Qaumi Akhbar
Loading site
قومی اخبار
پیر 21 جنوری 2019
LZ_SITE_TITLE
 
New World of Online News | Best Urdu Website in World

کم آمدنی میں گھر چلائیں چند کار آمد مشورے

ارشد جاو ید بدھ 28 نومبر 2018
کم آمدنی میں گھر چلائیں چند کار آمد مشورے

کم آمدنی ہو یا زیادہ آمدنی آج کل مہنگائی نے سبھی کو پریشان کر رکھا ہے۔ ہر شخص گزارہ نہ ہونے کا رونا روتا نظر آتا ہے۔ بالخصوص متوسط طبقہ، کیونکہ متوسط طبقے کا مسئلہ یہ ہے کہ وہ اپنا رہن سہن اور اخراجات امیروں کی طرح کرتا ہے اور چاہتا بھی یہ ہے کہ اسے کسی سے کم نہ سمجھا جائے۔ کچھ خاندان کی مجبوری، تو کچھ اسٹیٹس کا رکھ رکھاؤ اسے پر تعیش پسند بنا دیتا ہے۔ گھر کی تقریب ہو پھر بھی یہ طبقہ نمودونمائش میں کسی سے پیچھے رہ جانے کو تیار نہیں ہوتا۔ یہی سبب ہے کہ زیادہ تر پریشانی کا سامنا اسی طبقے کو کرنا پڑتا ہے۔ متوسط طبقے کا فرد معاشرے میں اپنی عزت بنانے کے چکر میں گھن چکر بن جاتا ہے۔ اور یوں ہر ماہ اپنے بجٹ کوتوازن میں نہیں رکھ پاتا جس کے نتیجے میں مقروض ہوجاتا ہے۔
آیئے ہم آپ کو چند ایسے مفید اور قیمتی مشوروں سے نوازتے ہیں کہ جن پر عمل کرکے آپ ہر ماہ ٹھیک طرح سے گزارہ کرسکیں۔ مگرکم آمدنی میں گھر چلانے کی شرط یہی ہے کہ اپنے ضروری اخراجات کوسرفہرست رکھیں نہ کہ فضول خرچی میں پڑ کراپنی آدھی تنخواہ پہلے ہی خرچ کر بیٹھیں۔
٭۔اگر آپ کرائے دار ہیں تو تنخواہ ہاتھ میں آتے ہی کرایہ ادا کرنے کے بعد ہر ماہ کا تخمینہ لگائیے اور اِس بات کو تسلیم کیجیے کہ جو رقم آپ کے پاس ہے اسی میں گھر کا خرچ چلانا ہے۔
٭۔اشیائے صرف کی خریدار ی کے لیے مارکیٹ کا رْخ کرنے کے بجائے آپ بچت بازار وں کارْخ کریں ،اس طرح آپ دو کے بجائے چار چیزیں خرید سکتے ہیں۔
٭۔ مہینے بھرکے راشن کی فہرست بنائیے۔ جو چیزیں سرفہرست ہوں جیسے آٹا، پکوان، چینی، چائے،چاول دالیں مصالحے وغیرہ ان کی خریدار ی سب سے پہلے کریں۔
٭۔ اب آپ چکن اور گوشت کی خریداری کی طرف آئیں مگر روز روز مرغ مسلم کے چکر میں پڑنے کے بجائے ہفتے میں ایک یا دوبارگوشت چکن کا سالن بنائیں اور باقی پانچ دن دال اور سبزی وغیرہ کو ترجیح دیں۔اِس طرح اچانک آنے والے مہمانوں کے سامنے آپ کو شرمندہ یا پریشان نہ ہونا پڑے گا۔ گوشت یا چکن فریزر میں ہوگا توآپ بروقت مناسب بجٹ میں اچھا کھانا بناسکتی ہیں ور نہ ایمرجنسی میں ہوٹل سے کھانا لانا آپ کو زیربار کرسکتا ہے۔
٭۔ ہوٹلنگ سے بچاجائے بے شک مہینے میں ایک بار یہ شوق پورا کرلیں ،مگر آئے دن اِس چکر میں پڑکرآپ اپنے بجٹ کا توازن نہ بگاڑیں۔
٭۔ ہرماہ تنخواہ میں سے کچھ رقم اچانک آنے والی بیماری یا کسی ایمرجنسی یا تقریبات جیسے موقع کے لیے اْٹھا کے رکھیں،اِس طرح آپ کسی دوسرے کے سامنے ہاتھ پھیلانے سے بچ جائیں گے۔
٭۔ صرف ضروری تقریبات میں شرکت کریں۔ آئے دن کی تقریبات میں دینے دلانے کے چکر میں آپ جلد کنگال ہوسکتے ہیں۔
٭۔ حرص کے چکر میں پڑ کر کوئی نئی شے خریدنے سے پہلے چیک کرلیں کہ کہیں وہ چیز پہلے سے آپ کے گھر میں موجود تو نہیں اور صرف آپ دکھاوے اورا س سے اچھی کے چکر میں وہ چیز تو نہیں خرید رہے۔اگر ایسا ہے تو آپ اپنا بجٹ ذہن میں رکھ کر خود کو اس بات سے باز رکھیں۔
٭۔ ضروری نہیں کہ ہر بچے کی سا لگرہ آپ بہت دھوم دھا م سے کریں اور خاندان اکٹھا کرکے بلاوجہ کا بوجھ اپنے اوپر ڈالیں۔ یہ ہلکی پھلکی تقاریب گھر میں سادہ سی منائیں تو کم خرچ اور بالا نشین والی بات ہوگی۔ آپ بھی خوش اور آپ کی فیملی بھی خوش۔
امید ہے کہ آپ درج بالا مشوروں پر عمل کرکے اپنے بجٹ کو توازن میں رکھنے کی کوشش کریں گے۔

(42 بار دیکھا گیا)

تبصرے