Qaumi Akhbar
Loading site
قومی اخبار
پیر 19  اگست 2019
LZ_SITE_TITLE
 
New World of Online News

متاثرین کو ایک ہفتہ کے اندر متبادل دکان دینگے،وسیم اختر

ویب ڈیسک جمعه 21 دسمبر 2018
متاثرین کو ایک ہفتہ کے اندر متبادل دکان دینگے،وسیم اختر

کراچی…. میئر کراچی وسیم اختر نے کہاہے کہ متاثرہ دکانداروں کو ایک ہفتہ کے اندر متبادل دکان دینے کا کام شروع ہو جائے گا، ہر مارکیٹ کے دو دو نمائندوں کی موجودگی میں کمشنر ہاؤس میں قرعہ اندازی ہوگی شفاف طریقے سے دکانداروں کو کاروبار کا موقع مہیا کیا جائے گا، تجاوزات کو فروغ دینے والے افسران کی بھی نشاندہی کی جائے گی، سیاسی طور پر سب سے زیادہ میری پارٹی اور مالی طور پر کے ایم سی کو نقصان ہوا، ایمپریس مارکیٹ میں دکاندار متاثر ہوئے مگر اس مارکیٹ میں بہت سارے غیر قانونی کام بھی ہورہے تھے، شہر کو درست کرنا ہے تو کچھ نقصان بھی برداشت کرنا پڑے گا۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے جمعرات کو کراچی چیمبر آف کامرس اینڈ انڈسٹری میں انسداد تجاوزات کارروائی سے متاثرہ تاجروں سے خطاب کرتے ہوئے کیا،اس موقع پر میٹروپولیٹن کمشنر ڈاکٹر سید سیف الرحمن اورکے ایم سی کے دیگر افسران کے علاوہ کراچی چیمبر آف کامرس اینڈ انڈسٹری کے عہدیداران اور ممبران بھی موجود تھے، میئر کراچی نے کہا کہ اس مسئلے کو میں ذاتی طور پر پہلے دن سے دیکھ رہا ہوں ایک ایک دکاندار جو رجسٹرڈ ہے اس کے مسئلے کو جانتا ہوں مگر چیمبر آف کامرس اینڈ انڈسٹری نے اس مسئلے پر دیر کردی، چیمبر آج جو مطالبہ کر رہا ہے یہ کام مکمل ہوچکا، متاثرہ دکانداروں کو متبادل دکانیں دینے کے لئے قرعہ اندازی آئندہ ہفتے کمشنر کراچی کے دفتر میں منعقد ہوگی،اس سلسلے میں تاجروں کی تنظیموں کے نمائندوں کے ساتھ رابطے میں ہیں جو ہمارے کرایہ دار تھے ان کو متبادل دیں گے یہ انسانی مسئلہ ہے ہم ان لوگوں کو بے سہارا نہیں چھوڑیں گے،اس کام کو سپریم کورٹ نے 15 دن میں مکمل کرنے کی ہدایت کی تھی مگر میں نے ایک ماہ کا وقت لیا تاکہ لوگوں کو کچھ وقت ملے، انہوں نے کہا کہ یہ ایک دن کی خرابی نہیں اور نہ ہی یہ میں نے کیا بلکہ 50 سال پرانا مسئلہ ہے ، پارکوں پر جو دکانیں تعمیر ہوئیں، کورٹ نے کہا کہ یہ غلط ہے، ان جگہوں پر کے ایم سی کاروبار نہیں کرسکتی، اس لئے ان تجاوزات کو ہٹایا گیا، انہوں نے کہا کہ جن لوگوں نے سرکاری زمین کا غلط استعمال کیا ہے ان کو کچھ نہیں ملے گا، کے ایم سی نے 4×4 کی دکان دی تھی وہاں گودام، برف خانے، ہوٹل سمیت غیر قانونی اور غلط کام ہو رہے تھے جو کسی بھی لحاظ سے درست نہیں ، انہوں نے کہا کہ انسداد تجاوزات کی ہفتہ وار رپورٹ کورٹ میں جمع کرارہے ہیں۔ کراچی چیمبر آف کامرس اینڈ انڈسٹری مالی امداد دے یا ملبہ اٹھانے میں مدد کرے تاکہ شہر کو صاف کیا جائے۔ انہوں نے کہا کہ شہر میں گیس کی کمی کراچی کے ساتھ دشمنی ہے کراچی کو ضرورت کے مطابق پانی اور گیس ملنی چاہئے، کراچی میں تجارتی سرگرمیاں بڑھیں گی تو اس سے ملک میں ترقی ہوگی۔اس موقع پر کراچی چیمبر آف کامرس اینڈ انڈسٹری کے صدر جنید اسماعیل نے خطبہ استقبالیہ پیش کیا جبکہ تاجر رہنماء سراج قاسم تیلی، زبیر موتی والا، سابق صدر اے کیو خلیل نے بھی خطاب کیا اور تاجروں کے مسائل پر بات کی۔

(192 بار دیکھا گیا)

تبصرے