Qaumi Akhbar
Loading site
قومی اخبار
بدھ 19 جون 2019
LZ_SITE_TITLE
 
New World of Online News

ہر ماہ اوسطاً 448 ارب روپے قرض لیا گیا

ویب ڈیسک بدھ 09 جنوری 2019
ہر ماہ اوسطاً 448 ارب روپے قرض لیا گیا

کراچی…. پاکستان تحریک انصاف (پی ٹی آئی) نے نیا قرض لینے میں (ن) لیگ کو بھی پیچھے چھوڑ دیا۔

وفاقی حکومت نے 6 ماہ میں اوسطاً ہرماہ 448 ارب روپے قرض لیا۔ مجموعی قرصے 264 کھرب 52 ارب روپے سے تجاوز کرگئے۔

اسٹیٹ بینک آف پاکستان کے مطابق رواں مالی سال کے پہلے 5 ماہ کے دوران وفاقی حکومت کے قرضے 9.3 فیصد بڑھ گئے۔

نومبر کے اختتام تک وفاقی حکومت کے قرضوں کا مجموعی 264 کھرب 52 ارب 60 کروڑ روپے کی بلند ترین سطح پر پہنچ گیا۔

مزید پڑھئیے‎ : نئے سال کا آغاز ، نئے قرض پر وگرام کی آنے لگی آواز

اس دوران اندرونی قرضے 5.5 فیصد اضافے سے 173 کھرب 22 ارب 80 کروڑ روپے اور بیرونی قرضے 17 فیصد اضافے سے 91 کھرب 29 ارب 80 کروڑ روپے ہوگئے۔

جولائی سے نومبر تک وفاقی حکومت نے 9 کھرب 6 ارب 50 کروڑ روپے کے قرضے مقامی ذرائع سے لئے جبکہ بیرونی قرضوں میں 13 کھرب 34 ارب روپے کا اضافہ ہوا۔

پی ٹی آئی کی حکومت کی قرض لینے کی رفتار مسلم لیگ (ن) کی حکومت کی طرف سے آخری سال قرض لینے کی اوسط رفتار سے بھی 56 فیصد زیادہ ہے۔

یاد رہے کہ وفاقی حکومت نے ہر ماہ اوسطاً 448 ارب روپے قرض لیا جبکہ (ن) لیگ نے اپنے آخری مالی سال میں اوسطاً ہر ماہ 287 ارب روپے قرض لیا تھا۔

مسلم لیگ (ن) کی سابقہ حکومت کی جانب سے غیرمعمولی قرضے لینے کی وجہ سے موجودہ حکومت کو قرضوں اور ان پر عائد سود کی واپسی کے لئے بڑے چیلنج کا سامنا ہے۔

(225 بار دیکھا گیا)

تبصرے