Qaumi Akhbar
Loading site
قومی اخبار
منگل 22 اکتوبر 2019
LZ_SITE_TITLE
 
New World of Online News

کراچی میں 10ہزارکیمرےلگانےکا کام شروع

قومی نیوز بدھ 05 دسمبر 2018
کراچی میں 10ہزارکیمرےلگانےکا کام شروع

کراچی۔۔۔۔۔۔۔چینی قونصلیٹ پرحملے کے بعدکراچی سیف سٹی پراجیکٹ کے تحت 10 ہزار سی سی ٹی وی کیمرے لگانے کا کام تیزی سے شروع کردیاگیا ہے۔12ارب روپے مالیت کے کیمرے نادراکے ذریعے نصب کرنے کے لئے ڈی آئی جی آئی ٹی سلطان علی خواجہ نے خط محکمہ داخلہ کوارسال کردیاہے۔ دستاویزات کے مطابق کراچی کے 2 ہزار مقامات پر 10میگا پکسل کے سی سی ٹی وی کیمرے لگائے جائیں گے۔سٹی سرویلنس منصوبے کے ذریعے ٹریفک مینجمنٹ سسٹم، سینٹر لائزڈ کمانڈ اینڈ کنٹرول سینٹرقائم کیاجائے گا،سی سی ٹی وی کیمروں کاریکارڈایک ماہ تک محفظ ہوگا۔ سندھ پولیس انفارمیشن ٹیکنالوجی ڈیپارٹمنٹ کی جانب سے ڈپٹی انسپکٹر جنرل پولیس سلطان خواجہ نے سیکریٹری محکمہ داخلہ کو ایک خط ارسال کیا ہے‘ خط میں کراچی سیف سٹی منصوبے اور سٹی سرویلنس سسٹم کے حوالے سے تفصیلی طورپر آگاہ کیاگیا ہے۔ دریں اثناء چینی قونصل خانے پر کالعدم بلوچ لبریشن آرمی کے دہشت گردوں کی جانب سے حملے کے بعد ہونے والی تحقیقات میں دہشت گردوں کے بلوچستان سے سندھ میں داخل ہونے کے انکشاف کے بعد سندھ پولیس نے بلوچستان سے دہشت گردوں اور جرائم پیشہ افراد کا داخلہ روکنے کیلئے سندھ‘ بلوچستان سرحد پر 323 پولیس اہلکار تعینات کردیئے ہیں اور سرحدی علاقے میں قائم پولیس چوکیوں کو بھی مزید فعال کرنے اور مؤثر بنانے کا فیصلہ کیا ہے۔ ذرائع کے مطابق کلفٹن میں چینی قونصل خانے پر بی ایل اے کے دہشت گردوں کی جانب سے دہشت گرد حملے کے نتیجے میں 2 پولس اہلکاروں سمیت 4 افراد کی شہادت اور 3 دہشت گردوں کے مارے جانے کے بعد تحقیقات میں یہ بات سامنے آئی تھی کہ دہشت گرد سندھ بلوچستان سرحدی علاقے سے آسانی سے کراچی آتے جاتے تھے او ران کے پاس ایک ادارے کا شناختی کارڈ ہوتا تھا جس کی مدد سے وہ پولیس کی چیکنگ سے بھی بچ جاتے تھے۔ اس انکشاف کے بعد سندھ پولیس نے سندھ بلوچستان سرحد پر پولیس کے 323 اہلکار تعینات کردیئے ہیں۔ سندھ بلوچستان سرحد پر سندھ پولیس نے 63 چوکیاں بھی قائم کر رکھی ہیں۔

 

(303 بار دیکھا گیا)

تبصرے