Qaumi Akhbar
Loading site
قومی اخبار
بدھ 20 مارچ 2019
LZ_SITE_TITLE
 
New World of Online News

کم بجٹ کی فلموں کا راج

ویب ڈیسک هفته 05 جنوری 2019
کم بجٹ کی فلموں کا راج

گزرنے والا ہر سال جہاں اپنے اچھے، برے یا پھر کھٹے میٹھے تجربات کے نشان چھوڑ جاتا ہے وہیں نیا سال نئی امیدوں‘خواہشات اور نئے جوش کو بھی جنم دیتا ہے تاہم بالی ووڈ کا یہ سال کافی ہلچل مچا کر جا رہا ہے۔اس سال جہاں کئی بڑی بڑی ہیروئنز شادی کے بندھن میں بندھیں وہیں بڑے بڑے اسٹارز کی بڑے بڑے بجٹ والی فلموں کو باکس آفس نے باہر کا راستہ دکھایا‘ جبکہ چھوٹے بجٹ اور ایسے ہیرو اور ہیروئنز کی فلموں نے باکس آفس پر قدم جمائے رکھے جو ابھی سٹارز کے لقب سے نا آشنا تھے۔
رنبیر کپور کی فلم ’’سنجو‘‘، رنویر سنگھ اور دپیکا کی فلم ’’پدماوت‘ ‘کے علاوہ انڈسٹری کے تینوں خان رواں برس کوئی کامیاب فلم نہیں دے پائے۔شاہ رخ خان کے بیٹے آرین خان ہیرو نہیں بننا چاہتے۔کیاکترینہ کے دل میں بھی شادی کی امنگیں جاگی ہیں؟بالی ووڈ میں شادیوں کا موسم اور شاہ رخ خان تارے توڑ لائے۔سلمان خان کی ’ریس تھری‘، عامر خان کی ’ٹھگز آف ہندوستان اور اب شاہ رخ خان کی فلم ’’زیرو‘‘ باکس آفس پر بالکل زیرو ثابت ہوئی یہ اور بات ہے کہ ان میں سے زیادہ تر فلموں نے 100 کروڑ سے زیادہ کا بزنس کیا کیونکہ ان تینوں کا نام ہی عوام کو تھیئٹر تک لانے کے لیے کافی ہوتا ہے۔
اس کے برعکس ایو شمان کھرانہ کی فلم ’’بدھائی ہو‘‘، راجکمار راؤ اور شردھا کپور کی فلم ’’ستری‘‘ اور اکشے کمار کی فلم ’’پیڈمین نے‘‘ عوام کا دل جیت لیا۔دوسری جانب ’’می ٹو‘ ‘کی مہم نے بالی و وڈ کو ہلا کر رکھ دیا اور اس میں کئی بڑے بڑے نام بھی بے نقاب ہوئے۔
جن افراد کے نام ’’می ٹو‘‘ مہم میں سامنے آئے ان میں ٹی وی اور فلموں میں انتہائی پر وقار اور سب سے شریف کردار نبھانے والے آلوک ناتھ کے ساتھ ساتھ فرح خان کے بھائی اور نامور فلمساز ساجد خان‘ سبھاش گھئی‘ گلوکار انو ملک جیسے بڑے نام بدنام ہوئے۔
ان افراد کے خلاف کچھ خواتین نے جنسی طور پر حراساں کیے جانے کے سنگین الزامات عائد لگائے اور انڈسٹری نے ان الزامات کی روشنی میں ان شخصیات کے ساتھ کام کرنے سے انکار کیا۔

(137 بار دیکھا گیا)

تبصرے