Qaumi Akhbar
Loading site
قومی اخبار
اتوار 20 جنوری 2019
LZ_SITE_TITLE
 
New World of Online News ! Best Urdu Website in World

بلاول، مراد کو تفتیش میں چھوٹ نہیں ، فواد چودھری

ویب ڈیسک منگل 08 جنوری 2019
بلاول، مراد کو تفتیش میں چھوٹ نہیں ، فواد چودھری

اسلام آباد…وفاقی حکومت نے کہا ہے پیپلز پارٹی کے چیئرمین بلاول بھٹو اور وزیر اعلیٰ سندھ مراد علی شاہ کا نام ای سی ایل سے نکال دینگے تاہم دونوں کو تفتیش میں چھوٹ نہیں ملے گی ،

انہیں بوقت ضرورت طلب کیا جاسکے گا۔سپریم کورٹ نے او منی گروپ کیخلاف تحقیقاتی رپورٹ باقاعدہ تحقیقات کیلئے نیب کو بھیج کر جے آئی ٹی کی تحقیقات کو تسلیم کر لیا ،
اومنی گروپ کے اصل مالک و مختار آصف زرداری ہیں، ای سی ایل میں نام عہدوں نہیں کردار کی وجہ سے ڈالے جاتے ہیں ،کاغذی کمپنیاں بنا کر اربوں کی منی لانڈرنگ کی گئی، نیب جعلی اکاؤنٹس کیس میں بلاول بھٹو اور مراد علی شاہ سے تفتیش کر سکے گا،‘‘ٹھگز آف پاکستان’’ میں ابھی وقفہ ہے ، فلم آگے ضروربڑھے گی،جے آئی ٹی کی تمام فائنڈنگ کے تحت کیس نیب کو بھجوایا جائے گا۔

یہ بات وزیر اطلاعات فواد چودھری اور وزیر اعظم کے مشیر برائے احتساب شہزاد اکبر نے پریس کانفرنس کرتے ہوئے کہی۔ فواد چودھری نے کہا فلم ٹھگز آف پاکستان کی مہم آگے بڑھ رہی ہے ، وزیراعظم نے سیاسی مافیا کیخلاف تجاوزات کا جو آپریشن کلین اپ شروع کیا ہے اس کو لے کر آگے بڑھ رہے ہیں، پاکستان کے ساتھ جوظلم کیا گیا وہ ابھر کر سامنے آیا ہے ، جے آئی ٹی نے ایک ایک جعلی گروپ کو نکالا ہے ، جس کی اومنی گروپ کی جانب سے تردید نہیں کی گئی، سپریم کورٹ نے جعلی اکاؤنٹس کیس کو نیب کے حوالے کیا اور دو ماہ میں رپورٹ طلب کی ہے ، فلم ٹھگز آف پاکستان میں مراد علی شاہ کا اہم کردار ہے ، سپریم کورٹ کے حکم پر مراد علی شاہ اور بلاول بھٹو کا نام ای سی ایل سے نکال دیں گے ، ہمارا مراد علی شاہ کے استعفیٰ کا مطالبہ برقرار ہے ،

مزید پڑھئیے‎ : فواد چوہدری کو سندھ میں تبدیلی کے لیے ٹاسک مل گیا

وزیراعلیٰ کا ای سی ایل میں نام باعث شرمندگی ہے۔ فواد چودھری نے کہا اپوزیشن کیخلاف تفتیش 2015ء میں شروع ہوئی،2016 ء میں ایان علی کے معاملے پر چودھری نثار نے آواز اٹھائی،(ن)لیگ اور پیپلز پارٹی نے چارٹر آف کرپشن کیا تھا اس لئے ایک دوسرے کی چوری چھپائی گئی، مولانا فضل الرحمن اپوزیشن کو پھر اکٹھا کرنا چاہ رہے ہیں، پوری قوم کرپٹ عناصر کیخلاف اکٹھی ہے ،اپوزیشن چاہتی ہے کہ ان کی چوری بچانے کیلئے عوام سڑکوں پر نکلیں، عوام ان کے چہرے اور کرتوت جان چکے ہیں، پی ٹی آئی کی حکومت نے اپنے دعوے 90فیصد مکمل کرلئے ہیں،ہم نے تحقیقاتی اداروں کو آزادی دی جس سے احتساب کا عمل تیز ہوا، ہم نے اپوزیشن پر کوئی نیا مقدمہ نہیں بنایا، ان کو بچانا ہے تو کرپشن کو قانونی کر دیں یا ان کو این آر او دے دیں، نیب پر جعلی کیس کے حوالے سے اہم ذمہ داری عائد ہو چکی ہے ، ریفرنسز بنانا نیب کا کام ہے ، ہماری خواہش ہے کہ تمام مقدمات اپنے منطقی انجام تک پہنچیں، لوٹاگیا پیسہ واپس لانے کی پوری کوشش کریں گے۔انہوں نے کہا وعدہ کیا تھا کہ بڑے چور جیلوں میں ہوں گے جس میں 90 فیصد کامیابی مل گئی ہے ، سپریم کورٹ کا ای سی ایل سے نام نکالنے کا حکم سر آنکھوں پر ہے۔

چودھری نثار پہلے بہت ایکٹو تھے لیکن پھر اچانک سے خاموش ہوگئے ، اصل میں کرپشن کی وجہ سے ایک معاہدہ ہوگیا تھا اس لیے نثار خاموش ہوئے۔ فواد چودھری نے کہا یو اے ای کے ولی عہد کا دورہ دو حصوں پر مشتمل تھا، پہلے حصے میں انہوں نے رحیم یار خان کا نجی دورہ کیا، شیخ زید بن النیہان پہلے سربراہ تھے جن کا وزیراعظم عمران خان نے خود استقبال کیا، شیخ زید نے پاکستان کیلئے بے حد کام کئے ہیں۔اس موقع پر شہزاد اکبر نے کہا سپریم کورٹ کے فیصلے پر پیپلز پارٹی کاتڑیاں لگانامسلم لیگ (ن)جیسا ہی ہے ،(ن)لیگ نے بھی پانامہ پر پہلے مٹھائیاں بانٹی تھیں،پیپلز پارٹی نے جے آئی ٹی رپورٹ کو جھوٹ کہا لیکن کوئی ثبوت پیش نہیں کیا، سپریم کورٹ نے حکم دیا ہے کہ جے آئی ٹی نیب کی معاونت کرے گی ،اب نیب ایکٹ کے تحت براہ راست تفتیش شروع ہو گئی ہے۔

(71 بار دیکھا گیا)

تبصرے