Qaumi Akhbar
Loading site
قومی اخبار
منگل 10 دسمبر 2019
LZ_SITE_TITLE
 
New World of Online News

4دن میں 350 دکانیں‘ 7 ہزار سائن بورڈ مسمار

قومی نیوز جمعه 09 نومبر 2018
4دن میں 350 دکانیں‘ 7 ہزار سائن بورڈ مسمار

سپریم کوٹ کے احکامات پر کے ایم سی کے محکمہ انسداد تجاوزات نے صدر کے علاقے میں چوتھے روز آپریشن کے دوران اکبر روڈ‘ زینب مارکیٹ اور کچھی میمن مسجد کے اطراف میں تجاوزات کا صفایا کیا‘ آپریشن کے دوران کچھی میمن مسجد کی کمیٹی کی اجازت سے فٹ پاتھ پر قائم 4 دکانوں کو مسمار کردیا گیا۔ راجہ غضنفر روڈ پر پی ٹی آئی کے رہنما خرم شیر زمان کے ریسٹورنٹ کے باہر فٹ پاتھ پر تجاوزات اور سائن بورڈ مسمار کردیئے۔ کے ایم سی محکمہ انسداد تجاوزات کے ڈائریکٹربشیر صدیقی کے مطابق 4 دن کے آپریشن کے دوران 350 دکانیں‘ 7 ہزار سے زائد سائن بورڈ اور چھجے مسمار کئے تاہم ایمپریس مارکیٹ سے ملحقہ عمر فاروقی مارکیٹ کی ایک ہزار دکانوں کو مسمار نہیں کیا گیا ہے۔ مارکیٹ کے دکانداروں نے ایمپریس مارکیٹ کے باہر احتجاجی کیمپ لگالیا ہے۔ دکانداروں کے مطابق 50 سال سے مارکیٹ قائم ہے‘ دوسری طرف کراچی الیکٹرونکس ڈیلرز ایسوسی ایشن کی جانب سے بھی آپریشن کے خلاف ریگل چوک پر احتجاجی دھرنے کی دھمکی دی گئی ہے۔ صدر کو ماڈل علاقہ بنانے کے لئے کے ایم سی نے پورے علاقے میں بینرز آویزاں کرکے دکانداروں کو آگاہ کیا ہے کہ فٹ پاتھ اور سڑک پر تجاوزات قائم نہ کریں‘ تجاوزات کے خلاف آپریشن کی رپورٹ 6 دن میں سپریم کورٹ میں جمع کرادی جائے گی۔ دریں اثناء اس سلسلے میں بلدیہ عظمیٰ کے اجلاس میں بتایا گیا کہ ایمپریس مارکیٹ کے اطراف 4 کونے پر غیرقانونی قابضین نے مسافر خانے‘ پرس کے کارخانے اور دیگر غیرقانونی کاروبار کیا ہوا ہے‘ اس مہم میں ان سب کو صاف کیا جائے گا۔ کمشنر کراچی افتخار علی شلوانی نے کہا ہے کہ ہم کراچی کو اس کی اصل صورت میں واپس بحال کرنا چاہتے ہیں‘ وہ کراچی جو ہمارے بزرگوں نے دیکھا تھا ہم کراچی کو وہی صورت دوبارہ دیں گے اور عدالتی حکم پر مکمل طور پر عملدرآمد کرائیں گے۔ بعدازاں بلدیہ عظمیٰ کراچی کے محکمہ انسداد تجاوزات نے صدر اور دیگر ملحقہ علاقوں میں تجاوزات ہٹائے جانے کا سلسلہ مسلسل چوتھے روز بھی جاری رکھا۔ اس دوران جمعرات کو زیب النساء اسٹریٹ ‘ شاہراہ عراق‘ میر کرم اللہ تالپور روڈ‘ دائود پوتہ روڈ‘ نیو پریڈی اسٹریٹ‘ زینب مارکیٹ‘ عبداللہ ہارون روڈ‘ راجہ غضنفر علی روڈ‘ ریگل چوک کے چاروں طرف اور اکبر روڈ کی گلیوں کو بھی تجاوزات سے مکمل طور پر صاف کیا گیا۔

دکاندارں میں شدید اشتعال

صدر ایمپریس مارکیٹ اور اس کے اطراف تجاوزات کے خلاف کئے جانے والے آپریشن میں جائز اورقانونی دکانوں پر ان کے نام کے بورڈ بھی اتار دیئے گئے‘ جس کے سبب دکاندارں میں شدید اشتعال پایا جاتاہے ‘ ان دکانداروں کا کہنا ہے کہ ہم دکان پر لگائے گئے نام کے بورڈ کا کے ایم سی کے متعلقہ محکمہ کو باقاعدگی سے ٹیکس اداکرتے ہیں‘ دکانداروں کا کہنا ہے کہ بلدیہ عظمیٰ کراچی ٹیکس کی ادائیگی کا پاس رکھتے ہوئے ہمیں نام کے بورڈ لگانے کی اجارت دے۔

رشوت کے ریٹ بڑھانے کےلئے خوف وہراس پھیلا یا گیاٗ رضوان عرفان

کراچی الیکٹرونکس ڈیلرز ایسوسی ایشن(کیڈا) کے صدر رضوان عرفان نے کہا ہے کہ کے عدالت نے سڑکوں اور فٹ پاتھ سے تجاوزات کے خاتمے کا حکم دیا ہے لیکن انتظامیہ کے راشی افسران نے بلڈوزر سے حملہ کرکے دکانوں کے سائن بورڈ اور سن شیڈ مسمار کردئیے جن کے باقاعدہ واجبات ادا کئے جاتے ہیں۔ ان خیالات کے اظہار انہوں نے گزشتہ روز پریس کانفرنس کرتے ہوئے کیا ،محمد رضوان نے کہا کہ راشی افسران نے مستقبل میں رشوت کے ریٹ بڑھانے کے لئے منصوبہ بندی کے تحت خوف وہراس پھیلانے کے لئے صدر میں متعدد ایسی دکانیں بھی مسمار کردیں جو قانونی طور پر لیز تھیں اس کے علاوہ اس کی خوبصورتی میں اضافہ کرنے والے جگمگاتے سائن بورڈ منہدم کرکے پورے صدر کو ویران کیا گیا ہے، انہوں نے کہاکہ اس صورتحال کے باعث تاجروں میں اشتعال اور بے چینی جنم لے رہی ہے جس کا فوری تدارک ضروری ہے، اس موقع پر انہوں نے چیف جسٹس آف پاکستان سے اپیل کی کہ کے ایم سی کے راشی افسران کی جانب سے جو قانون شکنی کی جا رہی ہے اسے روکا جائے اور متاثرین کے نقصانات کا ازالہ کرنے کا حکم صادر فرمائیں۔

الیکٹر ونکس ما رکیٹ کے وفد کی ایم کیو ایم رہنماسے ملاقات

متحد ہ قومی مو ومنٹ پاکستان کے ڈپٹی کنو نیرورکن سندھ اسمبلی سے الیکٹر ونکس ما رکیٹ کے صدر رضو ان عر فان نے 4رکنی وفد کے ہمر اہ ملا قات کی ۔کنو رنو ید جمیل سے ملا قات میں انہو ں نے تا جر وں کے مسائل اور درپیش مشکلا ت سے آگا ہ کیا ۔کنو رنوید جمیل نے کہا کہ ہم تا جر بر داری کی جا ئز شکا یا ت کے حل کیلئے تمام اقداما ت بر وئے کا ر لا ئیں گے الیکٹر ونکس ڈیلر ایسویسی ایشن کے وفد میں حا جی نا صر تر ک ،جنر ل سیکر ٹری سلیم میمن (سینئر نائب صدر )اور جا وید محمو د علی شامل تھے ۔

کرایہ داروں کے ساتھ معاہدہ اگر تھا تو ختم کردیا ہے ٗ وسیم اختر

میئر کراچی وسیم اختر نے کہا ہے کہ صدر ایمپریس مارکیٹ کے اطراف میں بلدیہ عظمیٰ کراچی کے کرایہ داروں کے ساتھ معاہدہ اگر تھا تو ختم کردیا ہے تاہم فیصلہ کیا گیا ہے کہ بلدیہ عظمیٰ کراچی کے کرایہ داروں کو کے ایم سی کی دیگر مارکیٹوں میں کاروبار کے لئے جگہ مہیا کی جائے گی، اس کے لئے کمشنر کراچی ایک کمیٹی قائم کریں گے جو ان کے کرایہ داروں کے ساتھ مذاکرات و مشاورت سے طریقہ کار طے کرے گی تاہم سپریم کورٹ کی ہدایت پر صدر کے تمام علاقوں کی طرح ایمپریس مارکیٹ کے اطراف بھی غیرقانونی تعمیرات کو مسمار کیا جارہا ہے اور مارکیٹ کی اصل حالت کو بحال کیا جائے گا۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے جمعرات کو صدر کے مختلف علاقوں کے دورے کے بعد کمشنر کراچی افتخار علی شلوانی‘ ڈی آئی جی سائوتھ جاوید اوڈھو‘ میٹروپولیٹن کمشنر ڈاکٹر سید سیف الرحمن‘پولیس اور ڈسٹرکٹ انتظامیہ کے دیگر افسران کے ہمراہ ایمپریس مارکیٹ کے سامنے میڈیا کے نمائندوں کو بریفنگ دیتے ہوئے کیا‘ انہوں نے کہا کہ سپریم کورٹ کے احکامات پر عملدرآمد کرتے ہوئے صدر کے اطراف تمام علاقوں اور ایمپریس مارکیٹ کو مکمل طور پر ہر طرح کے تجاوزات سے صاف کیا جائے گا لہٰذا اگر کوئی یہ سمجھتا ہے کہ کسی طرح اثرورسوخ استعمال کرکے یا احتجاج کی آڑ میں تجاوزات کے صاف کرنے کے عمل کو روکا جائے گا تو اس کی یہ غلط فہمی ہے وہ لوگ جو ایمپریس مارکیٹ کے ساتھ بنی ہوئی دکانوں میں کاروبار کررہے ہیں انہیں چاہئے کہ نقصان سے بچنے کے لئے اپنے سامان کو محفوظ مقام پر منتقل کریں اور دکانیں توڑ نے کے عمل میں رکاوٹ نہ بنیں بلدیہ عظمیٰ کراچی نے اپنی دکانوں کے کرائے وصول کرنے کے حوالے سے تمام معاہدے منسوخ کردیئے ہیں، ہم کسی کو بے روز گار کرنا نہیں چاہتے بلکہ ہماری یہ کوشش ہوگی کہ جو لوگ ایمپریس مارکیٹ سے متصل دکانوں میں کاروبار کررہے ہیں‘ انہیں کے ایم سی کی دیگر مارکیٹوں میں مناسب جگہ فراہم کی جائے تاکہ وہ اپنے کاروبار کو جاری رکھ سکیں، ہم شہر کی رونقوں کو آباد کرنا چاہتے ہیں اور راہگیروں کو فٹ پاتھوں پر چلنے کے لئے ان کا حق دینا چاہتے ہیں،تجاوزات کسی بھی شکل میں ہوں وہ کسی بھی طرح شہر کی خوبصورتی میں اضافہ نہیں کرتے بلکہ تجاوزات کے باعث شہر بے ہنگم نظر آتا ہے، انہوں نے کہا کہ تجاوزات ہٹانے کے حوالے سے سیاسی قیادت سے لے کر کراچی کی انتظامیہ تک سب ایک پیج پر ہیں اور چاہتے ہیں کہ سپریم کورٹ کے احکامات پر من و عن عمل کرایا جائے، انہوں نے کہا کہ جو قانون کو ہاتھ میں لے گا وہ اپنے کئے کا خود ذمہ دار ہوگا۔

آپریشن کسی اور سمت جا رہا ہے ٗخرم شیر زمان

پاکستان تحریک انصاف کراچی ڈویژن کے صد ر و رکن سندھ اسمبلی خرم شیر زمان نے کہا ہے کہ تجاوزات کے خلاف آپریشن کسی اور سمت جا رہا ہے۔ تجاوزات کے خلاف چیف جسٹس کے احکامات پر چیف جسٹس آف پاکستان کا شکر گزار ہوں۔مقصد یہ تھا کہ فٹ پاتھوں پر ہونے والے قبضوں کو ختم کروایا جائے۔ یہ باتیں انہوں نے پارٹی سیکرٹریٹ ’’انصاف ہاؤس‘‘ پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کہیں۔ انہوں نے مزید کہا کہ یہ قبضے ختم کروا کر عوام کو سہولت دینا مقصود تھا۔ میئر کراچی وسیم اختر عوام کی سہولت کے بجائے کوئی ذاتی غصہ اتار رہے ہیں۔ صدر کے علاقے میں ناجائز تجاوزات کے خلاف آپریشن میں دکانوں پر لگے ہوئے سائن بورڈز توڑے گئے۔دکانوں کے شٹر کاٹ کر لوگوں کو نقصان پہنچایا گیا۔صدر چلے جائیں تو محسوس ہوگا جیسے کوئی جنگ یا بمباری جاری ہے۔تمام دکانیں توڑدی گئیں، کچھ نہیںچھوڑا گیا۔چیف جسٹس نے کراچی کو سنوارنے کا کہا ہے، بگاڑنے کا نہیں کہا۔

خرم شیر زمان شہری مسئلے پر سیاست نہ چمکائیں ٗ محمد حسین

ایم کیو ایم پاکستان کے رکن سندھ اسمبلی محمد حسین خان نے تحریک انصاف کےرکن سندھ اسمبلی خرم شیر زمان کی جانب سے میئر کراچی پر انسداد تجاوزات مہم کے حوالے سے تنقید کو افسوسناک قرار دیا ہے۔محمد حسین نے کہا کہ سپریم کورٹ کی واضح ہدایات پر شروع کی گئی انسداد تجاوزات مہم کو کامیاب بنانے کے لیے میئر کراچی کا ساتھ دینے کے بجائے خرم شیر زمان اس شہری مسئلے پر بھی سیاست چمکانے کی افسوسناک کوشش کر رہے ہیں۔ انہوں نے مزید کہا کہ میڈیا رپورٹس کے مطابق انسداد تجاوزات مہم کی زد میں خرم شیر زمان کا صدر میں واقع ریسٹورنٹ بھی آیا ہے اور شاید اسی بات کا ناجائز غصہ وہ میئر کراچی کی خلوص نیت سے چلائی گئی مہم پر نکال رہے ہیں جو کہ غیر ذمہ دارانہ اور افسوسناک امر ہے۔

(399 بار دیکھا گیا)

تبصرے