Qaumi Akhbar
Loading site
قومی اخبار
بدھ 20 مارچ 2019
LZ_SITE_TITLE
 
New World of Online News

کوئی ڈ کٹیشن نہ دے،چینی صدر

ویب ڈیسک منگل 18 دسمبر 2018
کوئی ڈ کٹیشن نہ دے،چینی صدر

بیجنگ۔۔۔ چین کے صدر شی چن پنگ ایک ایسی شخصیت ہیں جو اس وقت دنیا کی دوسری بڑی معیشت کے سربراہ ہیں۔چین پر کمیونسٹ پارٹی کی حکمرانی کے 40 سال پورے ہونے پر ان کی تقریر کو امریکہ برطانیہ سمیت دنیا کے ہر اخبار،ہر ویب سائٹ اور ہر نیوز چینل پر شہ سرخیوں میں جگہ دی جارہی ہے۔منگل 18 دسمبر کو کی جانے والی اپنی اس تقریر میں نہ صرف صدر شی جن پنگ نے چین کی کامیابیوں کو سراہا بلکہ چین میں معاشی اصلاحات کے 40 برس پورے ہونے پر اپنی تقریر میں صدر شی جن پنگ نے کہا ہے کہ ان کا ملک دنیاکی دوسری قوم کے بل بوتے پر ترقی نہیں کرنا چاہتا۔تاہم ان کا یہ بھی کہنا تھا کسی کو یہ نہیں بتانا چاہیے کہ چین کیا کرے۔ان کے انہی الفاظ پر کہ چین کسی کا ڈکٹیشن نہیں لے گا،امریکہ کو سخت مرچیں لگی ہوئی ہیں اور مغربی میڈیا میں چین کے صدر کے اس جملے کو خوب اچھالا جارہا ہے۔تاہم چین کے صدر نے یہ بھی کہا کہ ترقی کے باوجود ان کا ملک عالمی بالادستی کا متلاشی نہیں۔اپنی تقریر میں بے مثال کامیابیوںپر انہوں نے چین کی قوم کو مبارکباد دی۔ان کا کہنا تھا کہ کسی کو یہ حق نہیں ترقی کی اس رفتار کو چھونے والی چین کی عوام کو یہ بتائے کہ انہیں کیا کرنا ہے، کیا نہیں کرنا۔مغربی میڈیا کے مطابق ماؤ زے تنگ کے بعد شی جن پنگ کو چین کا سب سے زیادہ پراثر لیڈر کے طور پر دیکھا جاتا ہے۔سنہ 2017 میں ان کے اقتدار کو ایک بار پھر تقویت ملی تھی اور انھوں نے ملک کے قانون میں تبدیلیاں بھی کی تھیں۔ان کی عہدہ صدارت کی میعاد تاحیات کردی گئی تھی۔

(343 بار دیکھا گیا)

تبصرے