Qaumi Akhbar
Loading site
قومی اخبار
پیر 18 نومبر 2019
LZ_SITE_TITLE
 
New World of Online News

ایم کیو ایم کو قبضہ گیر ٹولے سے جلد آزاد کرا لوں گا ‘ فاروق ستار

صابر علی جمعه 14 دسمبر 2018
ایم کیو ایم کو قبضہ گیر ٹولے سے جلد آزاد کرا لوں گا ‘ فاروق ستار

کراچی…. ایم کیو ایم (پاکستان) کے سابق کنوینر ڈاکٹر فاروق ستار نے کہا ہے کہ پارٹی کی کنوینر شپ ان سے چھینی گئی ہے‘ وہ آئندہ چند روز میں عدالت سے رجوع کررہے ہیںاور عدالت سے انصاف مانگیں گے ‘ یہ بات انہوںنے  ہوٹل موون پک میں قطر کے قومی دن کے موقع پر قومی اخبار سے خصوصی بات چیت کرتے ہوئے کہی ‘تقریب میں قطر کے قونصل جنرل سمیت مختلف ممالک کے سفارتی نمائندوں وزیر اعلیٰ سندھ مرا د علی شاہ اسپیکر سندھ اسمبلی آغا سراج درانی ‘ سابق صدر مملکت ممنون حسین‘ سابق صوبائی وزیر نثار کھوڑو اور بزنس کمیونٹی سمیت زندگی کے مختلف شعبوں سے تعلق رکھنے والی معروف شخصیات نے شرکت کی‘ فاروق ستار نے کہا کہ وہ ایم کیوایم کے مخلص اور جفاکش کارکنوں کی مدد سے پر امن جدوجہد کے ذریعے ایم کیوایم کو قبضہ گیر ٹولہ سے واگزار کرالیں گے‘ فاروق ستار نے کہا کہ بانی ایم کیوایم نے شدید اختلافات کے باوجود بھی عظیم احمد طارق اور ڈاکٹر عمران فاروق شہید کو یا کسی اور کو کبھی پارٹی سے نہیں نکالا‘ قبضہ گروپ نے ایم کیوایم کا یہ حال کردیا کہ 10 انڈیا ایسٹ کمپنیاں بنیں گی۔ایم کیوایم کے اس حال کے نتیجے میں آہستہ آہستہ بتدریج کراچی کوپٹے پر یا قسطوں پر دینے جیسا کردیا جائے گا‘ فاروق ستار نے کہا کہ قبضہ گیر ٹولہ اتنا خدا بن گیاہے کہ انہوںنے مجھ جیسے سینئر کارکن اور ایم کیوایم کے برانڈ کے ساتھ یہ سلوک کیاکہ مجھے پارٹی سے یہ نکال دیا۔ جب یہ قبضہ گروپ مجھ جیسے سینئر کے ساتھ یہ سب کچھ کرسکتا ہے تو عام کارکنوں کے ساتھ یہ سلوک کرے گا ایک سوال کے جواب میں فاروق ستار ن ے کہا کہ قبضہ گروپ ٹولہ جلد خود اپنے منطقی انجام کوپہنچے گا‘چیف جسٹس جنا ب میاں ثاقب نثار کی جانب سے میئرکراچی وسیم اختر کی تعریف کرنے سے متعلق سوال پر فاروق ستار نے کہا کہ دراصل چیف جسٹس کا اگلا جملہ یہ ہوتا کہ میئر صاحب آپ نے سار ا ملبہ اپنے اوپر لے لیا۔فاروق ستار نے کہا کہ تجاوزات کے خلاف مہم پر اب وفاقی اور سندھ حکومت خود عدالت سے رجوع کرکے اس آپریشن پر نظرثانی کی بات کررہی ہے‘ جبکہ وسیم اختر بضد ہیں کہ وہ مزید توڑ پھوڑ کی مہم جاری رکھیں گے۔

(418 بار دیکھا گیا)

تبصرے