Qaumi Akhbar
Loading site
قومی اخبار
پیر 19  اگست 2019
LZ_SITE_TITLE
 
New World of Online News

پاکستان کوارٹرز اور مارٹن کوارٹرز کے مکینوں کو مالکانہ حقوق کا مطالبہ

ویب ڈیسک جمعه 16 نومبر 2018
پاکستان کوارٹرز اور مارٹن کوارٹرز کے مکینوں کو مالکانہ حقوق کا مطالبہ

کراچی….. سندھ اسمبلی نے جمعرات کو اپنے اجلاس میں پاکستان کوارٹرز اور مارٹن کوارٹرز کے مکینوں کو مالکانہ حقوق سے متعلق ایم کیوایم کے رکن صوبائی اسمبلی خواجہ اظہار الحسن کی ایک قرارداد متفقہ طورپر منظور کرلی‘ جبکہ ایوان بالا نے بے نظیر انکم سپورٹ پروگرام کے سرکاری لوگوں سے محترمہ بے نظیر بھٹو کی تصویر ہٹانے اوراسلام آباد کے شہید بے نظیر بھٹو ایئرپورٹ کا نام تبدیل کرنے سے متعلق پیپلز پارٹی کی خاتون رکن ماروی راشدی کی ایک قرار داد بھی منظور کرلی‘ خواجہ اظہار الحسن نے اپنی قرارداد پیش کرتے ہوئے کہا کہ پاکستان کوارٹرز اور مارٹن کوارٹرز کے مکین برسہا برس سے وہاں رہائش پذیر ہیں‘ اب انہیں بے دخل کیاجارہا ہے‘ ہمارا مطالبہ ہے کہ چار نسلوں سے آباد لوگوں کو بے دخلی سے بچا کر مالکانہ حقوق دیئے جائیں اور وفاقی حکومت اس بارے میں رپورٹ سپریم کورٹ میں جمع کرائے‘ پاکستان کوارٹرز کے مکینوں پر بہیمانہ تشدد کیاگیا اور مقدمات درج کئے گئے ج‘ جس کی ہم بھرپور مذمت کرتے ہیں‘ وزیر بلدیات سعید غنی نے کہا کہ ہم اس قرارداد کی حمایت کرتے ہیں‘ انسانی ہمدردی کی بنیاد پر پاکستان کوارٹرز کے مکینوں کا مسئلہ حل ہونا چاہیے‘ پیپلزپارٹی کی ماروی راشدی نے بے نظیر انکم سپورٹ پروگرام کے آفیشل لوگوں سے بے نظیر بھٹو کانام تبدیل کرنے سے متعلق قرار داد پیش کرتے ہوئے اس اقدام کو قابل مذمت قرار دیا‘ پیپلزپارٹی کی خاتون رکن سید ہ شہلا رضا نے قرار دا د کی تردید کرتے ہوئے کہا کہ غریبوں کی اسکیم کو پوری دنیا کی حمایت حاصل ہے‘ ہم اپنے ہیروز کا نام ہٹا کر دنیا کو کیا پیغام دینا چاہتے ہیںکہ پی ٹی آئی کے خرم شیر زمان نے کہا کہ پیپلزپارٹی کو اب سیاسی نعروں اور تصویروں سے نکل جانا چاہیے‘ بے نظیر انکم سپورٹ اسکیم سیاست زدہ ہوگئی ہے ‘ کل یہ بولیں گے کہ زرداری کی تصویر نوٹ پر لگادو ‘ یہ نہیں ہوسکتا۔

(209 بار دیکھا گیا)

تبصرے