Qaumi Akhbar
Loading site
قومی اخبار
منگل 22 اکتوبر 2019
LZ_SITE_TITLE
 
New World of Online News

سرکلرریلوے سے تجاوزات کا خاتمہ

قومی نیوز منگل 04 دسمبر 2018
سرکلرریلوے سے تجاوزات کا خاتمہ

کراچی….. وفاقی حکومت کی طرف سے کراچی سرکلر ریلوے متاثرین کو معاوضہ دینے کی شرط پر حکومت سندھ سرکلر ریلوے کی 67 ایکڑ اراضے سے تجاوزات ہٹانے اور گرینڈ آپریشن کے لئے تیار ہوگئی‘ معاوضے کی ادائیگی پر اختلافات کے بعد حکومت سندھ نے 3 ماہ قبل تجاوزات کے خلاف آپریشن ادھوڑا چھوڑ دیا تھا۔ وفاق اور سندھ حکومت کے مابین مشترکہ آپریشن اور معاوضہ کی ادائیگی کے لئے معاملات کو آئندہ ہفتے حتمی شکل دینے کا فیصلہ کرلیا گیا۔ کراچی سرکلر ریلوے روٹ سے تجاوزات کے خاتمے کے لئے وفاق اور سندھ حکومت میں اختلافات دور ہوگئے اور سندھ حکومت نے سرکلر ریلوے منصوبے کی زیر قبضہ زمین پر 4 ہزار 653 مکانات اور 2 ہزار 997 دیگر تجاوزات کے خاتمے کے لئے گرینڈ آپریشن کا حصہ بننے کا مشروط فیصلہ کرلیا ہے۔ حکومت سندھ کی جانب سے وفاق کو بھجوائے جانے والی سفارشات میں کہا گیا ہے کہ 43.2 کلومیٹر پر محیط کراچی سرکلر ریلوے کی تعمیر نو کے منصوبے پر کام سے قبل تجاوزات کے خاتمے اور متاثرین کو متبادل کے طور پر معاوضے کی ادائیگی کو منصوبے کی لاگت کا حصہ بنایا جائے اور رہائشی مکانات مسمار کئے جانے سے قبل متاثرین کو معاوضے کی ادائیگی یقینی بنائی جائے۔ معتمد ترین ذرائع کا کہنا ہے کہ وفاق اور سندھ حکومت کے مابین سرکلر ریلوے منصوبے کی بحالی میں سب سے اہم ترین معاملے متاثرین کو معاوضے کی ادائیگی اور مطلوبہ فنڈز کی فراہمی وفاقی حکومت نے اپنے ذمہ لینے کی یقین دہانی کرادی ہے۔ دوسری جانب وفاق اور سندھ حکومت نے متاثرین کے سروے اور انہیں معاوضہ کی ادائیگی کا طریقہ کار آئندہ ہفتے طے کرنے کا فیصلہ کرلیا ہے۔ حکومت سندھ کی وفاق کوبھجوائی گئی سروے رپورٹ کے مطابق منصوبے کی 67 ایکڑ اراضی پر تجاوزات موجود ہیں جن میں سے 47 ایکڑ زمین سرکلر ریلوے کی جبکہ 20 ایکڑ مرکزی لائن کے اطراف ہے اور قبضہ کی گئی زمین پر 4 ہزار 653 مکانات اور 2 ہزار 997 دیگر تجاوزات کو ہٹانے اور متاثرین کو معاوضہ ادائیگی پر 4 ارب روپے سے زائد خرچ ہوں گے۔

 

(433 بار دیکھا گیا)

تبصرے