Qaumi Akhbar
Loading site
قومی اخبار
بدھ 13 نومبر 2019
LZ_SITE_TITLE
 
New World of Online News

’’ٹاک شوزمیں اچھی شہرت، تجربہ کار مہمان بلائیں‘‘

ویب ڈیسک پیر 28 اکتوبر 2019
’’ٹاک شوزمیں اچھی شہرت، تجربہ کار مہمان بلائیں‘‘

اسلام آ باد (قومی اخبارنیوز) پیمرا نے اپنے ریگولر شوز کی میزبانی کرنیوالے اینکرزکے دیگر ٹاک شوز میں حصہ لینے پر پابندی لگا دی ہے اور چینلز مالکان کو ہدایت دی ہے کہ ٹاک شوز میں اچھی شہرت اور وسیع تجزبہ رکھنے والے مہمان بلائیں۔

 

76 نئے ٹی وی چینلز کو لائسنس دینگے, چیئرمین پیمرا

 

عدالتوں میں زیر سماعت معاملات پر ٹاک شوز میںرائے زنی نہ کی جائے ، لائیو پروگراموں کو تاخیری نظام سے منسلک کریں ،اینکر اپنے ذاتی خیالات کو فیصلے کے انداز میں پیش نہ کرے ، غلط انفارمیشن ، قیاس آ رائی اور من گھڑت باتوں پر لوگوں کو گمراہ کرنے والوں کو اپنا پلیٹ فارم استعمال نہ کرنے دیں، عدلیہ یا اداروں کیخلاف غیر مناسب تجزیئے اور منفی پروپیگنڈے پر کارروائی ہوگی۔تفصیلات کے مطابق گزشتہ روز پیمرا کے اعلامیے میں کہا گیا ہے کہ پیمرا ضابطے کے تحت اینکر کا رول یہ ہے کہ پروگرام کومعروضی حقائق ، غیرمتعصبانہ اور غیر جانبداری کیساتھ چلائیں،

 

اپنے ذاتی خیالات کو فیصلے کے انداز میں پیش نہ کرے، پیمرا کے مطابق ریگولر شوز کی میزبانی کرنیوالے اینکرز اپنے یا کسی دوسرے ٹاک شوز میں ایکسپرٹ کی حیثیت سے بھی شریک نہیں ہوسکتے، چینل کے مالکان کو ہدایت کی گئی ہے کہ اپناپلیٹ فارم کسی ایسے شخص کوہرگزاستعمال نہ کرنے دے جو ڈس انفارمیشن ، قیاس آ رائی اور من گھڑت باتوں پر لوگوں کو گمراہ کرے۔ اعلامیہ میں مزید کہا گیا کہ ٹاک شوزکے شرکاء اور مہمانوں کے انتخاب میں نہایت احتیاط سے کام لیا جائے، صرف ایسے مہمان ٹاک شوزمیں مدعو کئے جائیں جو اچھی شہرت کے حامل ہوں، وسیع تجربہ رکھتے ہوں،

 

موضوع بحث پر کسی تعصب کے بغیر ایک تجربہ کار ماہر کے طور پر غیرجانبدارانہ رائے کیساتھ مناسب طور پر موضوع پر پوری دسترس رکھتے ہوں۔ پیمرا نے ہدایت کی ہے کہ عدالتوں میں زیر سماعت معاملات پر ٹاک شوز میں رائے زنی نہ کی جائے۔پیمرا کے ایک اعلامیہ جاری کیا اور کہا کہ سپریم کورٹ کا واضح حکم موجود ہے کہ عدالتوں میں زیر سماعت مقدمات پر تبصرہ آ رائی نہیں ہو سکتی۔ پیمرا نے تمام نیوز چینلز کو ہدایت جاری کی کہ زیر سماعت مقدمات /معاملات پر بحث و مباحثہ، تبصرہ یا قیاس آ رائی نہ کی جائے اس ضمن میں نیوز چینلز کسی کو اپنا پلیٹ فارم استعمال کرنے کی اجازت نہ دیں۔ پیمرا نے خبر دار کیا کہ عدلیہ یا کسی بھی ریاستی ادارے کیخلاف غیر مناسب تجزیہ آ رائی، متعصبانہ اور منفی پروپیگنڈہ کرنے والے کیخلاف کارروائی ہوگی۔ پیمر انے چینل مالکان کو ہدایت کی ہے کہ اپنے لائیو پروگراموں کو تاخیری نظام سے منسلک کریں۔

(1108 بار دیکھا گیا)

تبصرے