Qaumi Akhbar
Loading site
قومی اخبار
منگل 22 اکتوبر 2019
LZ_SITE_TITLE
 
New World of Online News

طارق روڈ کلفٹن سول لائینزمیں بھی تجاوزات کیخلاف ایکشن

قومی نیوز جمعه 07 دسمبر 2018
طارق روڈ کلفٹن سول لائینزمیں بھی تجاوزات کیخلاف ایکشن

کراچی۔۔۔۔ شہر بھر میں جاری انسداد تجاوزات کارروائی کے32 ویں دن جمعرات کو ضلع جنوبی میں برتن گلی‘ ڈینسو ہال ‘ سول لائنز ‘ کلفٹن‘ ضلع وسطی میں رضویہ سوسائٹی ناظم آباد‘ضلع شرقی میں طارق روڈ‘ لبرٹی مارکیٹ اور ضلع کورنگی میں کورنگی نمبر 2 سات ہزار روڈ مٹکے والی پلیا کے مقامات پر تجاوزات کے خلاف بھر پور کارروائی جاری رکھی گئی ‘ اس دوران فٹ پاتھوں پر آگے تک بڑھائے گئے دکانوں کے اگلے حصوں اور مختلف اقسام کے تجاوزات کوہٹا دیاگیا‘ کارروائی میں بلدیہ عظمیٰ کراچی کے محکمہ انسداد تجاوزات کی ٹیم نے بھاری مشینوں کے ہمراہ تجاوزات صاف کیں’ مذکورہ مقامات پر انسداد تجاوزات کارروائی سے کچھ دن قبل دکانداروں کو آگاہ کردیاگیا تھا‘ کئی دکانداروں نے از خود تجاوزات ہٹا دی تھیں‘ جبکہ جن لوگوںنے اس پر عمل نہیں کیا‘ ان تجاوزات کو بھاری مشینری کے ذریعے وہاں سے ہٹا دیاگیا‘ ضلع جنوبی میں ایم اے جناح رو ڈ پر لائٹ ہائوس سے ٹاور تک تجاوزات کو صاف کیا گیا اورفٹ پاتھ پر رکھے ہوئے سامان کو ضبط کرلیا گیا‘ شہر بھر میں جاری انسداد تجاوزات مہم کے نگراں میٹر وپولیٹن کمشنر ڈاکٹر سید سیف الرحمن نے جمعرات کو ہونے والی کارروائی کے حوالے سے ضلع جنوبی میں جونا مارکیٹ کے مقام پر برتن گلی میں کچھ تجاوزات باقی رہ گئے تھے‘ جنہیں صاف کردیا گیا اسی طرح بعض دکانداروں نے فٹ پاتھوں پر اپنا سامان رکھا ہوا تھا‘ جنہیں تنبیہ کردی گئی ہے کہ وہ دوبارہ فٹ پاتھوں پر اپنا سامان نہ رکھیں ۔ بلکہ سامان کو اپنی دکان کی حدود میں رکھیں ‘ بصورت دیگر ان کے سامان کو ضبط کرلیاجائے گا‘ انہوںنے کہا کہ ڈینسوہال کے نزدیک چھانٹی گلی میں بعض دکانیں اپنی حدود سے آگے نکلی ہوئی ہیں‘ جن کے بارے میں ان کے دکانداروں کو آگاہ کردیاگیاہے کہ وہ از خود انہیں وہاں سے ہٹا دیں‘ وگرنہ انہیں کارروائی کرکے ہٹا دیا جائے گا‘ سینئر ڈائریکٹر محکمہ انسداد تجاوزات بشیر صدیقی کے مطابق ضلع کورنگی میں سات ہزار رو ڈ پر مٹکے والی پلیا یوسی 34/30 میں 33 غیر قانونی دکانیں توڑ دی گئی‘ جبکہ فٹ پاتھ پر بنے ہوئے چبوترے ‘ دیواریں اور دیگر غیر قانونی تعمیرات کو بھی مسمار کردیا گیا‘ کورنگی میں ہونے والی اس کارروائی کو ڈائریکٹر لینڈ مسرت علی خان اور اسسٹنٹ ڈائریکٹر ندیم نواب نے اپنی نگرانی میں مکمل کرایا‘ ضلع جنوبی میں ڈپٹی ڈائریکٹر افتخار صدیقی اور آصف جیٹھا نے اپنی نگرانی میں کارروائی کو مکمل کرایا‘ ضلع وسطی کے علاقے رضویہ سوسائٹی ناظم آباد نے ڈپٹی ڈائریکٹر مسرور اقبال اور ضلع شرقی کے علاقے طارق رو ڈ لبرٹی مارکیٹ پر تجاوزات کے خلاف ہونے والی کارروائی میں ڈپٹی ڈائریکٹر امین لاکھانی نے اپنے اپنے علاقوںمیں ضلعی ا نتظامیہ اور پولیس کی مدد سے تجاوزات کے خلاف آپریشن کو جاری رکھا۔

حکومت متاثرہ تاجر وں کی بحالی میں سنجیدہ ہے،وسیم اختر

کراچی۔۔۔۔میئر کراچی وسیم اختر نے کہا ہے کہ متاثرہ تا جروں کی بحالی کے لئے حکومت سندھ اور وزیراعلیٰ سندھ سنجیدہ کوشش کر رہے ہیں تاہم اس میں تھوڑا وقت لگے گا تاجر مطمئن رہیں اگر میں یہ سمجھتا کہ اس مسئلے میں حکومت سنجیدہ نہیں تو سب سے پہلے میں احتجاج کرتا، اب جب حکومت سنجیدگی سے کوشش کر رہی ہے تو ہر ایک متاثرہ دکاندار کو ضرور متبادل جگہ ملے گی جو مستقل ہوگی، وزیر اعلیٰ سند ھ کی ہدایت پر قائم کمیٹی وزیر بلدیات سعید غنی کی سربراہی میں کام کر رہی ہے جس کے دو اجلاس ہوچکے ہیں متاثرہ تاجروں کو جلد متبادل دیا جائے گا ان خیالات کا اظہار انہوں نے جمعرات کو اپنے دفتر میں سندھ تاجر اتحاد کے چیئرمین جمیل پراچہ کی قیادت میں مختلف علاقائی تاجر انجمنوں کے نمائندوں پر مشتمل ایک وفد سے گفتگو کرتے ہوئے کیا، انہوں نے کہا کہ متبادل دینے کا تمام کام کمشنر ہائوس میں ہوگا جس میں سرکاری افسران مقرر کر رہے ہیں ایک ذیلی کمیٹی بھی قائم کی گئی ہے وقار مہدی کی سربراہی میں اس نے بھی کام شروع کردیا ہے، اس کام کی مکمل نگرانی ہو رہی ہے اور یہ کام سو فیصد شفاف طریقے سے ہوگا، انہوں نے تاجروں سے کہا کہ وہ اس کمیٹی میں شمولیت کے لئے اپنے نمائندے بھی تجویز کریں ہر مارکیٹ کا ایک ایک نمائندہ اس کمیٹی میں ہونا چاہئے انہوں نے کہا کہ بعض لوگ اس سنجیدہ مسئلے پر ذاتی سیاست کر رہے ہیں جو درست نہیں ہے، حکومت اس میں سنجیدہ ہے کہ لوگوں کو متبادل ملے انہوں نے کہا کہ تاجر اپنی چیزوں کو خود درست کریں تاکہ عملے کو کارروائی نہ کرنی پڑے ہم نہیں چاہتے کہ کسی کو بلاوجہ تکلیف ہو،سندھ تاجر اتحاد کے چیئرمین جمیل پراچہ نے کہا کہ انسداد تجاوزات میں متاثرہ تاجروں کا کسی سیاسی جماعت سے کوئی تعلق نہیں اگر کوئی انفرادی طور پر کسی سیاسی جماعت کے پلیٹ فارم پر ہے تو اس کا تاجروں کی تنظیموں اور علاقائی انجمنوں سے کوئی تعلق نہیں، تمام تاجر انجمنوں نے مشترکہ طور پر فیصلہ کیا ہے کہ ہمارا سیاست یا سیاسی جماعتوں سے کوئی تعلق نہیں جو سیاسی جماعتیں متاثرہ تاجروں کے حوالے سے احتجاج کر رہی ہیں دراصل درپردہ وہ اپنی سیاست کے لئے متاثرہ تاجروں کا نقصان کر رہی ہیں، یہ وہ لوگ ہیں جو متاثرہ تاجروں کا ہونے والا کام خراب کر رہے ہیں ہم متاثرہ تاجر حکومت اور میئر کراچی کے آباد کاری اور بحالی کے پلان سے مطمئن ہیں اور ہمیں توقع ہے کہ ہر تاجر کی بحالی کو ممکن بنایا جائے گا۔ ( وسیم اختر(

 خرم شیر زمان کو وسیم اختر سے استعفے دینے کا مطالبہ مہنگا پڑ گیا

کراچی۔۔۔۔پی ٹی آئی سے تعلق رکھنے والےرکن سندھ اسمبلی خرم شیر زمان کی جانب سے میئر کراچی وسیم اختر سے استعفے دینے کا مطالبہ انہیں مہنگا پڑ گیاہے ‘ بتایا جاتاہے کہ پی ٹی آئی کی قیادت نے خرم شیر زمان کی اس مطالبے پر سرزنش کی ہے اور انہیں پابند کیا ہے کہ وہ میئرکراچی وسیم اختر کے خلاف اس قسم کا کوئی بیان آئندہ نہ دیں‘ اس لیے کہ ایم کیوایم(پاکستان) پی ٹی آئی کی وفاقی حکومت میںاتحادی ہے ۔

 

 

(403 بار دیکھا گیا)

تبصرے