Qaumi Akhbar
Loading site
قومی اخبار
پیر 01 جون 2020
LZ_SITE_TITLE
 
New World of Online News

10 ارب روپے کی ٹیکس چوری میں ملوث گروہ بے نقاب

ویب ڈیسک جمعه 27 دسمبر 2019
10 ارب روپے کی ٹیکس چوری میں ملوث گروہ بے نقاب

کراچی(قومی اخبار نیوز) ڈائریکٹوریٹ انٹیلی جنس اینڈ انویسٹی گیشن آئی آر کراچی نے بڑی کارروائی کرتے ہوئے 10 ارب روپے کی ٹیکس چوری میں ملوث گروہ کو بے نقاب کردیا۔

ایف بی آرافسران ٹیکس چوروں کے سہولت کار

 

ڈائریکٹوریٹ کے ذرائع نے بتایا کہ ابتدائی تحقیقات کے دوران اس بات کا انکشاف ہوا ہے کہ فلائنگ اور جعلی انوائس کا منظم کاروبار جاری ہے اور اس فراڈ سسٹم کے ذریعے ٹیکس چوروں کا منظم مافیا ملک گیر سطح پر منظم ہے اور منظم گروہ جعلی اور بوگس انوائسز کے ذریعے قومی خزانے کو اربوں روپے کا نقصان پہنچا رہا ہے۔ذرائع نے بتایا کہ ڈائریکٹوریٹ انٹیلی جنس اینڈ انویسٹی گیشن ان لینڈ ریونیو نے ابتدائی طور پر کراچی میں رجسٹرڈ 10 جعلی صنعتی یونٹس کا پتا لگالیا جن کی بینک ٹرانزیکشنز کا بھی سراغ لگایا جارہا ہے۔ذرائع نے بتایا کہ ڈائریکٹوریٹ نے ان جعلی یونٹس کو بلیک لسٹ کرنے کی کاروائی کا بھی آغاز کردیا ہے, کراچی میں رجسٹرڈ جن 10 جعلی یونٹس کی نشاندہی ہوئی ہے ان میں شاہد انٹر پرائزز، ہاشمی ٹریڈرز، رضوان انٹرپرائزز، لکی کارپوریشن، زید انٹرپرائزز، زاہد اینڈ کمپنی، کھتری انٹر پرائزز، ایس ایس ایس ایکسپو اور اے ون پیکیجزشامل ہیں۔مزکورہ جعلی کمپنیاں رجسٹرڈ پتوں پردستیاب نہیں اور ان جعلی کمپنیوں نے ٹیکس ڈپارٹمنٹ میں رجسٹریشن کے حصول کے لیے شہر کے مختلف رہائشی علاقوں کے پتیاستعمال کیے۔ذرائع نے بتایا کہ مذکورہ نشاندہی شدہ 10 جعلی کمپنیوں نے گزشتہ دوسال کے دوران اربوں روپے مالیت کا لین دین ظاہرکیا لیکن ان بھاری مالیت کے لین دین کے باوجود ان کمپنیوں کی جانب سے قومی خزانے میں ایک روپے کا ٹیکس بھی جمع نہیں کرایا گیا۔اس ضمن میں ڈائریکٹوریٹ آئی اینڈ آئی کے ترجمان ندیم بیگ نے ایکسپریس کے استفسار پر بتایا کہ ڈائریکٹوریٹ کی خصوصی ٹیم نے مذکورہ جعلی کمپنیوں کے ماسٹر مائنڈ کی گرفتاری کے لیے چھاپوں کا سلسلہ شروع کردیا ہے۔ندیم بیگ کے مطابق ڈی جی آئی اینڈ آئی بشیراللہ خان مروت اور ڈائریکٹر کراچی عاصم افتخار کی جانب سے ٹیکس چوری میں ملوث گروہوں کی بیخ کنی کی سخت ہدایات کے تحت فلائنگ اور بوگس انوائسز کے کاروبار کے ذریعے قومی خزانے کو اربوں روپے مالیت کے نقصانات پہنچانے والوں کو بینقاب کرنے کی مہم جاری ہے۔انہوں نے مزید بتایا کہ مذکورہ 10 کمپنیوں کے سوا بھی انتہائی بااثر افراد کی نشاندہی ہوئی ہے جو فلائنگ اور بوگس انوائسز کے کاروبار میں ملوث ہیں تاہم ان کے نام ابھی صیغہ راز میں رکھے گئے ہیں۔

(933 بار دیکھا گیا)

تبصرے