Qaumi Akhbar
Loading site
قومی اخبار
پیر 01 جون 2020
LZ_SITE_TITLE
 
New World of Online News

سندھ میں آج سے کاروبار کھولنے کی اجازت

ویب ڈیسک پیر 11 مئی 2020
سندھ میں آج سے کاروبار کھولنے کی اجازت

وزیراعلیٰ سندھ سید مراد علی شاہ اور تاجر رہنماوں کے مذاکرات کامیاب ہوگئے۔سندھ اسمبلی میں ہونے والے مذاکرات میں تاجر رہنما حماد پونا والا، جمیل پراچہ،مئیرکراچی وسیم اختر و دیگر نے شرکت کی۔حماد پونا والا نے کہاکہ وزیراعلیٰ سندھ نے کل صبح 6 بجے سے شام 5بجے تک تمام مارکیٹیں کھولنے کی منظوری دے دی ہے۔انہوں نے کہاکہ مذاکرات میں طے پایا ہے کہ شاپنگ سینٹرز اور مالز کھولنے پر پابندی تاحال برقرار رہے گی۔وزیراعلی ٰسندھ مرادعلی شاہ اورتاجر رہنماؤں کے درمیان ملاقات ہوئی، وزیراعلی سندھ مراد علی شاہ نے آج سیئ دکانیں کھولنے کا اعلان کردیا، تاہم ایس او پیز پر عمل درآمد کی زمہ داری تاجروں پر ہوگی۔ صوبے بھر میں کل سے صبح 6 سے شام 5 بجے تک دکانیں کھولی جائیں گی جبکہ شاپنگ مالز بند رہیں گے تفصیلات کے مطابق وزیراعلی ٰ سندھ مراد علی شاہ نے کہا کہ عوام کی صحت ہماری اولین ترجیح ہے ہم وفاقی حکومت سے وقت بوقت بات کرتے رہے، پبلک ٹرانسپوٹ، ایئر پورٹ کھولنے پر میں نے اعتراض کیا تھا، وفاقی حکومت رات کو کاروبار کھولنا چاہتی تھی جس پر ہم نے اعتراض کیا، وفاقی حکومت نے ہماری بات تسلیم کی،یہ ہمارے اوپر لازم ہے کہ ہم کاروبار بند رکھنا چاہتے ہیں، یہ چاروں صوبوں اور وفاق کا متفقہ فیصلہ تھا۔ ہم نے یہ مشکل فیصلہ کرتے ہوئے ہمارا بھی دل دکھا، اب واپس کاروبار کھولنے والا فیصلہ بھی انتہائی مشکل ہے، اس وقت کیسز پیک پر جا رہے ہیں، ہمارے لاک ڈاؤن سے فائدہ ہوا ہے۔ میں نے وفاقی حکومت سے بھی بات کی ہے، کاروباری لوگ شدید مشکل میں ہیں، اب ہمارے خلاف ایک سیاسی کاروبار شروع ہوگیا ہے۔ اس حوالے سے ترجمان وزیراعلی ٰ سندھ کے مطابق سیکریٹری داخلہ نے تاجروں کو بتایا ہے کہ کون سے کاروبار کھلیں گے اور ایس او پیز کیا ہوں گے، ہمیں ہر شخص تک ایس او پیز پہچانی ہے، تاجر سراج قاسم تیلی نے وزیر اعلی کو یقین دہانی بھی کروائی ہے جبکہ تاجروں نے حکومت سندھ کے اقدامات کو سراہا ہے۔تاجروں سے مذاکرات کے بعد میڈیا بریفنگ میں وزیراعلیٰ سندھ نے کہاکہ وفاقی حکومت رات کو کاروبار کھولنا چاہتی تھی،جس پر ہم نے اعتراض کیا۔انہوں نے کہاکہ پبلک ٹرانسپورٹ،ائیرپورٹ کھولنے پر بھی میں نے اعتراض کیا، وفاقی حکومت نے ہماری بات تسلیم کی کہ ہمارے لاک ڈاؤن سے فائدہ ہوا ہے۔سید مراد علی شاہ نے مزید کہاکہ ہم وقت بوقت وفاقی حکومت سے بات کرتے رہے ہیں، عوام کی صحت ہماری اولین ترجیح ہے۔ان کا کہنا تھاکہ کاروبار بند کرنے کا فیصلہ مشکل تھا، ہمارا دل دکھا، اب واپس کاروبار کھولنے والا فیصلہ بھی انتہائی مشکل ہے۔وزیراعلیٰ سندھ نے یہ بھی کہاکہ کورونا وائرس کے کیسزاپنے عروج پر ہیں، ہمیں لاک ڈاون سے فائدہ ہوا ہے۔انہوں نے کہاکہ دکانیں صبح 6 سے شام 5 بجے تک کھولی جائیں گی،شاپنگ سینٹرز اور مالز بند رہیں گے۔سید مراد علی شاہ نے کہا کہ مذہبی اور سماجی اجتماع، کھیلوں کے مقابلوں پر پابندی بدستور جاری رہے گی،پارکس، شادی ہالز اور تعلیمی ادارے بند رہیں گے۔وزیراعلیٰ سندھ نے تاجروں سے خطاب کرتے ہوئے مزید کہا کہ پاکستان بھر میں سندھ ٹیسٹنگ آبادی کے حساب سے زیادہ ٹیسٹ کر رہے ہیں۔ وزیراعلیٰ سندھ نے کہا کہ عوام کی صحت ہماری اولین ترجیح ہے۔ وزیراعلیٰ سندھ نے کہا کہ جہاں تک صوبوں کی آبادی کا تعلق ہے تو سندھ ہر دن سب سے زیادہ ٹیسٹ کر رہا ہے حالانکہ ہم صرف مشتبہ افراد کے ٹیسٹ کر رہے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ ہمارے صوبہ میں شرح اموات بھی کے پی کے اور پنجاب سے کم ہے جسے انہوں نے لاک ڈاؤن کا نتیجہ قرار دیا۔سید مراد علی شاہ نے کہا کہ تمام قرنطینہ میں مشتبہ افراد کی جانچ کی جارہی ہے اور ہماری قرنطینہ سہولیات سب سے بہتر ہیں جس کی گنجائش 14000 سے زیادہ کمروں پر مشتمل ہے۔ انہوں نے کہا کہ ہمارے پاس انتہائی اہم نگہداشت کے کیسز ہیں جن کا استعمال کیسز میں اضافہ ہونے کے ساتھ ساتھ ہو رہا ہے۔؟

(1062 بار دیکھا گیا)

تبصرے