Qaumi Akhbar
Loading site
قومی اخبار
منگل 11 دسمبر 2018
LZ_SITE_TITLE
 
No one covers Karachi like we do!

ڈالر کی قیمت میں 8روپے اضافہ

ویب ڈیسک جمعه 30 نومبر 2018
ڈالر کی قیمت میں 8روپے اضافہ

اسلام آباد….عدالت عظمیٰ نے وفاقی حکومت کو صنعتی کارکنوں کو ورکرز ویلفیئر فنڈز سے 17 جنوری تک تمام ادائیگیاں کرنے کا حکم جاری کرتے ہوئے واضح کیاہے کہ اس معاملے میں کسی قسم کی تاخیر برداشت نہیں کی جائے گی اور اگر حکومت یہ کام نہیں کرے گی توعدالت یہ کام کسی تیسرے فریق سے کرائے گی‘عدالت وفاقی حکومت سے بالکل خوش نہیں‘غبن نظر آیاتومعاملہ نیب کو بھجوایاجائے گا۔عدالت نے وفاقی حکومت کو ڈیتھ گرانٹ ،میرج گرانٹ اور اسکالر شپ گرانٹ ترجیح بنیادوں پر جاری کرنے کا حکم بھی جاری کیا ہے۔ دریں اثناء سپریم کورٹ نے جے آئی ٹی کی پیش کردہ رپورٹ پر اعظم خان سواتی سے جواب طلب کرتے ہوئے کیس کی سماعت منگل تک ملتوی کردی جبکہ چیف جسٹس نے ریمارکس دیئے کہ ہم کسی وزیر کو نہیں جانتے، عدالت کے سامنے سب لوگ برابر ہیں، بتایا جائے کہ اعظم سواتی نے کتنی ایکڑ اراضی پر قبضہ کر رکھا ہے‘سوال یہ ہے کہ کیا اعظم سواتی کی طرح کے آدمی کو وزیر رہنا چاہیے؟ اعظم سواتی نے اپنے اختیارات کا ناجائز استعمال‘غریبو ں کے ساتھ ظلم کیا‘بچیاں جیل گئیں ‘ معافی کیسے دی جاسکتی ہے ‘آرٹیکل 62ون ایف لگانے کاجائزہ لیں گے‘وفاقی وزیرکے خلاف پرچہ درج ہونا چاہئے ‘سماعت کے دوران عدالت نے متاثرہ خاندان کے افراد کو روسٹرم پر بلا یا اور راضی نامہ کرنے پر برہمی کا اظہار کرتے ہوئے متاثرہ خاندان کے سربراہ سے کہا کہ آپ کی عزت اوروقار کے لئے ہم لڑ رہے ہیں اور آپ کہہ رہے ہیں کہ ہم نے صلح کرلی ہے۔ جمعرات کو جے آئی ٹی نے اعظم خان سواتی کے خلاف رپورٹ عدالت میں جمع کرادی‘جے آئی ٹی نے اپنی رپورٹ میں اعظم سواتی کو اختیارات کے ناجائز استعمال کا مرتکب قرار دیتے ہوئے ان کے موقف کو مسترد کر دیا ہے اور کہا ہے کہ بطور وفاقی وزیر انہوں نے اپنے اختیارات کا غلط استعمال کیا جبکہ پولیس نے جان بوجھ کر غلط تفتیش کی‘ رپورٹ میں کہا گیا کہ غریب خاندان پر جو الزامات عائد کئے گئے ان میں صداقت نہیں، اثر و رسوخ استعمال کرکے ایف آئی آر درج کروائی گئی۔ غریب خاندان پر زمین پر قبضے کی کوشش کے الزامات درست نہیں،بااثر افراد کی جانب سے غریب خاندان کو تشدد کا نشانہ بنایا گیا، اعظم سواتی کے اثر و رسوخ کے باعث تفتیش میں رعایت برتی گئی، چیف جسٹس نے اعظم سواتی کے وکیل علی ظفر کو رپورٹ کا جواب ایک دو روز میں عدالت میں جمع کرانے کی ہدایت کردی۔

(41 بار دیکھا گیا)

تبصرے

مزید خبریں