Qaumi Akhbar
Loading site
قومی اخبار
بدھ 27 مارچ 2019
LZ_SITE_TITLE
 
New World of Online News

پاک بھارت دوستی کا اچھا بڑھایا گیا ہے قدم,عاطف اسلم

عاصم رحمانی اتوار 09 دسمبر 2018
پاک بھارت دوستی کا اچھا بڑھایا گیا ہے قدم,عاطف اسلم

پاکستان اور بھارت کے نامور گلوکارعاطف اسلم نے کا کہنا ہے کہ ابتدا میں انہیں اپنی آواز سے ڈر لگتا تھا۔ اپنی سریلی آواز سے کروڑوں دلوں پر حکمرانی کرنے والے نامور گلوکار عاطف اسلم حقیقی زندگی میں بہت شرمیلے ہیں اور انٹریوز وغیرہ دینے میں بہت کنجوسی سے کام لیتے ہیں تاہم حال ہی میں انہوں نے اداکارہ ثمینہ پیرزادہ کے شو ’اسپیک یور ہارٹ‘میں اپنا دل کھول کر رکھ دیا۔

عاطف اسلم نے اپنی گلوکاری کے حوالے سے بتایا کہ بچپن میں انہیں میوزک کا کوئی شوق نہیں تھا وہ کرکٹر بننا چاہتے تھے اور اتنی اچھی کرکٹ کھیلتے تھے کہ انڈر نائٹین کرکٹ ٹیم میں سلیکٹ بھی ہوگئے تھے تاہم ان کے والد نے انہیں کھیلنے نہیں دیا اور کہا پہلے تعلیم مکمل کرو اور جب کرکٹ کا جنون اترا تو میوزک پر توجہ دینی شروع کی۔

عاطف اسلم نے کہا کہ جب ان کے والد کا تبادلہ لاہور سے پنڈی ہوا تو وہ اپنے دوستوں کے ساتھ ایک خالی گھر میں گانا گاتے تھے کیونکہ وہ گھر خالی تھا اوروہاں آواز گونجتی تھی تو جب میں نے خود کو گاتے ہوئے سنا تو اس وقت مجھے اپنی آواز سے ڈر لگنا شروع ہوگیا۔

دلچسپ بات ہے اسی وقت مجھ کو احساس ہوا کہ خدا نے مجھے بہت اچھی آواز دی ہیاور یہیں سے میوزک میں دلچسپی پیدا ہوناشروع ہوئی۔عاطف اسلم نے گلوکار گوہر ممتاز کے ساتھ ’جل بینڈ‘کے ساتھ اپنے کیریئر کا آغاز کیا تھا اور ان کی البم کے گانے’عادت‘ نے انہیں راتوں رات شہرت کی بلندیوں پر پہنچادیا تھا تاہم بدقسمتی سے یہ بینڈ ٹوٹ گیا۔

عاطف اسلم نے بینڈ ٹوٹنے کی وجہ بتاتے ہوئے کہا کہ ابتدا میں سب لوگ کہتے تھے کہ بینڈ میری وجہ سے ٹوٹا ہے میڈیا نے میرے بارے میں بہت غلط باتیں لکھیں جس کا مجھے بہت دکھ ہوا اور آج بھی ہے لیکن بینڈ میری وجہ سے نہیں بلکہ پیسوں کے معاملے پر ٹوٹاتھا۔

عاطف اسلم نے اپنے دل کا حال شیئر کرتے ہوئے بتایاکہ جب پیسوں کے معاملے پر بات بگڑی تو ہم دونوں نے ایک دوسرے سے بات کرنی بند کردی لیکن ایک کنسرٹ کی وجہ سے میں نے خود گوہر کو فون کیا اور کہا اس طرح ناراض ہونے سے بات نہیں بنے گی

چلو ایک بار پھر ساتھ کام کرتے ہیں‘ کنسرٹس کی ریہرسل کے بعد ایک دن اچانک گوہر نے مجھ سے پیسوں کا مطالبہ کیا اور پیسے نہ دینے کی صورت میں کہا کہ وہ شو نہیں کریں گے اوریہاں مجھے لگا کہ وہ مجھے پیسوں کے لیے بلیک میل کررہا ہے اور پھر ہم نے ہمیشہ کے لیے اپنی راہیں جدا کرلیں۔

عاطف اسلم نے بتایاکہ اب اس بات کو کافی سال گزر چکے ہیں لیکن آج بھی یہ سب سوچ کر دل بہت دکھتا ہے لیکن اب میرے اور گوہر کے درمیان اتنی ناراضگی نہیں ہے بلکہ اس نے مجھے کہا ہے کہ اس نے جو کیا اسے اس پر پچھتاوا ہے۔ دوران انٹرویو عاطف اسلم نے بتایا کہ وہ چار بھائی ہیں اور ان کی کوئی بہن نہیں لہٰذا انہیں بہن کی کمی ہمیشہ سے محسوس ہوتی ہے۔

(126 بار دیکھا گیا)

تبصرے