Qaumi Akhbar
Loading site
قومی اخبار
اتوار 20 جنوری 2019
LZ_SITE_TITLE
 
New World of Online News ! Best Urdu Website in World

دو رخ رکھتی ہے ہر تصویر نیلم منیر

ویب ڈیسک هفته 24 نومبر 2018
دو رخ رکھتی ہے ہر تصویر نیلم منیر

پاکستانی خوبرو اداکارہ نیلم منیر کہتی ہیں کہ محبت جیسے جذبے کی قدر کرتی ہوں لیکن دوسرے لوگوں کی زندگی سے تجربہ حاصل کرتے ہوئے اس جھمیلے سے دور رہنا چاہتی ہوں‘ میں ہرگز محبت کے خلاف نہیں لیکن میں نے دوسرے لوگوں کی زندگی سے تجربہ حاصل کیا ہے۔ ان خیالات کا اظہار نیلم نے ایک انٹرویو میں کیا۔ ان کا کہنا تھا کہ میرا یہ ماننا ہے کہ شادی کے بعد اپنے شوہر سے محبت کی جائے جس سے میاں بیوی کا رشتہ انتہائی مضبوط رہتا ہے۔ اس وقت متعدد پراجیکٹس میں مصروف ہوں اور میری ساری توجہ ان پر مرکو ز ہے۔ فلم’’چھپن چھپائی‘‘ میں کام کرنے کا تجربہ خوشگوار رہا، احسن خان کے ساتھ کام کر کے مزہ آیا مزید فلموں کی آفر ہونے کے باوجود ٹی وی ڈراموں کو فی الحال ترجیح دے رہی ہوں۔ نیلم منیر نے مزید کہا کہ ماضی کی بات کریں توٹیلی ویژن کے فنکاروں نے فلم انڈسٹری کو ہمیشہ اپنی عمدہ کارکردگی اور شان دار پرفارمنس سے مقبولیت دلوائی‘ اگر aمستقبل میں ترقی کی بات کریں تواس میں بھی ٹیلی ویژن کے فنکاروں کی کارکردگی بے حدنمایاں ہیں۔اداکارہ نے کہا کہ بطورہیروئن میں بھی سلوراسکرین پرجلوہ گرہوچکی ہوں ،لیکن میری اصل پہچان توٹی وی سے ہی ہے۔ اس لیے میں مستقبل میں جہاں سلور اسکرین پرمزید کام کرتی دکھائی دوں گی، وہیں ٹی وی ڈراموںمیں بھی اداکاری کا سلسلہ جاری رہے گا کیونکہ میں خود کو کسی ایک میڈیم تک محدود نہیں رکھنا چاہتی۔ نیلم منیر نے کہا کہ سلوراسکرین کا اپنا ہی ایک مقام ہے۔ اس شعبے سے وابستہ لوگوں کوانتہائی قدرکی نگاہ سے دیکھا جاتا ہے اورمقبولیت میں انھیں وہ مقام حاصل ہوتا ہے جوکسی دوسرے شعبے کے فنکارکونہیں مل پاتا۔ اس لیے فلم کی مقبولیت کا اندازہ ہروہ اسٹارجانتا ہے جس کے نام کے ساتھ ’ فلم اسٹار‘ کا اضافہ ہوتا ہے۔ اداکارہ وماڈل نے کہا کہ جب وقت بدلتا ہے تو پھر سب معاملات راہ راست پرخود بخود آنے لگتے ہیں‘ جن کی بات پرکوئی یقین نہیں کرتا پھر انہی کو ترجیح دی جاتی ہے۔ اگریہ کہا جائے کہ یہ بات اب پاکستان فلم انڈسٹری پرپوری اترتی ہے توغلط نہ ہوگا کیونکہ اب پاکستان فلم انڈسٹری کے اچھے دن شروع ہو چکے ہیں، وہ فنکارجویکسانیت اور ایک جیسے موضوعات پربنائی جانے والی فلموں سے ناراض ہوکردورچلے گئے تھے، وہ آہستہ آہستہ واپس لوٹ رہے ہیں۔نیلم منیر نے کہا کہ دیکھا جائے تواس وقت فلم انڈسٹری کونیا روپ دینے میں ٹیلی ویژن کے فنکاروں اور نئی نسل کے ہدایتکاروں نے غیر معمولی کردار ادا کیا ہے، لیکن اس کے باوجود بھی سینئر فنکاروں کو ساتھ لیے بغیر پاکستان فلم انڈسٹری زیادہ لمبا سفر طے نہیں کر سکتی کیونکہ یہ سینئرفنکار ہی تھے جنہوں نے سینکڑوں یادگار فلموں میں خوبصورت کردار ادا کیے اور انہیں ناقابلِ فراموش بنایا۔ نیلم منیر نے کہا کہ فنون لطیفہ کے مختلف شعبوں میں ایسے فنکار بہت کم ہیں جو اپنی فنی صلاحیتوں کوکسی ایک شعبے تک محدود نہیں رکھتے بلکہ وہ اپنی صلاحیتوں کے بل بوتے پراداکاری کے ساتھ ماڈلنگ اورمیزبانی میں بھی ہمیشہ نمایاں کام کرتے دکھائی دیتے ہیں۔ نیلم منیر نے مزید کہا کہ مجھے بالی وڈ کی فلموں میں کام کرنے کا ذرا بھی شوق نہیں ہے حالانکہ مجھے اب تک دس سے زیادہ فلموں کی پیشکش ہوچکی ہے اور وہ بھی نامور ڈائریکٹر اور پروڈیوسرز کی طرف سے ہے۔

(28 بار دیکھا گیا)

تبصرے