Qaumi Akhbar
Loading site
قومی اخبار
بدھ 13 نومبر 2019
LZ_SITE_TITLE
 
New World of Online News

تنخواہ دار طبقے پر ٹیکس کا مزید بوجھ ڈالنے کا فیصلہ

قومی نیوز اتوار 20 جنوری 2019
تنخواہ دار طبقے پر ٹیکس کا مزید بوجھ ڈالنے کا فیصلہ

اسلام آباد۔۔۔حکومت نے منی بجٹ میں تنخواہ دار طبقے پر ٹیکس کا مزید بوجھ ڈالنے کا فیصلہ کر لیا ہے

وفاقی حکومت نے رواں ماہ 23 جنوری کو منی بجٹ پیش کرنے کا اعلان کر رکھا ہے۔

حکومت کے مطابق منی بجٹ میں عوام کو ریلیف دیا جائے گا اور ٹیکسوں سے متعلق ہر قسم کی تبدیلی پارلیمنٹ کی منظوری کے بعد دی جائے گی۔

مزید پڑھئیے‎ : منی بجٹ، حکومت کے لئے غلطی کی گنجائش نہیں، ماہرین

ذرائع کے مطابق منی بجٹ میں انکم ٹیکس چھوٹ کی حد 12 لاکھ روپے سے کم کرنے کی سفارش کی گئی ہے۔

ذرائع کے مطابق حکومت کو 170 بلین کا ریونیو ہدف حاصل نہیں ہوسکا۔

حکومت 50 بلین تنخواہوں کی مد میں دیتی ہے اس لئے تنخواہ دار طبقے کو دیا گیا

ٹیکس ریلیف کم کرنے کی سفارش کرتے ہوئے انکم ٹیکس چھوٹ کی حد 6 سے 8 لاکھ روپے سالانہ تک مقرر کرنے کی تجویزپیش کی گئی ہے۔

23 جنوری کو پیش کئے جانے والے منی بجٹ میں پیٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں اضافے اور موبائل کارڈز پر سپریم کورٹ پر کے حکم پر ختم کیے ٹیکس کی بحالی کا بھی امکان ظاہر کیاجارہا ہے۔

(292 بار دیکھا گیا)

تبصرے