Qaumi Akhbar
Loading site
قومی اخبار
منگل 12 نومبر 2019
LZ_SITE_TITLE
 
New World of Online News

نوکریا ں دینے پر با بر غوری کیخلاف ریفر نس افسوسناک ہے،شمیم صدیقی

صابر علی منگل 18 دسمبر 2018
نوکریا ں دینے پر با بر غوری کیخلاف ریفر نس افسوسناک ہے،شمیم صدیقی

کراچی۔۔۔ سابق وفاقی وزیر برائے مواصلات شمیم صد یقی نے کہا ہے کہ سابق وفاقی وزیر پورٹ اینڈ شپنگ بابر غوری کے خلاف کے پی ٹی میں کراچی کے لوگوں کو نوکریاں دینے پران کے خلاف نیب میں ریفرنس بنانا اور ان پر خلاف کرپشن کے جھوٹے الزامات عائد کرنا افسوسناک عمل ہے‘ امریکہ سے اپنے ایک بیان میں شمیم صدیقی نے کہا کہ نوکریاں دینا کرپشن نہیں ہے نہ ہی یہ عمل مالی کرپشن کے زمرے میں آتا ہے۔ انہوں نے کہا کہ سابقہ حکومتوں کے دور میں ڈیڑھ لاکھ سے زائد نوکریاں دی گئیں۔ سابق وفاقی وزیر داخلہ رحمن ملک نے اپنے دورمیں ایف آئی اے اور نادرا میں 20 ہزار سے زائد نوکریاں دیں۔ سابق وزیراعظم یوسف رضا گیلانی کے دور میں ڈیڑھ لاکھ کنٹریکٹ اور ڈیلی ویجز ملازمین کو مستقل کیاگیا۔ بابر غوری نے بھی اس وقت وزیراعظم کے اعلان پر لوگوں کو نوکریاں دیں‘ اگر ان میں قواعد و ضوابط میں کچھ کمی رہ گئی تھی تو اس کو پورا کرکے لوگوں کی نوکریوں کو مستقل کرنا چاہئے تھا نہ کہ نیب میں ریفرنس بنانا چاہئے تھا‘ موجودہ وزیراعظم عمران خان نے بھی ایک کروڑ نوکریاں دینے کا وعدہ کیا ہے۔شیخ رشید نے 10ہزار نوکریاں دینے کا اعلان کیا ہے‘ یہ نوکریاں کیسے درست ہوں گی۔ انہوں نے کہا کہ بابر غوری جب 2015ء میں ملک سے باہر گئے تھے تو ان کے خلاف کوئی نیب کیس یا کوئی مقدمہ نہیں تھا‘ ان کی غیر موجودگی میں ان کے خلاف نیب میں ریفرنس بنائے گئے۔ شمیم صدیقی نے کہا کہ اس وقت بابر غوری کے خلاف 19 ہزار کنٹینرز چوری کرنے کا الزام بھی عائد ہوا جو سابق چیف جسٹس افتخار چوہدری کی عدالت میں غلط ثابت ہوکر ختم ہوا۔ شمیم صدیقی نے کہا کہ میں بابر غوری کے خلاف نیب کیسز اور مختلف الزمات لگائے جانے کے بعد اپنے ضمیر کے مطابق از خود یہ بیان دے رہا ہوں مجھے ان کے خلاف ان الزامات عائد کرنے پر افسوس ہوتا ہے۔ انہوں نے کہا کہ بابر غوری کراچی سے تعلق رکھنے والے واحد وزیر تھے جنہوں نے کراچی کی ترقی کے لئے وفاقی حکومت کے فنڈ سے متعدد ترقیاتی منصوبے شہریوں کو دیئے جن میں کلفٹن انڈر پاس‘ ہینو چوک برج‘ مائی کولاچی ایم ٹی خان روڈ‘ پورٹ گرینڈ فوڈ اسٹریٹ‘ ناظم آباد جیم خانہ کلب‘ امریکی سفارت خانے کے قیام کے لئے جگہ دینا جس کی وجہ سے کراچی کے لوگ اب امریکہ کا ویزا لگوانے کے لئے اسلام آباد نہیں جاتے۔ بابر غوری کا ایک بڑا کارنامہ سی پیک کے لئے سنگاپور سے لے کر چائنا پورٹ کے حوالے کرنے میں اہم کردار ادا کرنا جس کا اعتراف سابق صدر آصف زرداری نے اس وقت حامدمیر کے ٹی وی شو میں بھی کیا تھا‘ اس کے علاوہ اور بہت سارے کام کئے بابر غوری نے۔ لیکن افسوسناک بات یہ ہے کہ بابر غوری جو سیاست چھوڑ چکے ہیں اور اپنی فیملی کے ہمراہ بیرون ملک رہائش پذیر ہیں‘ ان کی غیرموجودگی میں ان پر جھوٹے من گھڑت الزامات عائد کرنا مناسب نہیں ہے۔ پی ٹی آئی کے ایم پی اے خرم شیر زمان کی جانب سے بابر غوری سے متعلق الزام پر شمیم صدیقی نے کہا کہ بابر غوری کے 3 شادی ہال تھے جو شرجیل میمن نے اپنے دورمیں توڑ دیئے تھے جو انہوں نے دوبارہ نہیں بنائے جبکہ بابر غوری کے شادی ہال قانونی تھے اور کسی سرکاری زمین پر قبضہ کرکے نہیں بنائے گئے تھے۔ شمیم صدیقی نے کہا کہ بابر غوری 1993ء میں جب ایم کیو ایم میں شامل ہوئے تھے‘ اس وقت وہ نارتھ ناظم آباد میں ایک ہزار گز کے بنگلے میں رہتے تھے اور اس وقت ان کے اپنے 6 شادی ہال اور اپنا کاروبار تھا۔

(309 بار دیکھا گیا)

تبصرے