Qaumi Akhbar
Loading site
قومی اخبار
پیر 21 جنوری 2019
LZ_SITE_TITLE
 
New World of Online News | Best Urdu Website in World

عاشق… قاتل بن گیا

ارشد انصاری جمعه 14 دسمبر 2018
عاشق… قاتل بن گیا

بچے کسی کے بھی ہو ں سب کو ہی پیا رے لگتے ہیں اور ما ں با پ کو اپنی اولاد سب سے ز یا دہ ہی پیاری ہو تی ہے خصوصاً بچیا ں ما ں کی لا ڈ لیا ں ہو تی ہیں تو وا لد کی آ نکھ اور اپنے خا ند ان کی عز ت کا ثبو ت ہو ا کر تی ہیں بچیو ں کے گھر و ں سے غا ئب ہو جا نے اور تو اور لا پتہ ہو جا نے کے بعد اسکی تشد د ز دہ اور جسم کے کسی حصے کو کا ٹے جانے کے بعد اس بچی کی نعش بر آ مد ہو نے پر سو چئے کہ اس خا ند ان کے لو گو ں علا قہ مکینو ں اور با لخصوص ما ں با پ کی حا لت کیا ہو سکتی ہے یہ تو لفظو ں میں بیان ہی نہیںکیا جا سکتا ہے بلکہ ماں با پ کی کیفیت تو دیکھنے جیسی ہو تی ہے 5 دسمبر کو ایسا ہی ایک د ل ہلا دینے وا لاوا قعہ حیدر آباد کے علاقہ گلشن رئیس کے ایک پلا ٹ سے ایک نا معلوم لڑ کی گلہ کٹی اور تشد د ز دہ بو ری بند نعش برآمد ہو نے پر رونما ہو ‘ جس کے با عث علا قے میں خو ف و حر اس پھیل گیا اور ٹنڈ و یو سف تھا نے کی پو لیس کوا طلا ع دی گئی ٹنڈو یو سف تھانے کی پولیس نے نعش بر آ مد کر کے سول اسپتال حیدر آباد پہنچا ئی گئی سول اسپتال حیدرآ باد کے مر دہ خانے میں نامعلو م لڑکی کی نعش کو شناخت کر نے کے حوالے سے رکھا گیاتھا ۔ وا قعہ کی اطلاع ملنے پر جا ئے مقا م گلشن رئیس کے خا لی پلاٹ پر ایس ایس پی حید رآباد سر فراز نو ا ز شیخ نے پولیس کی ماہر ٹیم کے ہمر اہ پہنچ کر دو رہ کیا اور ٹنڈو یو سف تھانے کی پولیس کو نا معلو لڑکی کی ملنے والی نعش کے حوالے سے تمام تر حقائق کو سامنے لانے کی ہد ا یت کی حیدرآباد پولیس نے ضلع بھرکے تھا نو ں پر ا طلا عا ت یا رپورٹ گمشد گی بلخصو ص خو اتین کے حو الے سے درج کی جانے والی ر پو رٹو ںکو اکٹھا کر کے ضلعی انتظامیہ پو لیس کو پیش کر نے کی حکمت عملی پر ز ور د یا گیا اور یو ں ا سلام آ باد کے علا قے اسلام آ باد کی گلی نمبر 7 کے ر ہا ئشی مبین شاہ کی جا نب سے اپنی بیٹی کے لا پتہ ہوجانے کی رپورٹ پر غور و خو ص کر دیا گیا اور یوںمبین شاہ نامی شخص کو سول ا سپتال حیدر آباد پو لیس کی جا نب سے بلوا یا گیا‘ جہا ں مبین شاہ نے نعش کو اپنی جو اں سولہ بیٹی صبا شاہ کی نعش کے طور پر شناخت کیا‘پو لیس سے ملنے والی ا طلا عا ت کے مطابق شناخت کی جا نے والی صباشاہ کی نعش کو قا نونی تقاضو ں کے بعد اسکے ور ثاء کے حو الے کیے جانے کا بتایا گیا‘ پولیس نے ٹنڈو یوسف تھا نے کی پولیس افسران کے ہمر اہ متو فیہ صبا ء شاہ کے والد مبین شاہ سے مزید پو چھ گچھ کو جا ری رکھا جس پر مبین شاہ کے مطابق اس کی بیٹی کا ارشد نامی شخص سے تعلق بتایا گیا متو فیہ کے والد مبین شاہ نے یہ بھی بتایاکہ 2د سمبر کو اسکی بیٹی شام سے گھر سے بغیر بتائے گھر سے نکلی تھی رات دیر ہو نے پر اس کا کچھ علم یا معلو ما ت نہیں ہو سکی‘ جس پر پو لیس کو اپنی بیٹی کی گمشد گی و لا پتہ ہو نے کی اطلا ع دی تھی‘ پو لیس نے نعش برآمد ہونے پر مجھے سول اسپتال ایک نعش جو کے لڑکی کی بتائی گئی تھی اسے شنا خت کرنے کے لیے بلو ا یا گیا تھا میں نعش کی شنا خت کی وہ میری ہی بیٹی کی تھی متو فیہ کے والد کی آنکھ ا شکبا ر ہو گئی تھی اور وہ نعش سے لپٹ کر بین کرتے دکھا ئی دیا‘ پو لیس نے حوصلہ کر نے کا کہا اس کے بعد مبین شاہ کے دیگر ر شتے دار بھی و رثا ء کے ہمراہ ا سپتال پہنچے اور ا سپتال میں متو فیہ کے ور ثاء کی ہر آنکھ ا شکبا ر دکھائی دی اور ور ثاء د ہا ڑے ما ر ما ر کر روتے دکھا ئی دیئے‘ایس ایس پی حید ر آ باد کی ہد ا یت پر ٹنڈو یو سف تھا نے کی پولیس نے متو فیہ کے والد مبین شاہ اور دیگر ور ثاء اور ر شتے دا رو ں کے اہل خانہ سمیت علا قہ مکینوں کے بیا نا ت بھی قلمبند کر تے ہوئے ارشد نامی نوجو ان کو حر است میں لے لیا گیا‘6 د سمبر کو پوسٹ مار ٹم کر انے کے بعد متو فیہ کی نعش کو ٹنڈ و یو سف قبر ستان مین سپر د خا ک کر دیا گیا جبکہ متو فیہ کی تد فین کے فوری بعد اسلام آ باد چوک اور اس سے متصل شاہر اہ پر ور ثاء اور ر شتے دا رو ں علا قہ مکینو ں سمیت مختلف سما جی و سیا سی رہنما ئو ں کے ہمر اہ بڑی تعد اد میں عما ئد ین شہر کی جا نب سے ا حتجا جی مظا ہر ہ کر تے رہے ‘صبا شاہ کی پوسٹ مارٹم رپورٹ میں یہ معلوم ہوگیا تھا کہ سفاک قاتل نے زیادتی کے بعد ذبح کرکے قتل کیاہے ‘ پولیس کی جا نب سے صبا ء شاہ کے قتل کی ایف آئی آ ر درج کر کے مز ید تفتیش اور تحقیقات کے دورن مقتولہ کے والد کی جانب سے قتل کا شک ٹنڈو یوسف کے قریبی علاقے اسلام آباد کے رہائشی نوجوان ظاہر کئے جانے کے بعد پولیس نے اسد شیخ نامی نوجوان کو گرفتار کرلیا‘ اس حوالے سے ایس ایس پی حیدرآباد سرفراز نواز شیخ کا کہنا ہے کہ مقتولہ صبا شاہ کے قتل کا ملزم نے اعتراف کرتے ہوئے بتایا کہ مقتولہ مجھے بلیک میل کرتی رہی ‘ جس کے باعث اسے زیادتی کے بعد قتل کردیا‘ جبکہ پولیس نے صبا شاہ کے قتل میں استعمال ہونے والا تیز دہار آلہ چاقو بھی برآمد کرلیاہے‘ جبکہ ملزم کے2 سہولت کار ساتھی بھی پہلے ہی سے حراست میں ہیں‘ ملزم نے مقتولہ کا پڑوسی تھا‘ اس نے بتایاکہ فون پر دوستی ہوئی تھی‘ مقتولہ جب گھر میں اکیلے ہوتی تھی تو اس کو ملاقات کے لیے بلالیتی تھی‘ جس کے بعد ان میں نزدیکیاں ہوئی ملزم اور مقتول نے جب ایک دوسرے کو بلیک میل کرنا شروع کیاتو اس کا انجام صبا کی موت پر ختم ہوا۔ مقتولہ کے ورثاء کے مطابق صباء کے قتل میں ملوث ملزم کو پولیس نشانہ عبرت بنائے ‘ تاکہ اور کو ئی بھی نو جو ان ہو یا کسی بھی عمر کا شخص کسی بھی قبیلے یا علا قے یا کسی بھی زبان مذ ہب یا پھر کوئی با اثر ہی کیو ں نہ ہو اگر وہ قتل کر نے وا لو ں کی سر پر ستی یا ان کا سہو لت کا ر ہو اسے بھی سامنے لا یا جائے اور انتظامیہ کے اس عمل سے حقائق سامنے لانے سے کوئی بھی کسی کی بیٹی بہن یا پھر کو ئی خو اتین کو تشد د کر کے اسے قتل کرنے کا بھی ایک لا کھ سے زا ئد مر تبہ سوچنے پر مجبو ر ہو سکے۔

(100 بار دیکھا گیا)

تبصرے