Qaumi Akhbar
Loading site
قومی اخبار
منگل 22 اکتوبر 2019
LZ_SITE_TITLE
 
New World of Online News

جیل میں قیدیوں سے تحقیقات کا فیصلہ

قومی نیوز جمعه 28 دسمبر 2018
جیل میں قیدیوں سے تحقیقات کا فیصلہ

کراچی….ایم کیوایم پاکستان کے سابق رکن قومی اسمبلی علی رضا عابدی کے قاتلوں تک پہنچنے کے لیے جیل میں قیدیوں سے تحقیقات کا فیصلہ کیا گیا ہے جبکہ قتل کی تفتیش کے لیے تحقیقاتی ٹیم تشکیل دے دی گئی ہے۔ذرائع کے مطابق علی رضا عابدی کے قتل کے کیس سے متعلق تفتیشی حکام نے فیصلہ کیا ہے کہ قاتلوں تک پہنچنے کے لیے جیل میں قیدیوں سے تحقیقات کی جائیں گی جب کہ ٹارگٹ کلنگ کیسزمیں گرفتار اوررہا ہونے والے ملزمان سے بھی پوچھ گچھ کی جارہی ہے۔ تفتیشی حکام کے مطابق جائے وقوعہ کی جیو فینسنگ کروائی جارہی ہے، اطراف کے 6 مقامات کی سی سی ٹی وی فوٹیج بھی حاصل کرلی گئی ہے۔دوسری جانب علی رضا عابدی قتل کی مزید تحقیقات کے لیے ڈی آئی جی سائوتھ جاوید عالم اوڈھو نے خصوصی ٹیم تشکیل دے دی ہے، ٹیم کوملزمان کی گرفتاری کا ٹاسک دیتے ہوئے روزانہ رپورٹ دینے کی ہدایت بھی کی گئی ہے۔ ایس ایس پی سائوتھ پیر محمد شاہ کو ٹیم کی سربراہی سونپی گئی ہے۔ٹیم کے دیگر ارکان میں ایس ایس پی انویسٹی گیشن طارق دھاریجو‘ ایس پی کلفٹن سوہائی عزیز‘ ایس ڈی پی او مختیار احمد خاصخیلی‘ ڈی ایس پی انویسٹی گیشن راجہ اظہر محمود، ایس ایچ او گزری اسد اللہ منگی اور ایس آئی او گذری چوہدری امانت شامل ہیں۔ تفتیشی حکام کے مطابق علی رضا عابدی کے قتل کی تحقیقات پولیس، سی ٹی ڈی اور رینجرز اہلکار کر رہے ہی جب کہ مقتول کے سیکورٹی گارڈ سمیت 4 افراد سے پوچھ گچھ کی جا رہی ہے۔ قتل کی تحقیقات کے لیے جیل میں قید کالعدم تنظیموں اور سیاسی جماعتوں کے قیدیوں سے بھی پوچھ گچھ کی جائے گی۔حکام کے مطابق فائر کیے گئے نائن ایم ایم اور 30 بور پستول کے خول کی فرانزک کرائی جا چکی ہے جب کہ جائے وقوع کی جیو فینسنگ بھی کرائی جا رہی ہے۔علی رضا عابدی کے موبائل فون کا ڈیٹا اور جائے حادثہ کے قریب لگے مختلف سی سی ٹی وی سے بھی مدد لی جا رہی ہے جب کہ مختلف ٹارگٹ کلنگ کے واقعات میں گرفتار اور رہا ہونے والے ملزمان سے بھی پوچھ گچھ کی جا رہی ہے۔

(244 بار دیکھا گیا)

تبصرے