Qaumi Akhbar
Loading site
قومی اخبار
اتوار 27  ستمبر 2020
LZ_SITE_TITLE
 
New World of Online News

طوفانی بارشیں، نان اسٹاپ تباہی

ویب ڈیسک منگل 25  اگست 2020
طوفانی بارشیں، نان اسٹاپ تباہی

کراچی (کرائم رپورٹر راو عمران)سرجانی اور نارتھ کرچی کے بعدمون سون کے چھٹے اسپیل نے لانڈھی اور گلشن حدید میں تباہی مچادی آج شام تک بارشوں میں مزید شدت آجائے گی تین روز جاری رہنے والے سسٹم سے سنھ بھر میں شدید سیلاب کا خطرہ ہے جبکہ سرجانی نیو کراچی اور نارتھ کراچی کے علاقوں میں چار روز سے سیلابی کیفیت برقرار ہے پاک فوج نے علاقے کا کنٹرول سنبھال لیا ہے مزید بارشیں نہیں ہوئی تو چوبیس گھنٹے میں علاقے سے پانی کی نکاسی کردی جائے گی جبکہ علاقے سے نقل مکانی کا سلسلہ جاری ہے بجلی اور گیس کی سپلائی بھی بحال نہ ہوسکی ایک روز کے وقفے کے بعد پیر کی شام اچانک کالی گھٹائیں چھا گئیں اور اس کے ساتھ ہی پہلے تیز ہوائیں چلیں اور اس کے بعد بارش کا سلسلہ شروع ہوگیا کراچی کے علاقے ملیر، لانڈھی، گلشن حدید، گلستان جوہر، اورنگی ٹاو?ن اور ملیر سمیت دیگر مقامات پر بارش سے جل تھل ہوگیا محکمہ موسمیات کے مطابق گلشن حدید میں سب سے زیادہ 70 ملی میٹر اور لانڈھی مین 35ملی میٹر بارش ریکارڈ کی گئی چییف میٹرو لوجسٹ سردار سرفراز کے مطابق مشرقی سندھ اور بھارتی راجستھان پر موجود ہوا کے کم دباو ¿ آپس میں مل گئے ہیں، جس کی وجہ سے ان کی شدت تاحال برقرار ہے جب کہ خلیج بنگال میں ہوا کا ایک اور کم دباو ¿ بھی بن رہا ہے۔ جس کے باعث بدھ تک شہر میں شدت کے ساتھ بارشیں ہونے کا امکان ہے، شہر کے چند ایک مقامات پرموسلادھار بارش کا بھی امکان رہے گا، کچھ علاقوں میں 100 ملی میٹر سے زائد بارش ہوسکتی ہے اور اس کے نتیجے میں اربن بلڈنگ کا بھی خطرہ رہے گا۔محکمہ موسمیات کے مطابق مشرقی سندھ میں ایک ہوا کا کم دباو ¿ پہلے سے موجود ہے جو گزشتہ دنوں کراچی سمیت اندرون سندھ کے مختلف اضلاع میں بارشوں کا سبب بنا جب کہ ہوا کا دوسرا کم دباو ¿ جو بھارت راجستھان پر موجود تھا وہ بھی سندھ میں داخل ہوچکا ہے، ہوا کے دونوں کم دباو ¿ کے میلاپ سے مون سون کا سسٹم طاقتور ہوگا جس کی وجہ سے آج سے 28 اگست تک ابتدا میں تیز جب کہ بعد ازاں معتدل بارشیں ہونے کا امکان ہے پیر کی شام پاک فوج کی ایک ٹیم نے ڈپٹی کمشنر ویسٹ کے ہمراہ سرجانی نارتھ کراچی اور نیو کراچی کت متاثرہ علاقوں کا دورہ کیا ڈپٹی کمشنر ویسٹ نے دعوی کیا کہ اگر چوبیس گھنٹے میں مزید بارش نہیں ہوئی تو پانی کی نکاسی ہو جائے گی قبل ازیں علاقہ مکینوں نے الزام لگایا تھا کہ مختلف ادارے فوٹو سیشن کے لئے علاقے میں آرہے ہیں سائیں سرکار کی جانب سے آنیوالی امدادی ٹیموں نے بارش کو بھی کمائی کا زریعہ بنالیا بارش سے متاثرہ مکینوں سے پمپنگ مشین کے ڈیزل کے نام پر رقم بٹورنا شروع کردی‘دریں اثنا پیر کے روز مون سون کی بارش کے دوران تیز آندھی چلنے سے بھینس کالونی میں چھت گرگئی، جس کے نتیجے میں 2 افراد جاں بحق اور 4 افراد زخمی ہوگئے۔تفصیلات کے مطابق پیر کے روز سہ پہر 4 بجے مون سون کی ساتویں اسپیل کے دوران موسلاد دھار بارش کے ساتھ چلنے والی تیز آندھی سے سکھن کے علاقے بھینس کالو نی روڈ نمبر 9 کے قریب سنوکر کلب کی چھت گرنے سے 6 افراد زخمی ہوگئے، واقعے کی اطلاع ملتے ہی پولیس اور امداری رضا کار موقع پر پہنچ گئے، ملبے تلے دب افراد کو نکال کر ایمولنسز کے زریعے جناح اسپتال منتقل کیا گیا، جہاں پر دوران علاج دو افراد نے دم توڑ دیا، اسپتال زرائع نے بتایا ہے کہ متوفین کی شناخت 28 سالہ عمران ولد رمضان،30 سالہ عمران ولد علی محمد اور زخمیوں میں 40 سالہ عثمان ولدگل محمد، 20 سالہ حامد ولد اکبر،30 سالہ کامران ولدعمران اور 55 سالہ اکبر ولد عدل کے ناموں سے ہوئی ہے، پولیس کے مطابق چھت گرنے سے ہلاک اور زخمی اس ہی علاقہ کے رہائشی ہیں، پولیس کارروائی کے بعد لاشیں ورثاء کے حوالے کردیں ہے، تاہم زخمیوں کی حالت خطرے سے باہر بتائی جاتی ہے۔

(183 بار دیکھا گیا)

تبصرے