹس پر 6فیصد ٹیکس ختم کردیا گیا ہے،

سگریٹوں پرایکسائز ڈیوٹی میں2 فیصد اضافہ، یوریا کھاد کی قیمت میں 200 روپے فی بوری کمی کا اعلان کیا ہے، جبکہ خام مال کی درآمد پر کچھ پر ٹیکس ختم اور کچھ پر کم کر نے کی تجویز ہے۔

وزیر خزانہ نے نیشنل سیونگ پر ٹیکس یکم جولائی سے ختم کر نے کا اعلان کیا ہے۔ وفاق ایوان ہائے صنعت و تجارت کے مطابق حکومت نے کاروبار کے فروغ کیلئے مثبت اقدامات کیے ہیں۔
منی بجٹ

(374 بار دیکھا گیا)

تبصرے