Qaumi Akhbar
Loading site
قومی اخبار
اتوار 01 نومبر 2020
LZ_SITE_TITLE
 
New World of Online News

مہنگائی کے تمام ریکارڈ ٹوٹ گئے

ویب ڈیسک هفته 10 اکتوبر 2020
مہنگائی کے تمام ریکارڈ ٹوٹ گئے

کراچی (قومی اخبار نیوز)کورونا کی وبا کے باعث مہنگائی بے قابو ہوگئی۔ آٹے، چینی، سبزیوں کی قیمت میں ہوشربا اضافہ ہوگیا۔ چکی کا آٹا پچھترروپے کلو، فائن آٹا ستر روپے کلو تک جاپہنچا۔ چینی نے سنچری مکمل کرلی ہے۔ انڈے ایک سوساٹھ روپے درجن پر فروخت ہورہے ہیں۔ برائلر مرغی کا گوشت دوسونوے روپے کلو ہوگیا۔ دودھ ایک سوبیس روپے لیٹر ہوگیا۔ مہنگائی نے سبزی بھی غریب کی پہنچ سے دور کردی۔ مٹر دوسو روپے، بھنڈی سو روپے، ہری مرچ ایک سو بیس روپے، بینگن ساٹھ روپے، ادرک چارسو روپے، لہسن دوسوروپے، توری اسی روپے، پیار ساٹھ، لیموں دوسوروپے کلو میں فروخت ہورہے ہیں۔ مارکیٹ ذرائع کا کہنا ہے کہ غیرمعمولی بارشوں سے فصلیں تباہ ہوگئیں جس کی وجہ سے غذائی اجناس کی قیمتیں بڑھی ہیں۔ دریں اثنا ادارہ شماریات کی ہفتہ واری رپورٹ کے مطابق دال چنا،چاول،دہی،لہسن بھی مہنگا،کیلے،دال مونگ،دال ماش،گڑکی قیمت میں کمی،23اشیاکی قیمتوں میں استحکام حکومت ملک میں مہنگائی روکنے میں ناکام ہوگئی، ایک ہفتے کے دوران مہنگائی 1.24فیصد بڑھ گئی۔ ادارہ شماریات کی ہفتہ وار رپورٹ کے مطابق رواں ہفتے کے دوران 24 اشیائے ضروریہ مہنگی ہوئیں۔ آٹے کا 20 کلو کا تھیلا 28 روپے مہنگا ہوا۔ چینی کی قیمت میں ایک روپے کا اضافہ ہوا اور ملک کے 9 بڑے شہروں میں چینی کی فی کلو قیمت 100 روپے سے تجاوز کرگئی ہے۔ ادارہ شماریات کے مطابق اسلام ا?باد میں چینی 110، پشاور میں 105، کراچی، لاڑکانہ، راولپنڈی، لاہور، سیالکوٹ، کوئٹہ اور بہاولپور میں 100 روپے فی کلو فروخت ہو رہی ہے۔ سبزیوں کی قیمتوں میں بھی اضافہ ہوا۔ ٹماٹر 18 اور پیاز 8 روپے فی کلو مہنگے ہوئے۔ انڈے فی درجن 16 روپے مہنگے ہوئے۔ مرغی برائلر 9 روپے فی کلو مہنگی ہوئی۔ آلو ایک روپے 80 پیسے فی کلو مہنگے ہوئے۔ دال چنا، چاول، دہی اور لہسن بھی مہنگا ہوا جبکہ کیلے، دال مونگ، دال ماش اور گڑ کی قیمت میں کمی ہوئی۔ اسی طرح 23 اشیائے ضروریہ کی قیمتوں میں استحکام رہا۔

(120 بار دیکھا گیا)

تبصرے