Qaumi Akhbar
Loading site
قومی اخبار
بدھ 13 نومبر 2019
LZ_SITE_TITLE
 
New World of Online News

سوات کے ٹماٹر کی مانگ بڑھ گئی

ویب ڈیسک بدھ 06 نومبر 2019
سوات کے ٹماٹر کی مانگ بڑھ گئی

سوات(نمائندہ جنگ)پاکستان میں سوات کی سرزمین وہ واحد خطہ ہے جہاں پر ایک سال کے دوران ٹما ٹر کی دو فصلیں ہوتی ہیں، ملک میں بھر میں ٹما ٹر نایاب ہونے کے باوجود سوات کے باغات ٹماٹر وں سے لد چکے ہیں اورپورے ملک میں سوات کے ٹماٹر کی مانگ ہے،قیمتیں بھی آ سمان سے باتیں کرنے لگی ہیں اور فی کلو 160روپے میں فروخت ہورہا ہے۔

 

خوشخبری، بھارتی ٹماٹروں سے جان چھوٹ گئی

 

 

 

سوات میں 5ہزار ہیکٹر رقبے پر 50ہزار میڑک ٹن سے زیادہ کا ٹماٹر پیدا ہوتا ہے، تحصیل بریکوٹ کے علاقے مانیار،غالیگے،دم،شموزئی ٹماٹر کی فصل کا مرکز ہے جہاں پر ٹماٹر کی فصل تیارہوگئی ہے اور ہر کھیت سے روزانہ تین چار گاڑیاں منڈیوں کے لئے نکلتی ہیں،پہلی فصل کی بوائی فروری مارچ میں ہوتی ہے اور جون جولائی میں فصل تیار ہوتی ہے جبکہ جون جولائی میں دوبارہ بوائی کرکے اکتوبر اور نومبر میں ٹماٹر کی دوسری فصل تیار ہوتی ہے،

 

اس وقت پورے ملک میں کہیں پر ٹماٹر کی فصل تیار نہیں اور بدین اور ٹھٹھہ میں بارشوں کے باعث فصل کو نقصان پہنچاہے یہی وجہ ہے کہ سوات کے ٹماٹر کی پورے ملک میں مانگ بڑھ گئی ہے اور اس وقت کسانوں اور بیوپاریوں کو خوب کمائی مل رہی ہے۔پاکستان میں بھر میں ٹماٹر کا بیوپار کرنے والے نیاز محمد نے بتایا کہ اس سال سوات میں ٹماٹر کی فصل نہ صرف زیادہ ہوئی ہے بلکہ کوالٹی کے لحاظ سے بھی منفر د ہے،اب چونکہ پورے ملک کہیں پر بھی ٹماٹر نہیں تو ہم سوات سے کئی گاڑیاں ٹماٹر اسلام آ باد روالپنڈی کی منڈیوں میں سپلائی کرتے ہیں جہاں پر اب ہمیں ایک ہزار روپے تک ڈبہ کی قیمت مل رہی ہے۔

 

سوات کے کسانوں نے محکمہ زراعت سے شکوہ کیا ہے کہ سرکاری سطح پر ہم سے کسی قسم کا تعاون نہیں کیا جاتا مارکیٹ میں ادویات بھی غیر معیاری ملتی ہیں اور ٹماٹر کے امراض پر قابوپانے کے لئے کسی قسم کے اقدامات نہیں کئے جاتے، انہوں نے حکومت سے مطالبہ کیا کہ کسانوں کو تربیت کے ساتھ ساتھ انہیں معیاری ادویات کی فراہمی کو یقینی بنایا جائے۔

(372 بار دیکھا گیا)

تبصرے