Qaumi Akhbar
Loading site
قومی اخبار
بدھ 18  ستمبر 2019
LZ_SITE_TITLE
 
New World of Online News

طالبان سے معاہدہ، امریکا پہلے 5 اڈے خالی کریگا

قومی نیوز منگل 03  ستمبر 2019
طالبان سے معاہدہ، امریکا پہلے 5 اڈے خالی کریگا

کراچی (نیوز ڈیسک) افغانستان کے لیے امریکی نمائندہ خصوصی زلمے خلیل زاد کا کہنا ہے کہ طالبان کے ساتھ امن معاہدے کی صورت میں امریکی فوج پہلے مرحلے میں پانچ فوجی اڈے خالی کرے گی

انہوں نے کہا کہ ٹرمپ کی توثیق کے بعد ہی معاہدے پر عملدرآ مد ہوگا ، طالبان ترجمان کے مطابق 5 ہزار فوجیوں کی واپسی ہوگی۔

کابل میں ایک مقامی ٹی وی چینل طلوع نیوز کو دیے گئے ایک انٹرویو میں زلمے خلیل زاد کا کہنا تھا کہ طالبان کے ساتھ امن معاہدے پر دستخط ہونے کے بعد امریکا پہلے 135 دنوں میں افغانستان کے پانچ فوجی اڈوں سے پانچ ہزار فوجی نکالے گا۔

یہ بھی پڑھیں :

مقبوضہ کشمیر، ڈی جی آئی ایس پی آرکے پوسٹرز،بھارت میں کھلبلی

کشمیریوں سے یکجہتی کا دن، عوام سڑکوں پر نکل آئے

ان کے مطابق اس امن معاہدے کے مسودے پر تب عمل ہوگا جب صدر ٹرمپ اس کی توثیق کریں گے۔’کاغذ پر ہم اور طالبان امن معاہدے کے لیے متفق ہوگئے ہیں، لیکن اس معاہدے پر عمل درآ مد تب ہوگا، جب امریکی صدر اس پر متفق ہوجائیں گے۔

ادھر طالبان ترجمان ذبیح اللہ مجاہد نے بھی بی بی سی کو بھیجے گئے ایک تحریری پیغام میں کہا ہے کہ عبوری معاہدے کے تحت تقریباً پانچ ہزار امریکی فوج کا انخلاہوگا۔

زلمے خلیل زاد دوحہ میں طالبان کے ساتھ مذاکرات کی نویں دور کے اختتام کے بعد کابل پہنچے ہیں۔برطانوی نشریاتی ادارے کے نامہ نگار خدائی نور ناصر کے مطابق زلمے خلیل زاد یکم ستمبر کو ہی کابل پہنچے جہاں انھوں نے افغان صدر اشرف غنی سے پیر کی رات تک دو ملاقاتیں کیں۔

کابل میں افغان صدر کے ترجمان وحید صدیقی نے پیر کو ایک پریس کانفرنس میں کہا کہ زلمے خلیل زاد نے افغان صدر کے ساتھ امریکا اور طالبان کے درمیان امن معاہدے کا مسودہ شیئر کیا ہے۔

(1075 بار دیکھا گیا)

تبصرے